مغل روڈ حادثے میں11طلاب کی ہلاکت

سرینگر //مغل روڈ پر جمعرات کو پیش آئے حادثے میں 11طالب علموں جن میں 9طالبات بھی شامل ہیں،کی ہلاکت اور دیگر9کے زخمی ہونے پر جموں کشمیرہائی کورٹ بار ایسوسی ایشن ،حریت(گ) چیئرمین سیدعلی گیلانی اور تحریک حریت کے چیئرمین محمداشرف صحرائی نے دکھ اور افسوس کااظہار کیا ہے ۔ایک بیان میں بار ایسوسی ایشن نے مغل روڈ پر ٹریفک کے ایک حادثے میں سرنکوٹ کے کمپیوٹرانسٹی چیوٹ کے11طلباء جن میں9طالبات بھی شامل ہیں،کے ہلاک اوردیگر7کے زخمی ہونے پر صدمے کااظہار کرتے ہوئے ہلاک ہوئے طلباء کے روح کے ابدی سکون اورلواحقین کو صبر جمیل عطاکرنے کی اللہ تعالی سے دعاکی ۔بار نے اس حادثے میںزخمی طلباء کے فوری طور صحت یاب ہونے کی بھی دعاکی ۔حریت (گ) کے چیئرمین سید علی گیلانی نے بھی ایک بیان میں اس حادثے میں ہوئی ہلاکتوں پر افسوس کااظہار کرتے ہوئے ہلاک ہوئے طلباء کے لواحقین کے ساتھ یکجہتی کااظہار کیا اور اللہ تعالی سے دعاکی کہ وہ مہلوکین کوجواررحمت میں جگہ دیں۔انہوں نے کہا کہ موت ایک اٹل حقیقت ہے لیکن ایسے حادثات میں انسانی زندگیوں کے اتلاف پر ہرایک انسان رنجیدہ اور غم ناک ہوتاہے ۔ادھر تحریک حریت کے چیئرمین محمد اشرف صحرائی نے تاریخی مغل روڑ( پیر کی گلی ) پر جمعرات کو ایک المناک ٹیمپو حادثے میں 11طالب علموں کے جاں بحق ہونے پر زبردست رنج و غم کا اظہار کرتے ہوئے کہاکہ اس حادثے میں 9طالبات سمیت 11لوگوں کے جاں بحق ہونے سے کئی خاندان ماتم کدہ بن گئے ۔صحرائی نے کہا کہ اس المناک اور رنج دہ حادثے میں جاں بحق ہونے والوںکے لواحقین کے غم میں برابر کے شریک ہیں اور اللہ تعالی سے دعا گو ہیں کہ وہ ان جاں بحق افراد کو جوار رحمت میں جگہ عطا فرمائے اور پسماندگان کو صبر جمیل عطا کرے۔صحرائی نے اس حادثے میں زخمی ہونے والوں کے  جلد شفایاب ہونے کی بھی دعا کی ۔