مفاہمتی راستے کی تلاش اتحاد کازینہ

سرینگر//مخاصمت کے بجائے مفاہمتی راستے کی تلاش کو اتحاد کا زینہ قرار دیتے ہوئے تجارتی پلیٹ فارم کشمیر ٹریڈرس اینڈ مینو فیکچررس فیڈریشن نے تاجروں کے مسائل کو وادی کی خستہ معیشت کا اہم جز قرار دیتے ہوئے کہا کہ ریاست کی معاشی صورتحال کو بہتر بنانے کیلئے تاجر و عوام دوست پالسیوں کو مرتب کیا جانا چاہے۔کے ٹی ایم ایف کے صدر حاجی محمد صادق بقال نے کشمیر بیکرس ایند کنفیکشنریز ایسو سی ایشن کی کے ٹی ایف میں شمولیت کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہا کہ اتحاد سے ہی تاجروں کے مسائل کا ازالہ ممکن ہے۔کشمیر بیکرس ایند کنفیکشنریز ایسو سی ایشن کی شمولیت کو خوش آئندہ قرار دیتے ہوئے کے ٹی ایم ایف کے صدر نے کہا کہ انکی انجمن کا مقصد تاجروں کے جملہ مسائل کا ازالہ اور تاجروں کے وقار کو بنائے رکھنا ہے۔انہوں نے ایسو سی ایشن کے سربراہ عمر مختار کو بھی یہ دانشمندانہ فیصلہ لینے پر مبارکباد پیش کیا۔ اس حوالے سے منعقدہ تقریب کے دوران کشمیر بیکرس ایند کنفیکشنریز ایسو سی ایشن کے جنرل سیکریٹری کو کشمیر ٹریڈرس اینڈ مینو فیکچرس فیڈریشن میں اعزازی طور پر نائب صدر دوئم کا منصب فرہم کیا گیاجبکہ کشمیر بیکرس ایند کنفیکشنریز ایسو سی ایشن کے نائب صدر ہمایوں جان کو مشیر کا عہدہ دیا گیا۔کشمیر بیکرس ایند کنفیکشنریز ایسو سی ایشن کے دو نمائندوں حاجی محمد صدیق اور شبیر احمد صوفی کو کشمیرٹریڈرس اینڈ مینو فیکچرس فیڈریشن کی ایگزیکٹو باڈی میں رکنیت دی گئی۔ تقریب کے دوران کشمیرٹریڈرس اینڈ مینو فیکچرس فیڈریشن کے سنیئر نائب صدر شیخ ہلال،جنرل سیکریٹری شاہد حسین اور چیف کارڈی نیٹر حاجی نثار احمد اور پبلسٹی سیکریٹری صوفی محی الدین بھی موجود تھے۔ کشمیر ٹریڈرس اینڈ مینو فیکچررس فیڈریشن کے لیڈروں نے اس بات کا اعادہ کیا کہ تاجروں کو درپیش مسائل کا ازالہ کرنے کیلئے وہ پیش پیش رہیں گے جبکہ اس بات کی بھی وضاحت کی کہ وہ مخاصمت کے بجائے مفاہمت کی پالیسی پر یقین رکھتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ کشمیر ٹریڈرس اینڈ مینوفیکچرس فیڈریشن میں دیگر تجارتی شعبوں کیلئے بھی دروازے کھلے ہیں اور ان کا کے ٹی ایم ایف میں استقبال کیا جائے گا۔