میرواعظ کے نام این آئی اے کا تیسرا سمن

 سرینگر// قومی تحقیقاتی ایجنسی (این آئی اے) نے حریت (ع) چیئرمین میرواعظ عمر فاروق کے نام تیسرا سمن جاری کرکے انہیں نئی دہلی طلب کرلیا ہے۔انہیں 18 اپریل کو حاضر ہونے کے لئے کہا گیا ہے۔نوٹس میں کہا گیا ہے کہ نئی دہلی میں میرواعظ کی سیکورٹی کا خیال رکھا جائے گا۔قبل ازیں این آئی اے نے میرواعظ کو پوچھ گچھ کے لئے 11 مارچ اور اس کے بعد 18 مارچ کو حاضر ہونے کے لئے کہا تھا۔تاہم میرواعظ نے بذات خود حاضر ہونے کے بجائے اپنے وکیل کے ذریعے سمن کا تحریری جواب روانہ کیا تھا۔ میرواعظ کے وکیل ایڈوکیٹ اعجاز احمد نے کہا تھا کہ حریت چیئرمین کو بے بنیاد اور جھوٹے فنڈنگ کیسوں میں پھنسانے کی کوشش کی جارہی ہے۔انہوں نے لکھا تھا کہ یہ سمن میرواعظ کی شبیہ بگاڑنے کے لئے غلط اطلاعات کی بنیادوں پر روانہ کی گئی ہے۔ انہوں نے لکھا تھا کہ موجودہ کشیدہ حالات میں میرواعظ کے لئے دہلی کا سفر کرنا پُر خطر ہے اگر این آئی اے میر واعظ سے پوچھ گچھ کرنا چاہتی ہے تو ایسا سری نگر میں بھی کیا جاسکتا ہے اور میر واعظ اُن کے ساتھ تعاون کرنے کے لئے تیار ہیں کیونکہ اُن (میر واعظ) کے پاس چھپانے کے لئے کچھ بھی نہیں ہے۔