منوج سنہا کاجموں کشمیرکوصلاحیت کا نخلستان بنانے کا خواب

سرینگر//لیفٹیننٹ گورنرنے منوج سنہا نے زور آور سنگھ آڈیٹوریم جموںمیں قومی تعلیمی پالیسی 2020کی عمل آوری پر دوسری کانفرنس کا اِفتتاح کیا۔کانفرنس کا اِنعقاد محکمہ اعلیٰ تعلیم اور جموں یونیورسٹی نے مشترکہ طور کیا تھا۔ اس موقعہ پرشری رمیش پکھریال نشنگ نے ویڈیو پیغام کے ذریعے لیفٹیننٹ گورنر کو قومی تعلیمی پالیسی کی عمل آوری کے لئے مؤثر منصوبہ مرتب کرنے کے لئے ٹاسک فورس کا قیام عمل میں لانے کے لئے مبارک باد پیش کی۔اُنہوں نے جموںوکشمیر کو ایک علمی مرکز بنانے کے لئے حکومت ہند کی جانب سے ہرممکن مدد کا یقین دلایا ۔اس موقعہ پرلیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا نے اپنے خیالا ت کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ جموںوکشمیر نہ صرف قدرتی حسن سے مالا مال ہے بلکہ یہاں کے ذہن بھی کافی ذرخیز ہے۔اُنہوں نے کہا کہ مجھے پورا یقین ہے کہ نئی تعلیم پالیسی کے یونین ٹریٹری میں دوررَس اثرات مرتب ہوں گے ۔ اُنہوں نے کہا کہ صرف تعلیم ہی جموںوکشمیر کے لئے تابناک مستقبل کا ضامن ہوسکتی ہے۔انہوں نے کہا میرا خواب ہے کہ جموںوکشمیر کو صلاحیت کانخلستان بناوں۔تعلیمی شعبے کے تئیں حکومت کے عزم کا اعادہ کرتے ہوئے لیفٹیننٹ گورنر نے کہا کہ جموںوکشمیر میں نئے اور زیر تعمیر کالجوں کی تکمیل کے لئے 300 کروڑ روپے واگذار کئے ہیں ۔ اِسی طرح 2393کروڑ سکولوں اور اعلیٰ  تعلیم کے شعبے کے لئے واگذار کئے گئے ہیں جبکہ مرکز نے صحت اور طبی تعلیم کے لئے500کروڑ واگذار کی ہے تاکہ یوٹی میں موجودہ وسائل کو فروغ حاصل ہوسکے۔کووِڈ۔ 19وَبا کے پیش نظرلیفٹیننٹ گورنر نے متعدی بیماریوں سے متعلق تمام یونیورسٹیوں میں تحقیقی سرگرمیوں میں سرعت لانے کی فوری ضرورت پر زو ردیا تاکہ ملک و قوم کو مستقبل میں اس قسم کی صورتحال سے نمٹنے کے لئے اس ضمن میں علم و تحقیق سے لیس کیا جاسکے۔نئی تعلیمی پالیسی کے فوائد کو اُجاگر کرتے ہوئے لیفٹیننٹ گورنر نے کہا کہ اس سے کلہم تعلیمی نظام میں تبدیلی آئے گی ۔ اُنہوں نے کہا کہ اس پالیسی سے نہ صرف مقامی لوگ بااختیار بنیں گے بلکہ اس سے عالمی سطح کی صلاحیتیں بھی نشو و نما ہوگی ۔اساتذہ برداری سے خطاب کرتے ہوئے لیفٹیننٹ گورنر نے تعلیمی نظام میں تبدیلی سے متعلق جانکاری حاصل کرنے کے لئے کہا تاکہ زمینی سطح پرنئی تعلیمی پالیسی 2020 کی مؤثر عمل آوری یقینی بن سکے۔اِس موقعہ پر لیفٹیننٹ گورنر کے مشیرکے کے شرما ، وائس چانسلر ایس ایم وی ڈی یوپروفیسر (ڈاکٹر) رویندر کمار سنہا، وی سی  بی جی ایس بی یو پروفیسر جاوید مسرت، وی سی سنٹرل یونیورسٹی جموںپروفیسر اشوک ایما،پرنسپل سیکرٹری سکول ایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ ڈاکٹر اصغر حسن سامون اور ڈائریکٹر آئی آئی آئی ایم جموں ڈاکٹر ڈی ریڈی موجود تھے۔محکمہ اعلیٰ تعلیم کے سینئر اَفسران اور جموں و کشمیر کے تمام گورنمنٹ ڈگری کالجوں کے پرنسپلوں نے بھی اس تقریب میں شرکت کی۔اِفتتاحی اجلاس کے بعد چار تکنیکی اور پنل مباحثہ بھی منعقد ہوئے جس کے دوران جموں صوبے کے مختلف اداروں کے مقررین نے قومی تعلیمی پالیسی سے متعلق اَپنے خیالات کا اظہار کیا۔