منکوٹ بلاک کے سرپنچوں وپنچوں کامحکمہ دیہی ترقی کیخلاف احتجاجی مظاہرہ

۔ 3 عارضی آپریٹرملازمت سے بے دخل کردئے :اے سی ڈی پونچھ
 
مینڈھر//محکمہ دیہی ترقی کے بلاک منکوٹ میں ایم جی نریگامزدوروں کی مزدوری سے متعلق ماسٹر شیٹوں کو ویب سائٹ سے حذف کرنے کاسکینڈل طشت ازبام ہونے کے بعدمعاملہ کاسنجیدہ نوٹس لیتے ہوئے اسسٹنٹ ڈیولپمنٹ کمشنرپونچھ نے بی ڈی اودفترمیں تعینات تین عارضی آپریٹروں کوملازمت سے بے دخل کردیاہے اورعوام کویقین دہانی کرائی ہے کہ ان کے خلاف مقدمہ درج کرواکرتحت ضابطہ کاروائی عمل میں لائی جائے گی۔مزیدتفصیلات کے مطابق محکمہ دیہی ترقی کے بلاک منکوٹ کے لوگوں نے بلاک ڈیولپمنٹ دفترمیں ایم جی نریگاسے متعلق ماسٹرشیٹوں کوبی ڈی اودفترمیں تعینات آپریٹروں کی طرف سے حذف کرنے کاالزام عائدکرتے ہوئے بی ڈی اودفترکے باہراحتجاجی مظاہرہ کیا۔اس دوران مظاہرین میں بلاک کی مختلف پنچایتوں کے سرپنچ اورپنچ اورمعززلوگ شامل تھے۔اس دوران مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے امان اللہ چوہدری سرپنچ چھجلہ اپر نے کہا کہ بی ڈی او دفتر منکوٹ میں جو متعلقہ محکمہ نے آپریٹر لگائے ہیں انھوں نے دانستہ طورپر 1203 شیٹیس بند کر دی ہیں جس کی وجہ سے اب مزدوروں کوان کی مزدوری نہیں مل سکتی ۔انھوں نے الزام عائد کیاکہ یہ آپریٹر اس لیے فائلیں بند کرتے ہیں تاکہ لوگ پریشان ہوکرانہیں رشوت دیں ۔انہوں نے کہاکہ بندکی گئی فائلوں کودوبارہ کھولنے کیلئے اعلیٰ افسران کو لکھا جاناچاہیئے ۔اس دوران سرپنچوں وپنچوں نے بی ڈی او منکوٹ اور اے سی ڈی پونچھ کے خلاف نعرے بازی کی اوررشوت خور ملازمین اوربی ڈی اومنکوٹ کے خلاف کاروائی عمل میں لانے کی مانگ کی۔انہوںنے انتباہ دیاکہ اگرہماری بندکی گئی شیٹوں کوجلدازجلد اپ لوڈنہیں کیاگیاتوہم پھراحتجاج کریں گے۔سرپنچوں پنچوں ودیگرلوگوں نے کئی گھنٹوں تک احتجاج جاری رکھااورکہاکہ سوموارکوپھرسے احتجاج کیاجائے گا۔اس سلسلہ میں جب بی ڈی او منکوٹ سے بات کی گئی تو ان کا کہنا تھا کہ 32ماسٹر شیٹیں کسی وجہ سے ڈلیٹ ہوئی ہیں اور سینکڑوں کی تعداد میں شیٹیں جوسرپنچ بتا رہے ہیں وہ پرانی شیٹیں ہیں اور کچھ لوگوں نے کام نہیں کیا ان کی شیٹیں ہمیں کرانی ہوتی ہیں البتہ ہم اس معاملہ کی تحقیقات کر رہے ہیں اور جن آپریٹروں نے شیٹیں ڈلیٹ کی ہیں کیونکہ انہیں پاس ورڈ بھی پتہ تھا کیونکہ یہ ملازمین عارضی طورتعینات ہیںلہذا دو آپریٹروںکو ہم نے محکمہ سے نکال دیا ہے جبکہ کاروائی تینوں آپریٹروں کے خلاف کی جائے گی۔اس سلسلہ میں جب اے سی ڈی پونچھ سے بات کی گئی تو ان کا کہنا تھا کہ میں نے تینوں کنٹریکچول آپریٹروں کو نکال دیا ہے اور ان کے خلاف مقدمہ درج کرکے کاروائی عمل میں لائی جائے گی اور جتنی شیٹیں ڈلیٹ ہوئی ہیں ان کو دوبارہ اپلوڈ کیا جائے گا تاکہ مزدور طبقہ کو مزدوری مل سکے اور ہمارے ملازمین کی وجہ سے کسی کوپریشانی نہ ہو۔