مودی کے دل سے نفرت کو ختم کرنا اہم ہدف: راہل گاندھی

کشی نگر//کانگریس صدر راہل گاندھی نے جمعرات کو کہا کہ وزیر اعظم نریندر مودی کے دل میں موجود نفرت اور غصے کو نکالنا ان کا اہم ہدف ہے ۔لوک سبھا انتخابات کے ساتویں اور آخری مرحلے میں کشی نگر کے مجھولی بازار میں منعقد ایک انتخابی ریلی سے خطاب کرتے ہوئے مسٹر گاندھی نے کہا‘‘ وزیر اعظم نریندر مودی کے دل میں نفرت ہے ، غصہ ہے ۔ ہمار کا م اس نفرت کو مٹانا ہے ۔انہوں نے کہا کہ مرکزی کی فصل بیما اسکیم میں چوکیدار نے کسانوں سے ہزاروں کروڑوں روپئے لوٹے ہیں۔ یہ فصل بیما اسکیم نہیں ‘گھپلہ یوجنا ’ہے ۔ کانگریس نے کسانوں کے ساتھ کندھے سے کندھا ملا کر کھڑی ہے اقتدار میں آنے پر کسانوں اور ضرورت مندوں کو ‘نیائے ’اسکیم کے تحت انصاف دیا جائے گا۔کانگریس صدر نے کہا کہ گذشتہ لوک سبھا انتخابات میں مسٹر مودی نے دعوی کیا تھا کہ وہ دو کروڑ نوجوانوں کو روزگار دلائیں گے ۔ بیرون ملک جمع کالا دھن واپس لائیں گے اور ہر غریب کے کے کھاتے میں 15 لاکھ روپئے جمع کرائیں گے ۔ ان وعدوں کے برخلاف اس وقت میں ملک میں بے روزگار گذشتہ 45 سالوں میں سب سے خراب سطح پر ہے ۔ کسان و غریبوں کے کھاتے میں روپئے نہیں اائے بلکی مودی نے امبانی کے 30 ہزار کروڑ اور اڈانی کے 45 ہزار کروڑ روپئے کا قرض معاف کردیا۔ نوٹ بندی سے کالا دھن واپس آنے کے بجائے بڑے سرمایہ کاروں کا کالادھن سفید کرایا گیا ۔انہوں نے کہا کہ ان کی پارٹی 22 لاکھ نوکریاں بھرنے کا وعدہ کیا ہے اور اقتدار میں آنے پر اسے پورا کرے گی۔ نیائے اسکیم غریبوں کی تقدیر کو بدلے گا۔یواین آئی۔