مزید خبریں

ریاست کے تشخص کے ساتھ چھیڑچھاڑناقابل قبول:شبیرخان

پرویز خان 

منجاکوٹ//کانگریس کے سینئر لیڈر و سابق وزیر شبیر احمد خان نے ریاست کے خصوصی تشخص کے ساتھ چھیڑ چھاڑ نہ کرنے پر زور دیتے ہوئے کہاہے کہ کچھ سیاسی طاقتیں جان بوجھ کر انتخابات سے قبل ماحول کو فرقہ وارانہ رنگت دیناچاہتی ہیں تاکہ اس کے نتیجہ میں انہیں کامیابی نہیں مل سکے کیونکہ انہیں یہ معلوم ہے کہ انہوں نے اپنے دور اقتدار میں ایسا کوئی کام نہیں کیا جسے وہ عوام کے سامنے اپنی حصولیابی کے طور پرپیش کرسکیں ۔حلقہ انتخاب راجوری کے ککورہ علاقے میں عوامی میٹنگوں سے خطاب کرتے ہوئے شبیر احمد خان نے کہاکہ پچھلے پانچ سال سے برسر اقتدارجماعت ترقیاتی محاذ پر کچھ نہیں کرپائی لیکن لیکن اب بدقسمتی سے اس کی طرف سے اگلے عام انتخابات میں کامیابی کیلئے اوچھے ہتھکنڈے اختیا رکئے جارہے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ لوگوں کو تقسیم کرنے کی ہر ممکن کوشش ہورہی ہے اور کوئی بھی کسر باقی نہیں رکھی جارہی ۔سابق وزیرنے کہاکہ ریاست کو حاصل خصوصی تشخص کے ساتھ چھیڑ چھاڑ نہ کی جائے اور ایساکوئی بھی حربہ اختیار نہ کیاجائے جس کی وجہ سے ریاست میں حالات مزید خراب ہونے کا اندیشہ ہو۔شبیر خان نے کہاکہ ریاست میں قائم ہونے والی سابق پی ڈی پی ۔ بی جے پی حکومت ہر محاذ پر ناکام ہوئی اور لوگوں کے ساتھ کئے گئے وعدوں کے برعکس کام کیاگیا۔ انہوں نے کہاکہ ریاست کے ہر ایک خطے کے عوام کے جذبات سے کھلواڑ ہوا اورکوئی بھی وعدہ پورا نہیںکیاگیا۔ انہوں نے کہاکہ یہ دونوں جماعتیں عوام کے سامنے بری طرح سے بے نقاب ہوئیں اور حلقہ انتخاب راجوری میں ان کے دور میں شروع ہوئے ترقیاتی پروجیکٹوں کو پایہ تکمیل تک پہنچانے کے بجائے ٹھپ کردیاگیا جس کے سبب لوگوں کو سخت مشکلات کاسامناہے اور ان کا کوئی پرسان حال نہیں۔انہوںنے کارکنان پر زور دیاکہ وہ کانگریس پارٹی کو مضبو ط بنائیں ۔
 
 
 
 

منڈی میں انتظامیہ کاعوام کے ساتھ اجلاس ،صحافیوں کابائیکاٹ 

اے ایس پی پونچھ پرصحافیوں کوفرائض منصبی کی انجام دہی سے روکنے کاالزام 

عشرت حسین بٹ

منڈی//تحصیل منڈی کے ذرائع ابلاغ نمائندوں نے ایڈیشنل ایس پی پونچھ راجہ عادل حمید پرمیڈیاکوفرائض منصبی سے روکنے کاالزام عائد کیاہے ۔ذرائع کے مطابق منڈی تحصیل کمپلیکس میں تحصیل انتظامیہ کی جانب سے حالاتِ حاضر ہ کے حوالے سے منڈی کے معززین کے ساتھ اجلاس منعقد کیا جس میں معززین نے دفعہ 35Aکے حوالے سے بات کرنا چاہی تو ایس پی موصوف نے محمد اکرم لون نامی معزز شخص سے اس حوالے سے بات کرنے سے روکا اور ذرائع ابلاغ کے نمائندوں کو زبردستی  کیمرے بند کرنے کی ہدایات دیں جس کے ردعمل میں ذرائع ابلاغ نمائندوں نے میٹنگ سے بائیکاٹ کیا ۔اس موقہ پر جامعہ مسجد اعلی پیر منڈی کے امام و خطیب مولانا سید شاہد بخاری نے ایس پی موصوف سے کہا کہ آج منڈی تحصیل میں دفعہ 35A کے تحفظ سے متعلق منڈی تحصیل میں ہڑتال ہے اور میٹنگ میں اسی حوالے سے بات ہوگی جس پر ایس پی موصوف نے انہیں بھی ایسی باتوں سے اجتناب کرنے کیلئے کہا جس پر معززین بھی میٹنگ سے باہر نکل آئے۔ایک اُردواخبار کے نمائندہ وسیم حیدری نے بتایاکہ ایس پی موصوف نے میٹنگ میں ذرائع ابلاغ کے نمائندوں کو زبردستی کیمرے بند کرنے کیلئے کہا اور ہمیں پیشہ وارانہ کام کرنے سے روکنے کی کوشش کی۔ انہوں نے کہا کہ جمہوریت کے چھوتھے ستون کے ساتھ انتظامیہ کی جانب سے ایسے رویے کو کسی بھی قیمت پر برداشت نہیں کیا جائے گا۔ ان کا کہنا تھا کہ ذرائع ابلاغ کے نمایندوں کو ان کے پیشہ ورانہ کاموں سے پہلے بھی روکنے کی کوشش کی گئی۔ ضلع جرنلسٹ ایسوسی ایشن پونچھ نے منڈی میں صحافیوں کو پیشہ وارانہ کام کرنے سے ایس پی کی طرف سے روکنے کی شدید مذمت کی ہے ۔ایسوسی ایشن نے آئی جی پی جموں سے معاملے کی تحقیقات کرنے کی مانگ کی ہے۔
 
 
 

مینڈھرکے لوگوں میں خوف وہراس،انتظامیہ متحرک

ایس ڈی ایم کی قیادت میںپولیس وفورسزکی قصبہ میں گشت 

جاوید اقبال
مینڈھر//پلوامہ حملہ کے بعد سرحدی علاقوں میں حالات مسلسل کشیدہ بنے ہوئے ہیں اور لوگوں کی پریشانیاں بڑھتی جارہی ہیں جبکہ خوف وہراس چھایا ہوا ہے ۔کچھ شرپسندعناصر نازک حالات کافائدہ اٹھاکر افواہوں کابازارگرم کرنے کیلئے بھی کوشاں ہیں۔اِس سلسلہ میں اِنتظامیہ کی طرف سے ضلع پونچھ میں دفعہ 144نافذکیاگیا جس کے پیش نظر مینڈھر اِنتظامیہ نے کئی جگہوں پر پولیس و فوج نے ناکے لگا کر گاڑیوں کی چیکنگ عمل میں لائی ، گزشتہ روز تحصیل اِنتظامیہ نے ایس ڈی ایم مینڈھر ساحل جنڈیال کی قیادت میں روڈ مارچ کیا تاکہ لوگوں کو یہ پتہ چلے کہ حالات ٹھیک ہیں اور کسی قسم کا کوئی خطرہ نہیں ہے ۔ایس ڈی ایم کے علاوہ ایس ڈی پی او مینڈھر،تحصیلدار مینڈھر، ایس ایچ او مینڈھر کے علاوہ فوجی افیسران بھی روڈ مارچ میں شامل تھے ۔روڈ مارچ کے دوران بڑی تعداد میں پولیس اور فوج کے جوان بھی تعینات رہے ۔البتہ لوگ ڈر کے مارے گھروں کے اندرہی محصوررہے چونکہ پلوامہ حملہ کے بعد طرح طرح کے بیانات جاری ہو رہے ہیں جس سے لوگ ڈرے ہوئے ہیں اور لوگ ڈر اور خوف کے مارے بچوں کو بھی سکول نہیں بھیج رہے ہیں جبکہ لوگوں نے باہر کی ریاستوں سے بھی پڑھائی کر رہے بچوں کو واپس گھر بلا لیا ہے البتہ مینڈھر اِنتظامیہ نے لوگوں سے اپیل کی ہے کہ افواہوں پر یقین نہ کریں کیونکہ حالات ہر روز بہتر ہو رہے ہیں اور اپنے بچوں کی پڑھائی کا خیال رکھیں اگر کوئی بھی بات ہوتی ہے تو اِنتظامیہ کوفون کرکے کوئی بھی بات پوچھ اوربتاسکتے ہیں۔
 
 
 
 

سرحدوں پر کشیدگی باعث تشویش ،جنگ مسئلے کاحل نہیں:جاویدرانا

ہندوپاک قائدین سے افہام وتفہیم کاراستہ اختیارکرنے پرزور

مینڈھر //سابق ایم ایل اے مینڈھر جاویداحمدرانانے سرحدوں پرمسلسل کشیدگی پراظہارتشویش کرتے ہوئے ہندوپاک قائدین پرزوردیاہے کہ وہ اختلافات کودورکرنے کیلئے افہام وتفہیم کاراستہ اختیارکریں ۔انہوں نے کہاکہ یوں تومینڈھر کی عوام میں ہمیشہ خوف وہراس رہاہے لیکن لیکن حال ہی میں پلوامہ خود کش حملہ کے دوران سکیورٹی اہلکاروں کے ناحق قتل کی وجہ سے پوری ریاست میں خصوصًا سرحدوں پر حالات انتہائی کشیدہ ہیں ۔رانانے کہاکہ  دونوں ممالک کی افواج چاک و چوبند حالات میں اگلے حکم کے منتظر ہیں بظاہر ایسے خوف ناک ماحول میں یہاں کے عوام کی تشویش میں اضافہ ہونا قدرتی عمل ہے ۔ان خیالات کا اظہار نیشنل کانفرنس کے مرکزی سیکریٹری اور سابقہ ممبر اسمبلی مینڈھر جاوید احمد رانا نے سب ڈویژن مینڈھر کی سرحدی پنچائت دہری ڈبسی اور ڈھرانہ مین مختلف عوامی اجتماعات سے اپنے خطاب کے دوران کیا ۔انھوں نے کہا کہ ہند پاک کشیدگی کی وجہ سے ان دنوں پورا وسطی ایشیا ء کشیدگی کی لپیٹ میں ہے اگر خدانخواستہ دونوں جوہری ہمسائے ممالک کے افواج ایک دوسرے کے آمنے سامنے ہو جاتی ہیں تو پورا بر اعظم ایشیا ء میں اس بھیانک نتائج برآمد ہو سکتے ہیں جاوید احمد رانا نے کہا کہ یہ بڑے ہی افسوس کا مقام ہے کہ جب بھی ریاست کے حالات معمول پر ؤتے ہیں تو کوئی نہ کوئی ایسا سانحہ رونما ہو جاتا ہے جسکی وجہ سے دونوںممالک کے درمیان کشیدگی اپنی انتہا کو پہنچ جاتی ہے ۔ انھوں نے کہا کہ بر اعظم ایشیاء جوہری طاقتون کا مرکز بن چکا ہے لیکن بدقسمتی سے ہمارے حکمران جوہری ہتھیاروں سے پیدا ہونے والے خطرات سے آشنا ہیںاور نہ ہی  انھیںقیمتی انسانی جانوں کے زیاں کی فکر ہے ۔ انھوں نے کہا کہ جنگ کسی بھی  مسئلے کاحل نہیں ہو سکتی اگر اب کی بار دونوں جوہری طاقتوں کے درمیان جنگ ہوتی ہے تو بر اعظم ایشاء کا نام دنیا کے نقشے سے گم ہونا طے ہے ۔انھوں نے کہا کہ آئے روز کشیدگی کی وجہ سے ریاست میںتعلیمی ،تعمیری اورتجارتی سرگرمیاں ایک حد تک محدود ہوچکی ہیں۔ جس کی وجہ سے سب سے زیادہ نقصان یہاں کے زیرتعلیم طلباء و طالبات کا ہو ا ہے ۔ کیونکہ کشیدہ ماحول میںطلباء کے لیئے تعلیم حاصل کرنا انتہائی ماحال ہے ۔ نہ صرف اتنا ہی بلکہ بیرونِ ریاست زیرِ تعلیم  ریاستی طلباء کو طرح طرح کے تشدداور مظالم کا سامنا ہے انھوں دونوں ممالک کے حکمرانوں سے پر زور مطالبہ کیا کہ مجموعی انسانی بقاء کے ارادہ جنگ کو ترک کر کے تمام تر آپسی اختلافات  بمعنی مذاکرات کے زریعہ حل کریں تاکہ اس شورش زدہ علاقہ میں آباد عوام بھی چین کی نیند سو سکیں ۔ اس موقعہ پر سابقہ ممبر اسمبلی سرکار ضلع انتظامیہ مطالبہ کیا کہ سرحدی دیہات میںآباد عوام کوپانی بجلی اور ادویات ہمہ وقت دستیاب کروائی جائیںتاکہ کشیدہ ماحول مین عوام کو کسی قسم کی کوئی پریشانی درپیش نہ آئے ۔اس موقعہ پرخطاب کرنے والے مقررین میں چوہدری نزیر حسین ایڈوکیٹ سرپنچ ڈھرانہ ، حاجی میر محمد سرپنچ گوہلد ، چوہدری نزیر حیسن سرپنچ دہری ڈبسی ، چوہدری معروف احمد ،ماسٹر محمد اسلم اور دیگران شامل تھے ۔ 
 
 
 

کالابن مینڈھرمیں پُل کے انہدام کامعاملہ 

پیرپنچال عوامی پارٹی کامنصفانہ تحقیقات کامطالبہ 

جاوید اقبال

مینڈھر//محکمہ دیہی ترقی مینڈھر کی طرف سے کالابن کے گائوں میں ایک پل تعمیر کیا گیا تھا جس کاایک حصہ تعمیر ہونے کے ایک سال کے اندرہی گر گیا جس پر علاقہ کے لوگوں نے سخت افسوس کا اظہار کرتے ہوئے تحقیقات کی اپیل کی تھی جس کے بعد اخبارہذا میں ایک خبر شائع ہوئی تھی جس پر ضلع ترقیاتی کمشنر پونچھ نے انکوائری کیلئے ایک ٹیم مقرر کی تھی جس کو ایک ہفتہ کے اندر موقعہ پر جا کر رپورٹ دینی ہے اس سلسلہ میں پیر پنچال عوامی پارٹی کے ریاستی سکریٹری محمد مشتاق فانی نے ضلع انتظامیہ و گورنر انتظامیہ سے اپیل کی کہ ایک ویجی لینس ٹیم مقرر کرکے موقعہ پر بھیجی جائے اور انکوائری کی جائے ۔ان کا کہنا تھا کہ لاکھوں روپے پل پر متعلقہ محکمہ نے خرچے لیکن پل تعمیر ہونے کے فوراً بعد گر گیا جس کا نہایت ہی افسوس ہے ۔ان کا کہنا تھا کہ پل کا جتنا بھی کام ہوا اس میں غیر معیاری سامان استعمال کیا گیا جس کی تحقیقات ہونی چاہیئے ۔انھوں نے مزید کہا کہ پل کے اندر لوکل ریت اور بجری استعمال کی گئی اور سرکار کے لاکھوں روپے بیکار ہوگئے۔انھوں نے کہا کہ فوری طور ضلع ترقیاتی کمشنر پونچھ نے جو ٹیم انکوائری کیلئے موقعہ پر بھیج ہے اس کو انکوائری کرکے جائز رپورٹ پیش کرنی چاہیے تاکہ جن ملازمین نے وہاں پر غیر معیاری کام کیا ہے ان کے خلاف مقدمہ درج کرکے ان کو وجہ بتائو نوٹس جاری کرنا چاہیے اور ان کی تنخواہ سے لاکھوں روپے لگے پل پر کاٹنے چاہیے ۔ان کا کہنا تھا کہ اگر انکوائری صیح نہیں ہوئی تو ہم متعلقہ محکمہ و ضلع انتظامیہ کے خلاف احتجاج کریں گے لیکن اس سے قبل انتظامیہ کو صیح انکروائری کروا کر رپورٹ پیش کرنی چاہیے یا ویجی لینس ٹیم موقعہ پر بلا کر حالات کا جائزہ لینا چاہیے تاکہ اس کے بعد تمام کام صحیح ہوں۔
 
 
 

ضلع صدررہبرتعلیم ٹیچرز فورم کے والدکی وفات پر

 سیاسی و سماجی تنظیموں اوراساتذہ کااظہارتعزیت

بختیار حسین

سرنکوٹ// رہبر تعلیم ٹیچر فورم کے ضلع صدر سید شاہ نواز حسین شاہ اور سید شاہ جرار کے والد سید امان اللہ شاہ کی وجے پورجموں میں ایک دلدوزسرک حادچے میں وفات پرسرنکوٹ کی تمام سیاسی و سماجی تنظیموں نے تعزیت کااظہارکیاہے۔یہاں جاری الگ الگ تعزیتی پیغامات میںسابق وزیر سید مشتاق احمد شاہ بخاری ،پی ڈی پی لیڈر جاوید چوہدری، پردیش کانگریس کمیٹی کے ریاستی جنرل سکریٹری شاہ نواز چوہدری کے علاوہ سماجی ارکان نے گہرے دکھ کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ہمیں اس حادثے کی خبر نے مایوس کر دیا ہے اور بہت دکھ ہوا کیونکہ مرحوم سید امان اللہ شاہ روحانی شخصیت ہونے کے ساتھ ساتھ ایک جموں کشمیر کے نامور عالم دین مانے جاتے تھے اور ان کا پورا خاندان جو صوفی اور روحانی رہاہے۔معززین ،سیاسی وسماجی لیڈران نے مرحوم سید امان اللہ شاہ کیلئے دعائے مغفرت فرمائی اورغمزدہ خاندان کے ساتھ ہمدردی ظاہرکی۔علاوہ ازیںسرنکوٹ کے رہبر تعلیم اساتذہ کاایک تعزیتی اجلاس  منعقدہواجس میں ضلع صدرپونچھ سید شاہنواز حسین شاہ  کے والد سید امان اللہ شاہ کی اچانک وفات پر رہبر تعلیم سرنکوٹ  نے تعزیت کااظہارکرتے ہوئے غمزدہ خاندان کے ساتھ ہمدردی ظاہرکی۔اس دوران اجلاس میںرہبر تعلیم ٹیچرس فورم سرنکوٹ کے زونل صدر سید محمد یوسف شاہ کے ہمراہ سید علی مرتضیٰ شاہ،نصرت حسین شاہ،فاروق بھٹی،شفاعت پٹھان،مقصود احمد،ماسٹر امتیاز  مغل نے گزشتہ روزسید شاہ نواز کے گھر جاکر لواحقین کے ساتھ گہری ہمدردی کااظہارکیا۔اس دوران انہوں نے کہاکہ  سید امان اللہ شاہ ایک نیک اورروحانی شخص تھے ۔رہبر تعلیم اساتذہ نے کہا کہ ہم شاہنواز شاہ ودیگرلواحقین کے دکھ درد میں برابر کے شریک ہیں ۔انہوں نے مرحوم کیلئے اللہ تعالیٰ سے دعائے مغفرت فرمائی ۔
 
 
 
 

آتشزدگی میں کریانہ دکان کوجزوی نقصان 

راجوری//ملک مارکیٹ راجوری میں کریانہ کی دکان آتشزدگی کے نتیجے میں جل کرخاکسترہوگئی۔تفصیلات کے مطابق اتواراورسوموارکی درمیانی رات کوملک مارکیٹ میں واقع ایک کریانہ کی دکان میں اچانک آگ نمودارہوئی جس کے بعدفائراینڈایمرجنسی سروسز کومطلع کیاگیا۔فوری طورپرفائراینڈایمرجنسی سروسزکی ٹیم سٹیشن افسرمقبول حسین کی قیادت میں موقعہ پرپہنچی اورآگ کوبجھانے کے عمل کوشروع کیااوراس پرقابوپالیاتاہم اس وقت تک دکان کاکافی حصہ جل کرخاکسترہوگئی تھی۔بتایاجاتاہے کہ یہ دکان سلیم خان ولد محمدشفیع ساکن کرلیاں کالاکوٹ ،حال ملک مارکیٹ راجوری کی تھی۔اس بارے میں سٹیشن افسرمقبول حسین نے کہاکہ دکان کومکمل خاکسترہونے سے بچالیاگیاہے ۔انہوں نے کہاکہ گاڑیاں پارک کیے جانے کے سبب آگ بجھانے کے عمل میں دیرہوئی لیکن اس کے باوجودکافی زیادہ نقصان ہونے سے بچالیاگیاہے۔
 
 
 

ریاست کے حالات کے پیش نظرسنوائی کوموخرکرنے کامطالبہ 

رمیش کیسر

نوشہرہ//کانگریس لیڈرایڈوکیٹ اشونی شرمانے مرکزی حکومت سے مانگ کی ہے کہ ریاست کودفعہ 35A کے تحت حاصل خصوصی درجہ سے متعلق عدالت عظمیٰ میں سنوائی کوموخرکیاجائے۔ یہاں جاری پریس بیان میں نوشہرہ کے کانگریس لیڈر ایڈوکیٹ اشونی شرمانے کہاکہ ریاست اس وقت بدامنی کے دورسے گزررہی ہے اورریاست کوحاصل خصوصی درجہ سے متعلق دفعہ 35اے پرسنوائی کولمبے عرصے کیلئے موخرکیاجاناچاہیئے۔انہوں نے کہاکہ جس طرح ریاست کوخصوصی درجہ دیاگیاہے اس کوجوں کاتوں برقراررکھاجائے اوراس کے ساتھ قطعی چھیڑچھاڑ نہ کی جائے۔انہوں نے لوگوں سے اپیل کی کہ وہ آپسی بھائی چارے کوقائم رکھیں۔
 
 

کوٹرنکہ میں افسران کے اعزازمیں الوداعیہ تقریب

 کوٹرنکہ// کوٹرنکہ میں گزشتہ روز تحصیلدار کوٹرنکہ امتیاز چوہدری نائب تحصیلدار کوٹرنکہ، نائب تحصیلدار پیڑی کے تبادلہ کے سلسلے میں تحصیل دفتر کوٹرنکہ میں الوداعی تقریب کا انعقاد کیا گیا جس میں اے ڈی سی کوٹرنکہ وید پرکاش ، اور محکمہ مال کے دیگر ملازمین کے علاوہ کوٹرنکہ کی سیاسی و سماجی شخصیت موجودتھیں۔ اس موقعہ پر سیاسی و سماجی کار کنان نے تحصیلدار کوٹرنکہ امتیاز چوہدری کے دور کو سنہری دور قرار دیا۔ سماجی کارکنوں کا کہنا تھا کہ امتیاز چوہدری نے اپنے دور میں تمام سیاسی و سماجی شخصیت کو ساتھ لے کر چلے اور ہمیشہ غریبوں کی مدد کیلئے کوشاں رہتے، یہاں تک کہ جہاں کوئی درخواست لے کر آتا وہیں راستہ میں ہی اسے دستخط کر دیتے تھے کبھی کسی کو بار بار دفتر میں چکر لگانے پر مجبور نہیں کیا۔ اس کے ساتھ ہی کارکنان نے نائب تحصیلدار عبد القیوم کے اچھے کاموں کیلئے ستائش کی۔انہوں نے کہاکہ دونوں آفیسروں نے مل کر یہاں بہت اچھے کام کیے ۔اے ڈی سی کوٹرنکہ وید پرکاش نے کہاکہ تحصیلدار اور نائب تحصیلدار ہمیشہ عوام کے کام کرنے میں مصروف رہتے تھے کبھی انکے منہ میں کسی کام کیلئے نہ نہیں آیا ہمیشہ اچھے طریقے سے کام نبھایا ہے امید ہے جہاں بھی جائیں گے اچھا کام کرے گا آخر میں تمام سیاسی وسماجی شخصیات نے ان کو الوداع کیا۔
 
 
 

نئے میڈیکل کالجوں کی 1235اور ایف ایس ایل کی 20اسامیاں 

 آن لائن درخواست جمع کرانے کی تاریخ میں توسیع 

جموں/جموں و کشمیر سروس سلیکشن بورڈ نے نئے میڈیکل کالجوں کی 1235 اور محکمہ داخلہ کی فارنسک سائنس لیبارٹری کی 20اسامیوں کے لئے درخواستیں جمع کرانے کے لئے آخری تاریخ میں توسیع کی ہے۔بورڈ کے پی آر او سہیل ملک کے مطابق اِن اسامیوں کے لئے اَب درخواستیں آن لائن 14؍ مارچ 2019 ء تک جمع کرائی جاسکتی ہے۔اُنہوں نے کہا کہ آن لائن درخواست فارم بورڈ کی ویب سائٹ www.ssbjk.inپر دستیاب ہے۔یہ بات قابلِ ذکر ہے کہ جے کے ایس ایس بی نے اننت ناگ ، ڈوڈہ ، راجوری ، بارہمولہ اور کٹھوعہ میں قائم کئے جارہے نئے میڈیکل کالجوں کے لئے 1235 اسامیوں اور فارنسک سائنس لیبارٹری کی 20اسامیوں کے لئے 6 اشتہارات جاری کئے تھے۔اِن اسامیوں کے لئے درخواست فارم جمع کرانے کا عمل 4؍ فروری 2019 ء سے شروع ہوا تھا اور آخری تاریخ 27؍ فروری 2019 ء مقرر کی گئی تھی۔تاہم بورڈ کے ترجمان کے مطابق ایڈورٹائزمنٹ میں وضع کئے گئے دیگر قواعدو ضوابط میں کوئی تبدیلی نہیں کی گئی ہے۔
 
 
 
 

درماندہ مسافروں کیلئے فوج نے امداد فراہم کی

جموں //فوج نے جموں کے بٹھنڈی علا قہ میں درماندہ مسافروں کیلئے لگائے گئے ریلیف کیمپ میں بنیادی سہولیات فراہم کیں ۔فوج کے ٹائیگر ڈویژن کی جانب سے بٹھنڈی مکہ مسجد کے پاس ایک کیمپ کا اہتمام کیا گیا جس کے دوران درماندہ مسافروں کو ضروری اشیاء فراہم کی گئیں ۔یاد رہے کہ پلوامہ فدائین حملے کے بعد جموں میں پیدا شدہ حالات اور جموں و سرینگر قومی شاہراہ بند ہو نے کی وجہ سے درماندہ ہوئے مسافروں کو بنیادی سہولیات فراہم کرنے کیلئے بٹھنڈی کی مکہ مسجد میں مقامی لوگوں نے آپسی اشتراک سے ریلیف کیمپ کا اہتمام کیا جس کے دوران انہوں نے مسافروں کو رہائش کے علا وہ کھانے پینے کی سہولیات فراہم کی جارہی ہیں ۔اسی دوران فوج نے جموں کے دیگر علا قوں کے ساتھ ساتھ درماندہ مسافروں کو مکہ مسجد کے قریب لگائے گئے کیمپ میں کھانے پینے کی سہولیات فراہم کرنے کے علا وہ ان کو سیکورٹی فراہم کرنے کی یقین دہانی بھی کی ۔
 
 
 

 بڑی براہمناں میں10 مارچ کومجوزہ پیغام رضاکانفرنس 

دارالعلوم حنفیہ مجددیہ وجے پور میں علماکرام کااجلاس

سانبہ// دارالعلوم حنفیہ مجددیہ وجے پور سانبہ میں علماکرام کا ایک اجلاس منعقدہواجس کامقصد آئندہ 10 مارچ کو بڑی براہمناں شاہ تالاب میں سید ساحل رضا چیئرمین رضا ٹرسٹ کی زیرنگرانی منعقدہونے والی یک روزہ پیغام مصطفی کانفرنس کے انتظامات پرتبادلہ خیال کرنااورانتظامات کوبہتربناناتھا۔اس دوران مقررین نے بتایاکہ کانفرنس میں ریاست اور بیرون ریاست سے علما کرام اوردانشور شرکت کررہے ہیں اورکانفرنس کا مقصد نبی آخرالزماں آقائے دو جہاں حضرت محمد مصطفی صلی اللہ تعالی علیہ وسلم کی تعلیمات کو عام کرنا ہے۔ اجلاس میں شرکت کرنے والے علما کرام اور مقامی لوگوں نے یہ یقین دہانی کرائی کہ کانفرنس کو کامیاب کرنے کے لئے ہر طرح سے تعاون کیا جائے گا۔ اجلاس میں مولانا حفیظ احمد قادری امام و خطیب جامع مسجد تھلوڑی و سرپرست اعلیٰ دارالعلوم حنفیہ مجددیہ و جے پور، مولانا سرفراز احمد قادری ،امام وخطیب جامع مسجد چک سلاریا، سید ساحل رضا ،مولانا محمد شفیع رضوی، حافظ لیاقت علی، مولانا محمد علی، مولانا رحمت علی ،مولانا خالد ،مولانا فیصل حسین ، واجد علی، سرپنچ عمران خان و دیگر ان شامل تھے۔اس دوران عوام الناس سے اپیل کی گئی کہ وہ زیادہ سے زیادہ تعداد میں 10 مارچ بروز اتوار کو شاہ تالاب میں پیغام مصطفی کانفرنس میں  تشریف لا کر ثواب دارین حاصل کریں ۔