مزید خبریں

 اتوار یا بدھ ہی نہیں عام دن بھی سوہان روح ثابت

شمال وجنوب کی شاہرائوں پر گھنٹوں ٹریفک روکنے کے تکلیف دہ مراحل

نیوز ڈیسک

 سرینگر//بارہمولہ سے سر ینگر تک بندش ختم کرنے کے باجو د شمال وجنوب کی شا ہرائوں پر عام دنوں کے دوران بھی فورسز کانوائے کادبدبہ عام مسافروں، راہگیروں، ملازمین ،مزدوروںاورطلبہ و بیماروں کیلئے سُوہان روح بنا ہواہے جبکہ ٹریفک جام کے نتیجے میں معمول کی عوامی اورکاروباری سرگرمیاں بھی بُری طرح متاثرہورہی ہیں۔ چند روزقبل اگر چہ گورنر انتظا میہ نے سر ینگر سے بارہمولہ تک سفر کر نے و الے مسافروں کو راحت دیتے ہوئے سیولین ٹریفک کی نقل و حمل پر پابندی ختم کرنے کا اعلان کیاتا ہم اس کے باوجود عام دنوں کے دوران شمال وجنوب اور وسطی کشمیرکی شاہرائوں اور سڑ کوں پرفورسز کانوائے گذ ر نے کے دوران سیولین ٹریفک کورو کنے کا سلسلہ جاری ہے۔جب تک فورسز و فوجی قافلے نظروں سے اوجھل نہیں ہوتے تب تک عام گا ڑیوں کو سڑ کوں کے برلب کھڑا کیا جاتا ہے اور دس کلومیٹر کی دور ی سے قبل ہی سیو لین ٹر یفک کو روک دیا جاتا ہے۔اب فورسز کے قافلوں کے جانے دوران دس بیس منٹ کوئی معنی نہیں رکھتے بلکہ اب گھنٹوں ٹریفک کی نقل و حرکت بند کرنے کی تکلیف دہ صورتحال ہے۔ سرینگر لہیہ شا ہر اہ ،سمبل نیو برج ،بارہمولہ، سنگرامہ، سنگھ پورہ، حیدر بیگ، پٹن، نارہ بل، لاوے پورہ،پہرو، پانتھ چوک،  لیتہ پورہ، بارسو، اونتی پورہ، چرسو، سنگم، بجبہارہ، اننت ناگ، قاضی گنڈ ، بانہال، رام بن، اد ھمپور کراسنگوںپر یہ سلسلہ جاری ہے۔جہاں بھی کا نوائے پہنچ جاتی ہے وہاںعام ٹریفک روک دیا جاتا ہے۔ اس صورتحال کے نتیجے میں ضرورت مند افراد بالخصوص بیماروں ، مسافروں،اور تیمار داروں کو سرینگر کی جانب پیش قدمی کرنے کی اجازت نہیں دی جاتی جس کے نتیجے میں کئی بیماروں کو سرراہ درد سے کراہتے ہوئے پایا گیا۔ عام دنوں کے دوران شاہراہ کی ہر کراسنگ پر فوج اور سی آ رپی ایف کے دستوں کو تعینات کیا جا رہا  ہے جو یہ کام انجام دیتے ہیں ۔شہری ٹریفک کی نقل و حرکت پر پابندی کے نتیجے میں  عوام کو سخت مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے۔اس اقدام نے لوگوں کا جینا محال کر رکھا ہے اور درد زہ میں مبتلا خواتین، عام بیماروں حتی کہ کینسر مریضوں کو کانوائے کے وقت گھنٹوں شاہراہ پر روک دیا جاتا ہے۔ لوگوں کے مطابق گورنر انتظامیہ نے ریاست کے لوگوں کو قیدی بنا دیا ہے اور روز روز کی تکالیف میں مبتلا لوگوں کو شاہراہ پر ہفتے میں دو دن کی بندش سے ناقابل بیان مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے۔
 
 
 

 ماورکپوارہ اور گاندربل میں ریچھوں کا حملے ،2شدیدزخمی

اشرف چراغ+ارشاداحمد 

کپوارہ+گاندربل//علاوہ ماور کے متعدد علاقوں میں گزشتہ15روز سے جنگلی جانورو ں نے اُدھم مچادی اور اب تک خونخوار ریچھ نے ایک خاتون سمیت 4افراد کو بری طرح زخمی کر دیا ۔مقامی لوگو ں کا کہنا ہے کہ ہفتہ کو خونخوار ریچھ نے اس وقت لاوسہ ماور میں ایک 55سالہ شہری عبد الرشید شیخ ولد محمد مختار شیخ پر حملہ کر کے انہیں شدید زخمی کر دیا جب وہ اپنی کھیت میں کام کر رہا تھا ۔عینی شاہدین کا کہنا ہے عبد الرشید کی چیخ و پکار کی وجہ سے آس پاس کے لوگ اپنے گھرو ں سے باہر آئے اور ہاتھو ں میں ڈنڈے اور کلہا ڑیا ں اٹھا کر ریچھ کا تعاقب کیا اور مذکورہ شہری کو ریچھ کے چنگل سے چھڑا دیا جبکہ خون میں لت پت شہری کو نزدیکی اسپتال میں علاج و معالجہ کے لئے دا خل کیا تاہم ڈاکٹر نے انہیں سرینگر کے صدر اسپتال منتقل کیا جہا ں اس کی حالت نازک بنی ہوئی ہے ۔اس دوران میر مقام آورہ میں بھی ایک جنگلی جانور نے بستی میں داخل ہو کر ادھم مچا دی جس کے بعد مقامی لوگو ں نے اس سے زندہ پکڑ کر پولیس کے حوالہ کر دیا اور بعد میں انہیں محکمہ وائلڈ لائف نے مزکورہ جانور کو اپنی تحویل میں لے لیا ۔ادھربونہ زل ہاری پورہ میں ریچھ کے حملے میں چرواہا شدید زخمی ہوگیا۔بونہ زل ہاری پورہ میں سوشل فارسٹری نرسری میں چرواہا غلام حسن چوپان ولد لال الدین ساکنہ یارمقام گاندربل اپنی بھیڑوں کے ساتھ موجود تھا کہ اچانک ریچھ نے نمودار ہوکرایک بھیڑ کو چیر پھاڑ کر دیا جس کے بعد ریچھ غلام حسن پر حملہ آور ہوگیا اور اسے شدید زخمی کردیا۔غلام حسن کی چیخ پکار کے بعد ریچھ بھاگ گیا۔مقامی لوگوں نے زخمی غلام حسن کو نزدیکی طبی مرکز پہنچایا  جہاں سے اسے میڈیکل انسٹیچوٹ صورہ منتقل کردیا گیا۔اس واقعہ کے بعد ریچھ کی موجودگی سے پورے علاقے میں خوف و ہراس پھیل گیا ہے۔
 
 
 

 امرناتھ یاترا2019

 شرائین بورڈ کا پجاریوں کیلئے دو روزہ تربیتی پروگرام

جموں// امرناتھ شرائین بورڈ کے پجاری جو پوتر گپھا میں پوجا پاٹھ کی ذمہ داریاں انجام دیتے ہیں ،کو یاتریوں میں مذہبی رہنمائی اور اطلاعات بھی فراہم کرتے ہیں۔ان پجاریوں کی ہنر اور قابلیت میں بہتری لانے اور پوجن ودھی کے فروغ کے لئے شرائین بورڈ نے ان پجاریوںکے لئے دو روزہ مفت ریفریشر کورس متعارف کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔اس طرح یہ ریفریشر آج کالیکا دھام جموں میں شرو ع ہوا ۔  امرناتھ شرائین بورڈ کے ممبر، سنسکرت کے معروف سکالر اور ماتا ویشنو دیوی گرکل کے ڈائریکٹر پروفیسر وشوا مورتی شاستری نے اس کورس کی صدارت کی جس میں 24پجاریوں نے شرکت کی۔کورس کے دوران پروفیسر شاستری نے کہا کہ پجاری مذہب کی جانکاری رکھتے ہیں اور سنسکرت، جوکہ ہندو دھرم کی مقدس زبان مانی جاتی ہے پر عبور رکھتے ہیں ۔انہوں نے کہاکہ ان پجاریوں کو سینکڑوں منترا زبانی یاد 
ہوتے ہیں ۔انہوں نے مزید کہا کہ اِن پجاریوں کو روحانی طور اعلیٰ مانا جاتا ہے۔انہوں نے پجاریوں پر زور دیا کہ وہ پوجن کے طریقۂ کار میں مزید بہتری لائیں ۔
 
 
 

دفعہ370مملکت ہند کیساتھ ریاست کے رشتے کی بنیاد: شاہ فیصل

سرینگر// سابق آئی اے ایس افسر اور جموں کشمیر پیپلز موومنٹ کے سربراہ ڈاکٹر شاہ فیصل نے کہا کہ جس دن دفعہ370 ختم ہوگا اسی دن مرکز کا ریاست جموں کشمیر کے ساتھ رشتہ ختم ہوگا۔ نیوز پورٹل 'دی وائر' کے ساتھ ایک انٹریو میں شاہ فیصل نے دفعہ370 کے حوالے سے کہا ’’دفعہ 370 اس وقت ملک میں بہت بڑا مسئلہ بن گیا ہے آج دفعہ 370 اور دفعہ35 اے کے مسلے اٹھائے جاتے ہیں ۔یہ ریاست کی سیاست کو مضبوط بنانے کے لئے نہیں بلکہ ملک کی دوسری ریاستوں میں بی جے پی کو جیت دلانے کے لئے اٹھائے جارہے ہیں جس دن دفعہ 370 چلا جائے گا اسی دن یونین آف انڈیا اور ریاست کے درمیان رشتہ ختم ہوگا، تو پھر شاید مسئلہ ہی ختم ہوگا‘‘۔دفعہ 370 کو مرکز اور جموں کشمیر کے درمیان رشتے کا  ایک پل قرار دیتے ہوئے انہوں نے کہا'یونین آف انڈیا اور ریاست جموں کشمیر کے بیچ میں جو رشتہ ہے، ہم کہتے ہیں اْس پل کو مت توڑئیے، وہ پْل دفعہ 370  ہے ہم اسی پل کے تحفظ کے لئے بیٹھے ہیں جبکہ دلی میں پورا الیکشن اسی پر لڑا جارہا ہے، اْس پل کو توڑنے کی باتیں ہورہی ہیں، اس کو جلانے کی باتیں ہورہی ہیں‘‘۔
 
 
 

پہلگام اور اوڑی میں عوامی دربار

سرینگر// ضلع ترقیاتی کمشنراننت ناگ خالد جہانگیر نے پہلگام میںعوامی دربار منعقد کرکے لوگوں کی شکایات اورمعاملات کاجائزہ لیا۔اے سی ڈی،سی ای او،پی ڈی اے،ایس ڈی ایم پہلگام اور سی ایم او کے علاوہ متعلقہ انجینئر اورآفیسران بھی اُن کے ہمراہ تھے۔اس موقعہ پر مختلف شعبوں سے تعلق رکھنے والے لوگوں ،بشمول اوقات ممبران، سیول سوسائٹی پہلگام کے نمائندوں، ہوٹل مالکان ،ٹھیکیداروں اور مرکبانوں کے علاوہ سومو ایسوسی ایشن نے کئی معاملات ابھارے جبکہ عوامی مفادات سے جُڑے مطالبات کو بھی اجاگر کیا گیا جن میں پہلگام کو مزید جاذب نظر بنانے،ہسپتال کی تعمیر ،سڑکوں پر میکڈم بچھانے اورسکول نیز محکموں میں مزید عملہ تعینات کرنے جیسے مطالبات بھی شامل ہیں۔ترقیاتی کمشنر نے یقین دہانی کرائی کہ جائز مطالبات اورمعاملات کے حل کیلئے ترجیحی بنیادوں پر اقدامات کئے جائیں گے۔بعد میں ترقیاتی کمشنر نے شری امرناتھ جی یاترا کے سلسلے میں کئے جارہے انتظامات کاجائزہ لیا اوریاترا کے احسن اورخوش اسلوبی سے انعقاد کے لئے متعلقہ آفیسران کو قریبی تال میل کے ساتھ کام کرنے کی تلقین کی۔ادھر ضلع انتظامیہ بارہمولہ نے نوشیرا اوڑی میں عوامی شکایات کے ازالے کے ایک کیمپ کا انعقاد کیا۔ترقیاتی کمشنر ڈاکٹر جی این ایتو نے کیمپ کی صدارت کی۔ایس ایس پی بارہمولہ،جوائنٹ ڈائریکٹر پلاننگ ،اے سی ڈی،سی ایم او چیف میڈیکل آفیسر کے علاوہ دیگر افسران اور انجینئروں نے بھی کیمپ میں شرکت کی۔ کیمپ میں بڑی تعداد میںعام شہری بھی موجود تھے۔اس موقعہ پر سول سوسائٹی کے ممبران اور سرکردہ شہریوں نے عوامی مسائل اورمشکلات کو اجاگر کیا۔کیمپ کے دوران عوامی نمائندوں نے پیرنیاں میںٹرا نسپورٹ سہولیات دستیاب رکھنے،نوشیرا بونیار میں طبی سہولیات کی دستیابی کو یقینی بنانے،سڑکوں کی تعمیر وتجدید اوربجلی سپلائی میںبہتری لانے کے علاوہ دیگر مطالبات بھی پیش کئے۔ترقیاتی کمشنر نے یقین دہانی کرائی کہ اُن کی شکایات اورمعاملات کے حل کے لئے ترجیحی بنیادوں پر اقدامات کئے جائیں گے۔انہوںنے آفیسروں کو شکایات کے ازالہ کے لئے معیاد بند مدت میںاقدامات کرنے کی ہدایات دیں۔
 
 
 

منشیات مخالف ہفتہ سوپور میں روڈ شو کا اہتمام

غلام محمد

سوپور//ضلع بارہمولہ میں 29 اپریل سے لیکر 5مئی تک منشیات مخالف ہفتہ منایا جارہا ہے۔ اس سلسلے میں رضا کار تنظیم ’’راحت‘‘ نے سیول سوسائٹی سوپور کے اشتراک سے منشیات کی لت کے خلاف ’راحت ‘کے دفتر جنرل بس اسٹینڈ سے لیکر مدر اینڈ چائلڈ اسپتال سوپور تک ایک روڑ شو کا اہتمام کیا ۔اس ریلی میں سیول سوسائٹی سوپوری کے ممبران، اکنامک الائنس اور مختلف طلباء نے حصہ لیا۔اس موقعے پر ’راحت‘ کے چیرمین عاشق حسین ذکی نے کہا کہ نشے کی لت سوپور قصبہ کے لئے ایک سنگین مسئلہ ہے۔ ان کا کہنا تھا ’’ہم نے پہلے ہی مسلح تحریک میں ایک نسل کھوئی ہے اور لگاتار کھو رہے ہیں، مگر اب ہم اپنی نئی نسل کو نشے کی لت سے کھو رہے ہیں‘‘۔انہوں نے کہا کہ اس سنگین مسئلے سے نمٹنے کیلئے اقدامات کی ضرورت ہے۔ 
 
 
 

ہائر سیکنڈری سکول چندی لورہ میں پروگرام

ٹنگمرگ/ مشتاق الحسن/گورنمنٹ ہائر سیکنڈری اسکول چندی لورہ ٹنگمرگ میں منشیات مخالف ریلی اور سمینار کا انعقادہوا ۔اسکول میں منعقد کی گئی تقریب میں سب ڈوثرنل مجسٹریٹ ٹنگمرگ، تحصیلدار ٹنگمرگ، بلاک میڈیکل افسر ٹنگمرگ اورپرنسپل ڈگری کالج ٹنگمرگ کے علاوہ کئی معزز شہریوں کے علاوہ معروف عالم دین مفتی نظیر احمد قاسمی نے شرکت کی ۔ ادارے کے وائس پرنسپل ظفر اقبال لون نے استقبالیہ خطبہ پیش کیا  اور پروگرام کے اختتام پر ادارے کے پرنسپل سید مختار احمد شاہ نے مہمانوں کا شکریہ ادا کیا۔ 
 

بانڈی پورہ میں مارکیٹ چیکنگ 

 قصوروار دکانداروں پر 10 ہزار کا جرمانہ عائد

بانڈی پورہ// اے سی آر کی قیادت میں میونسپل کمیٹی ،لیگل میٹرولاجی ،خوراک ،رسدات وعوامی تقسیم کاری کے افسران پرمشتمل مارکیٹ چیکنگ سکارڈ نے قصبہ بانڈی پورہ کے مختلف بازاروں کا دورہ کیا جس دوران مختلف دفعات کے تحت قصورواردکانداروں پر 10000روپے کا جرمانہ عائد کیا گیا۔اے سی آر نے مارکیٹ چیکنگ میں سرعت لانے پر زوردیا تاکہ ناجائز منافع خوری،ذخیرہ اندوزی اورغیر معیاری اشیأ کی فروخت پر روک لگائی جاسکے۔اے سی آر نے نوسُو ،نیو بس اسٹینڈ ،نشاط پارک،نبر پورہ،اولڈجامع،غوثیہ مارکیٹ،گلشن چوک،جامع جدید اورنائو پورہ کا دورہ کرکے ٹریفک کی صورتحال کامعائنہ کیا ۔انہوںنے غیر قانونی پارکنگ اورٹریفک قوانین کی خلاف ورزیوں میںملوث ڈرائیورون کے خلاف سخت کارروائی کرنے کی ہدایت دی۔
 
 
 

 رام بن ضلع کے رہبر تعلیم اساتذہ مستقلی کے منتظر   

محمد تسکین

بانہال // محکمہ تعلیم میں 6 سال سے زائد عرصہ مکمل کرنے کے بعد بھی ضلع رام بن کے کئی رہبر تعلیم ٹیچر اپنی مستقلی کے منتظر ہیں ۔ بانہال ، کھڑی ، اکڑال ،پوگل پرستان، رام بن ، گول اور بٹوٹ کے 6 تعلیمی زونوں سے تعلق رکھنے والے رہبر تعلیم اساتذہ نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ ضلع رام بن میں پچاس کے قریب رہبر تعلیم اساتذہ کی فائلیں پچھلے چھ ماہ سے مستقلی کیلئے چیف ایجوکیشن دفتر رام بن اور زونل ایجوکیشن دفاتر سے ڈائریکٹر سکول ایجوکیشن جموں روانہ کی گئی ہیں لیکن اُن کی مستقلی کے ضمن میں مسلسل تاخیر اور بہانہ بازی کی جارہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ سرکاری نوکریاں نہ ملنے کے بعد بیشتر اعلی تعلیم یافتہ بیروزگار نوجوانوں نے مقامی سطح پر قائم سرکاری سکولوں میں بطور رہبر تعلیم ٹیچراپنے مستقبل کے تانے بانے اسی محکمے سے جوڑے ہیں لیکن انہیں نظر انداز کیا جارہا ہے۔ اس بارے میں محکمہ تعلیم کے ایک افسر نے بتایا کہ پانچ سال کا عرصہ مکمل کرنے والے رہبر تعلیم اساتذہ کو گھبرانے کی کوئی ضرورت نہیں ہے اور قانونی قواعدو ضوابط کے تحت انہیںمستقل کیا جارہا ہے۔ 
 
 
 

جموں وکشمیر ثقافتی مرکز بڈگام کی جانب سے ادبی تقریب

سرینگر/ /جموں کشمیر ثقافتی مرکز بڈگام اور گْلشن علم وادب کانسپورہ بارہمولہ نے ہائیگام سوپور میں’ملاقات‘ کے عنوان سے ایک ادبی تقریب کا انعقاد کیا جس میں قاضی ہلال دلنوی اور محی الدین گلشن سے ہائیرسیکنڈری اسکول ہائیگام سوپور میں منعقد کی۔ اس موقعہ پر مرکز نے مذکورہ شخصیتوں کے علاوہ نوجوان قلمکار ظہور ہائیگامی، رشید تنہا اور صحافی عادل اسماعیل کو اعزازات سے نوازا۔
 
 
 

مراز ادبی سنگم نے ڈاکٹر عزیز حاجنی کو مبارک باد دی 

 اُن کے ادبی سفر میں اُن کی کاوشوں کی سراہنا کی

سری نگر// مراز ادبی سنگم نے محکمہ اطلاعات و تعلقات عامہ کے اشتراک سے سابق سیکرٹری جموں اینڈکشمیر اکادمی آف آرٹ ، کلچر اینڈ لنگویجز اور معروف شاعر ڈاکٹر عزیز حاجنی کی ادبی کار ناموں میں اُن کی کاوشوں کے سلسلے میں انہیں مبارک باد دی۔تقریب کی صدارت معروف شاعر غلام نبی آتشؔ نے کی جبکہ معروف شاعر و براڈ کاسٹر فاروق نازکی ؔ، ناظم محکمہ اطلاعات و تعلقات عامہ گلزار احمد شبنم اور یوسف جہانگیر دیگر معزز شخصیات میں شامل تھے۔اپنے استقبالیہ خطبے میں شاعر علی شیدا ؔ نے ڈاکٹر حاجنی کی زندگی اور ان کے ادبی کار ناموں پر روشنی ڈالی ۔اُنہوں نے کہاکہ ڈاکٹر عزیز حاجنی نے ریاستی کلچرل اکیڈیمی کے سیکرٹری کے بطور ادبی میدان میں مثبت طریقۂ کار اپنایا ۔فاروق نازکیؔ نے اپنے خطاب میں ڈاکٹر عزیز حاجنی کے ادبی کارناموں پر روشنی ڈالتے ہوئے کہا کہ ڈاکٹر حاجنی ریاست کے تین خطوں کے درمیان ایک پُل کی طرح اپنے فرائض انجام دیتے رہے ۔اُنہوں نے کہا کہ بحیثیت سیکرٹری اکیڈیمی ڈاکٹر حاجنی نے فن،تمدن اور زبانوں کے فروغ کے لئے اپنی انتھک کوششیں انجام دیں اور انہیں صدیوں تک ان کوششوں کے لئے یاد کیا جائے گا۔اُنہوں نے مزید کہا کہ ڈاکٹر حاجنی نے مختلف ادبی اور تمدنی میدانوں کو فروغ دینے میں شامل تمام شراکت داروں کو اکٹھا کرنے میں کامیابی حاصل کی ۔ ناظم محکمہ اطلاعات تعلقات عامہ گلزار احمد شبنم نے ڈاکٹر حاجنی کی سرکاری خدمات بخوبی مکمل کرنے کے لئے اُن کی سراہنا کی ۔اُنہوں نے کہا کہ ڈاکٹر حاجنی کو سماج کے تمام طبقوں کی طرف سے مبارک بادی کے پیغامات مل رہے ہیں جس سے یہ بات ظاہر ہوتی ہے کہ اُنہوں نے اپنے طویل سفرمیں مختلف عہدوں پر تند ہی اور لگن سے اپنے فرائض منصبی انجام دئیے۔اُنہوں نے امید ظاہر کی کہ ڈاکٹر حاجنی ریاست کی نئی نسل کے لئے فن، تمدن اور زبانوں کے میدان میں ایک مشعل راہ ثابت ہوں گے ۔ناظم اطلاعات نے کہا کہ ڈاکٹر حاجنی بحیثیت استاد ، ایک مصنف ،شاعراور سرگرم تمدنی کارکن ہمیشہ یاد کئے جائیں گے جنہوں نے اِن میدانوں میں مثبت اُمید جگائی۔اُنہوں نے اُمید ظاہر کی کہ ڈاکٹر حاجنی ریاست کے مختلف خطوں اور گروپوں کے درمیان تعلقات مضبوط بنانے میں اہم رول ادا کریں گے ۔اُنہوں نے کہا کہ بحیثیت ساہتیہ اکادمی کے کنوینئر ڈاکٹر حاجنی بڑے پیمانے پر تمدن کو بڑھاوا دینے میں کوشش انجام دیں گے ۔دیگر اصحاب میں سابق ناظم تعلیم محمد رفیع،ریڈیو کشمیر سری نگر کے سابق ناظم صاحبان جن میں رفیق راز،رخسانہ جبین شامل ہیں کے علاوہ شاعر و ماہر تعلیم بشر بشیر ، شاعر جی آر حسرت گڈھا، مزاحیہ شاعر ظریف احمد ظریف ، اقبال نازکی،عیاش عارف ،معروف شاعر ایوب صابراور صدر ادبی مرکز کمراز فاروق رفیع آبادی اور کلچرل آفیسر ریاض فاضلی تقریب پر موجود تھے۔دریں اثنا پروفیسر محمدزمان آزردہ نے ڈاکٹر حاجنی کو ایک توصیفی سند اور ایک شال پیش کیاجبکہ کشمیری لنگویجزس آرگنائزیشن نے ڈاکٹر حاجنی کو تحفے کے طور پر شال پیش کیا۔معروف تاریخ دان اور سابق ڈائریکٹر سٹاف کالج کشمیر یونیورسٹی ڈاکٹر فاروق فیاض نے اس موقعہ پر ڈاکٹر حاجنی کی زندگی اور حصولیابیوں پر ایک مقالہ پیش کیا۔اس موقعہ پر ڈی آئی پی آر کی کلچر ل وِنگ نے ایک تمدنی پروگرام پیش کیا جس سے سامعین محظوظ ہوئے۔
 
 

ڈاکٹر فاروق اور عمر عبداللہ کا اظہارِ تعزیت

سرینگر// نیشنل کانفرنس صدرڈاکٹر فاروق عبداللہ اور نائب صدر عمر عبداللہ نے پارٹی رکن حاجی غلام قادر آخون کی ہمشیرہ کے انتقال پر گہرے صدمے کا اظہار کیا ہے ۔ انہوں نے سوگوارکنبے سے تعزیت کی اورمرحومہ کی جنت نشینی کیلئے دعا کی۔ دونوں پارٹی لیڈران نے بہوری کدل کے محمد عبداللہ لون کے انتقال پر بھی گہرے صدمے کا اظہار کیا ہے۔ پارٹی جنرل سکریٹری علی محمد ساگر نے مرحوم کے گھر جاکر تعزیت کی ۔ پارٹی لیڈران میاں الطاف احمد اور شیخ اشفاق جبار نے بھی تعزیت کا اظہار کیا ہے۔
 
 

صحرائی کا پارٹی اراکین سے اظہار ہمدردی

سرینگر// تحریک حریت چیئرمین محمد اشرف صحرائی نے تنظیم کے اراکین محمد اکبر بٹ اور منظور احمد بٹ کے والد عبدالغنی بٹ درسون کرالہ پورہ کپوارہ کی وفات پر رنج وغم کا اظہار کرتے ہوئے غمزدہ خاندان کے ساتھ تعزیت کی۔ صحرائی نے مرحوم کے حق میں جنت نشینی کی دُعا کرتے ہوئے کہا کہ ’ہم غمزدہ خاندان کے غم میں برابر کے شریک ہیں‘۔
 
 
 

دیش کا مہا تہوار  لیہہ میںرائے دہندگان کیلئے پروگرام 

لیہہ// لیہہ ضلع کے رائے دہندگان کو انتخابات میں حصہ لینے اور ووٹ کی قیمت کا احساس دلانے کے لئے ضلع الیکشن اتھارٹی لیہہ مارکیٹ میں ’’ دیش کا مہا تہوار‘‘ کے تحت ایک موسیقی کا پروگرام منعقد کیا۔ڈسٹرکٹ الیکشن آفیسر اونی لواسا ، جنر ل اوبزرور الکیشن کمار شرما ، اخراجاتی اوبزرور ملن رُچل ، اے ڈی ڈی سی لیہہ موزز کنزن ، نوڈل آفیسر سویپ تاشی ڈولما ،ضلع افسران اور عوام کی بڑی تعداد نے پروگرام میں حصہ لیا۔اس موقعہ پر ایک تمدنی پروگرام پیش کیا گیا جس میں سکولوں اور کالجوں سے تعلق رکھنے والے طلباء نے حصہ لیا۔
 
 
 
 
 
 
 
 
 
 

جنگلات کو آگ سے بچائیں

بانہال میں جانکاری کیمپ 

محمد تسکین

بانہال // جنگلات کو آگ سے بچانے کیلئے محکمہ جنگلات بانہال کی طرف سے مڈل سکول چاچاہال بانہال میں ایک روزہ جانکاری کیمپ کا انعقاد کیا گیا جس کی صدارت رینج آفیسر بانہال محمد الطاف وانی نے کی جبکہ بلاک فارسٹ آفیسر محمد رفیع بیگ اور علاقے کے دیگر معززین بھی اس جانکاری کیمپ میں موجود تھے۔اس موقعہ پر مقامی لوگوں کو جنگلات کا محافظ قرار دیتے ہوئے ان کی حفاظت پر زور دیا گیا۔ رینج افسر بانہال الطاف وانی نے لوگوں پر زور دیا کہ وہ جنگلات کو بچانے اور جنگلات میں لگنے والی آگ کی وارداتوں کو قابو میں کرنے کے اقدامات پر خصوصی توجہ دیں ۔
 
 
 

امن کانفرنس طلب کی جائے 

بھیم سنگھ کا اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل سے مطالبہ 

سرینگر//نیشنل پنتھرس پارٹی کے سربراہ پروفیسربھیم سنگھ نے اقوام متحدہ کے سیکریٹری جنرل اینٹونیوگویئٹرس سے ناوابستہ ممالک کی امن کانفرنس بلانے کا مطالبہ کیا ہے تاکہ عالمی امن ،بھائی چارے اور بین الاقوامی سیکورٹی کو کچھ لوگوں سے لاحق خطرے کوٹالاجاسکے ۔پنتھرس سربراہ نے تمام ناوابستہ ممالک سے اپنے مقامی و قومی تنازعات کو فراموش کرکے عالمی امن اور انسانی وقار کے لئے متحد ہونے کی اپیل کی تاکہ پوری دنیا میں امن اور انسانی وقارکے مفادمیں قومی اور بین الاقوامی سطح پر ہتھیاروں کی دوڑکو ختم کیا جاسکے ۔پروفیسر بھیم سنگھ نے اقوام متحدہ کے سکریٹری جنرل سمیت ہندستان کے وزیراعظم نریندر مودی، پاکستان کے وزیراعظم عمران خان اور سری لنکا کے صدر،تمام ناوابستہ ممالک کے سربراہان کے نام ایک خط میں کہا کہ تمام ناوابستہ ممالک کو متحد ہوکر عالمی امن اور انسانی وقار کے تحفظ  کے لئے پہل کرنی چاہئے جس طرح 1955میں ہندستان ، یوگوسلاویہ اور کچھ دیگر ممالک نے بینڈنگ کانفرنس کا اہتمام کیا تھا جہاں ناوابستہ ممالک نے لاطینی امریکہ سے لیکر جنوب مشرق تک مکمل تخفیف اسلحہ، انسانی وقار، آزادی اور ترقی  کے لئے ناوابستہ تحریک کی شروعات کی تھی۔ناوابستہ ممالک نے امن تحریک کو منظم کرنے میں منفرد کردار کیا تھا جبکہ ہندستان اور چین نے پنچ شیل معاہدہ پر دستخط کئے تھے۔
 
 
 

۔14،15اور18مئی کو پھر بارش کاامکان:محکمہ موسمیات 

سرینگر// وادی میں سنیچروار کی صبح سے ہی موسم میں بہتری ہونے پر اہلیان وادی نے راحت کی سانس لی ،اس دوران محکمہ موسمیات نے پیشن گوئی کی ہے کہ اگلے چنددنوں تک وادی میں موسم خوشگوار رہنے کاامکان ہے ۔ وادی کشمیر میں سنیچر کو کئی روز بعد دھوپ کھلی اور موسم بہتر رہا جس کی وجہ سے درجہ حرارت میں اضافہ دیکھنے کو ملا ۔ موسم میں بہتری پر اہلیان وادی نے راحت کی سانس لی جبکہ زمینداروں ، مالکان باغات اور کسانوں میں خوشی کی لہر دوڑ گئی کیوں کہ لگاتار موسم ابر آلود رہنے اور بارشوں کا سلسلہ جاری رہنے کے نتیجے میں فصلوں کے خراب ہونے کا اندیشہ ہوتا ہے اوراس وقت فصل کیلئے دھوپ نہایت ہی ضروری ہے۔ اس دوران محکمہ موسمیات نے پیش گوئی کی ہے کہ وادی میں اگلے چند دنوںتک موسم خوشگوار رہے گا اوردرجہ حرارت میں نمایاں اضافہ دیکھنے کو ملے گا۔ تاہم 14،15اور 18مئی کو ایک بار پر شدید بارشیں ہوسکتی ہے۔ (سی این آئی )
 
 
 
 
 
 
 
 

پیپلزڈیموکریٹک پارٹی کا سجاد کرگلی کی حمایت کااعلان

سرینگر//پیپلزڈیموکریٹک پارٹی نے سنیچروار کو لداخ کے لوگوں سے اپیل کی کہ وہ منجملہ سجاد کرگلی کے حق میں اپنے ووٹ کااستعمال کریں۔پی ڈی نے سجاد کرگلی کو شائستہ وذی شعور آواز قرار دیا۔ پارٹی کے سینئرلیڈرنعیم اکتر نے  لداخ کے لوگوں کے نام ایک پیغام میں کہا کہ سجادکرگلی کی آنے والے چنائو میں جیت سے ریاست اور ملک میں سیکولرطاقتیں مضبوط ہوں گی ۔انہوں نے مزیدکہا کہ پارلیمنٹ میں سجاد شعوراورعقل کی آوازہوں گے ۔ کانگریس پارٹی پر لداخ میں سیکولرووٹ کو تقسیم کرنے کاالزام عائد کرتے ہوئے اختر نے کہا کہ پارٹی کواپنا موقف واضح کرنا چاہیے کہ اُن کاامیدوار سپالزر ہے یا کربلائی ۔کانگریس نے عیاں طور بھاجپاکوفائدہ پہنچانے کیلئے لداخ میں سیکولرووٹوں کی تقسیم کیلئے دوامیدوار کھڑاکئے ہیں ۔اگر کربلائی بطور آزارا ُمیدوارالیکشن میں حصہ لے رہے ہیں اور کانگریس کے ممبر بھی ہیں تویہ کہنے کی ضرورت نہیں ہے کہ کانگریس بھاجپاکومدد کرنے کی کوشش کررہی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ بصورت دیگر کسی اور پارٹی نے کربلائی کو پارٹی سے نکالاہوتااگر اُس نے نامزدگی کاغذات داخل کئے ہوتے ۔تاہم کانگریس نے ایسا کچھ نہیں کیا جواس بات کاثبوت ہے کہ کانگریس لداخ میں سیکولرووٹ کو تقسیم کرنے میں مدد دے رہا ہے ۔
 
 
 
 

افسپاء کشمیر میں ہزاروں ہلاکتوں کی وجہ

سوزنے وزیردفاع کابیان ردکیا

سرینگر//سینئرکانگریس رہنما اور سابق مرکزی وزیر پروفیسر سیف الدین سوز نے وزیردفاع نرملا سیتارمن کے اس بیان کو ردکیا ہے جس میں انہوں نے جموں وکشمیر میں افسپا قانون کے ہٹائے جانے کوخارج ازامکان قراردیتے ہوئے کہا تھاکہ اس قانون کی فورسز کو ضرورت ہے۔ پروفیسر سوز نے کہا کہ 10 نومبر 1990 کو جب لوک سبھا میں اس بل کو پیش کیاگیا تو میں نے اس قانون کی بل کو اسپیکرکے سامنے پھینک دیا تھا۔ انہوں نے کہا کہ اس کی خاص وجہ یہ تھی کہ اس قانون کی دفعہ4کے تحت کوئی بھی سپاہی افسریامجسٹریٹ کی اجازت کے بغیر گھروں کوجلاسکتا ہے اورانسانوں کو مارسکتا ہے اورتباہی مچاسکتا ہے اور وہی کچھ برسوں سے کشمیر میں ہورہا ہے ۔سوزنے کہا کہ جب میں نے لوک سبھامیں اس قانون کیخلاف احتجاج کیا توبھاجپا کے ناخواندہ اورزبان درازممبروں نے مجھے انتہا پسندوں کاحامی قراردیاتھا۔سوزنے وزیردفاع کے بیان کوردکرتے ہوئے سوال کیا کہ کیا اُنہیں ابھی لوک سبھا الیکشن کے دوران کشمیریوں کی ہندیونین کے ساتھ دوری اورناراضگی نظر نہیں آئی ؟انہوں نے کہاکہ وزیردفاع کو کشمیرکی زمینی حقیقت نظرنہیں آرہی ہے ۔اُن کو یہ بھی معلوم نہیں ہے کہ اس قانون کے ذریعے ہزاروں کشمیریوں کو بے رحمی کے ساتھ قتل کیاگیا۔سوزنے کہاخوش آئندبات یہ ہے کہ کانگریس نے اپنے منشور میں کشمیریوں کویہ یقین دلایا ہے کہ اس قانون میں تبدیلی لائی جائے گی اور انسانی حقوق کی حفاظت یقینی بنائی جائے گی۔
 
 
 
 
 

حملہ آوروں کی کشمیر اور کیرالہ میں تربیت کا امکان ، سری لنکا کے فوجی سربراہ کا دعویٰ

سرینگر //سری لنکا کے فوجی سربراہ لیفٹنٹ جنرل سینا نائیک نے دعویٰ کیا ہے کہ ملک میںایسٹر کے موقعے پر گزشتہ ہفتے ہوئے خوفناک بم دھماکے میں ملوث حملہ آور مبینہ طور پر کشمیر اور کیرالہ سے تربیت یافتہ تھے۔ سری لنکا کے فوجی سربراہ لیفٹنٹ جنرل سینا نائیک نے اس بات کا دعویٰ کیا ہے کہ ملک میں 21اپریل 2019کو ہوئے خوفناک بم دھماکے میں ملوث حملہ آور کشمیر اور کیرالہ سے تربیت حاصل کرچکے تھے۔ ملک کے فوجی سربراہ نے بتایا کہ حملہ آوروں کے ہندوستان کے کشمیر اور کیرالہ کے دورہ کرنے کا مقصد وہاں دہشت گرد گروہوں سے تربیت حاصل کرنا تھا۔ ادھر ملک کی صدر میھتیرا نے لنکا کی سیکورٹی پر حفاظت سے غفلت برتنے کا الزام عائد کیا ہے۔ حالانکہ دھماکے سے قبل کئی مرتبہ سیکورٹی اداروں کو انتباہ بھی دیا جاچکا تھا لیکن انٹیلی جنس اداروں نے اس پورے معاملے سے غفلت کا مظاہرہ کیا۔ادھر ہندوستان کی قومی تحقیقاتی ایجنسی نے سری لنکا میں ہوئے دہشت گردانہ حملے کے بعد تامل ناڈو اور کیرالہ میں کئی چھاپے ڈالے جہاں سے ممنوعہ تنظیم داعش سے مبینہ طور پر روابط رکھنے والے ایک شخص ریاض احمد ابو بکر کو گرفتار کیا گیا جس نے ایجنسی کی تحویل میں اس بات کا اعتراف کرلیا کہ وہ سری لنکا کے حملہ آور زہران ہاشمی اور ذاکر نائیک سے کافی متاثر تھا۔خیال رہے 21اپریل 2019کو ہوئے خودکش حملوں میں 300سے زائد افراد مارے گئے جبکہ سینکڑوں کی تعداد میں زخمی لوگ ابھی بھی ملک کے مختلف ہسپتالوں میں زیر علاج ہے۔
 
 

کشمیر میں تربیت کاکوئی ثبوت موجود نہیں:بھارت

سرینگر//سری لنکا  میں پیش آئے خودکش حملوں میں ملوث حملہ آوروں کے کشمیر کادورہ کرنے کورد کرتے ہوئے خفیہ اداروں نے کہا کہ اُنہیں اس کاکوئی ثبوت نہیں ہے۔سری لنکا کے فوجی سربراہ کے بیان پردرعمل ظاہر کرتے ہوئے ایک اعلیٰ انٹلی جنس افسر نے کہا کہ 12خودکش بمباروں جنہوں نے ایسٹر کے موقعہ پر یہ حملے کئے ،اُن کے کشمیر میں تربیت حاصل کرنے کے کوئی ثبوت نہیں ہیں ۔اس افسر نے اپنا نام مخفی رکھنے کی شرط پر بتایا کہ ہمارے پاس ایسی کوئی معلومات نہیں ہیں۔سری لنکا کی انٹلی جنس نے ہمیں ایسی کوئی اطلاع نہیں دی ہے جس کی بنیاد پر ہم کوئی کارروائی کرسکتے۔مرکزی وزارت داخلہ کے ایک افسر نے بھی کہا کہ سری لنکا نے ایسی کوئی جانکاری بھارت کو نہیں دی ہے ۔اس کے علاوہ سری لنکا کی حفاظتی ایجنسیوں نے تحقیقات کے بعد ایسے کسی امکان کوردکیا ہے ۔
 
 
 

ریاست میں آزاد صحافت 1931 کے شہیدوں کی دین:نیشنل کانفرنس

سرینگر// نیشنل کانفرنس کے جنرل سکریٹری علی محمد ساگر اور معاون جنرل سکریٹری ڈاکٹر شیخ مصطفیٰ کمال نے آزادی صحافت کے عالمی دن کے سلسلے میں کہا کہ شہدائے کشمیر 1931-32کی عظیم شہادتوں کی بدولت ہی ریاست کو آزاد صحافت اور پریس پلیٹ فارم کی آزادی نصیب ہوئی۔ اُنہوں نے کہا کہ صحافت کی آزادی کو فروغ دینے کی خاطر مرحوم شیخ محمد عبداللہ نے بیش بہا اور ناقابل فراموش مسائل اور مشکلات جھیلے حتیٰ کہ اِس سلسلے میں مرحوم شیر کشمیر اور اُن کے ساتھیوں کو زندان میں زندگی کے ایام کاٹنے پڑیں جو تاریخ ہے۔ اُنہوں نے کہاکہ صحافت سے تعلق رکھنے والے قلمکار اور دانشور حضرات کو معلوم ہوگا کہ ریاست میں پریس پلیٹ فارم کی آزادی اور آزاد صحافت کیلئے نیشنل کانفرنس کا کیا رول ہے۔اُنہوں نے کہا کہ 1996 میں نیشنل کانفرنس نے حکومت سنبھالنے کے ساتھ ہی تباہ شدہ ڈھانچے کو پٹری پر واپس لانے کے ساتھ ساتھ اخبارات کی اشاعت بحال کروائی اور پریس پلیٹ فارم کی آزادی میں نئی روح ڈالدی۔
 
 
 
 
 

سعودی عرب میں پہلا روزہ پیر کو 

نیوز ڈیسک

ریاض//سعودی عرب میں رمضان المبارک کا چاند نظر نہیں آیا  اور اب مملکت میں پہلا روزہ پیر کو ہوگا۔عرب ٹی وی کے مطابق رمضان المبارک کا چاند دیکھنے کے لئے سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات میں عدالتی کونسل کا اجلاس ہوا جس میں کونسل ممبران کو چاند نظر آنے کی کوئی شہادت موصول نہیں ہوئی۔ اس کے بعد عرب ممالک میں پہلا روزہ بروز پیر 6 مئی کو ہوگا۔عرب ماہرین کے مطابق جمعرات کو رمضان المبارک کا چاند نظر آنے کے امکانات بہت کم تھے اور اسی بنا پر متحدہ عرب امارات، قطر، کویت، اردن، فلسطین، مسقط اور دیگر ممالک میں بھی رویت ہلال کی ذیلی کمیٹیاں قائم کی گئی تھیں۔ جنہوں نے ہلالِ رمضان کی کوئی شہادت بیان نہیں کی۔دوسری جانب آسٹریلیا میں بھی رمضان المبارک کا چاند نظر نہ آنے کا اعلان کیا گیا ہے۔
 
 
 

اصلاح معاشرہ وقت کی اہم ضرورت:مولانا قمی

 سرینگر// پیروان ولایت کے سرپرست اعلیٰ مولانا سبط محمد شبیر قمی نے اصلاح معاشرہ و اتحاد ملت پر زور دیتے ہوئے کہا کہ علماء کی ذمہ داری بنتی ہے کہ وہ معاشرہ میں پھیلی برائیوں کو جڑ سے اکھاڑ پھینکنے کیلئے ٹھوس اقدامات کریں۔مولانا قمی میرواعظ منزل راجوری کدل میں ایک اجلاس بعنوان ’استقبال ِماہ رمضان‘ سے خطاب کررہے تھے۔اجلاس کا اہتمام متحدہ مجلس علماء نے کیا تھا ۔ انہوں نے کہا کہ معاشرے کو صرف بیان بازیوں تک ہی محدود نہ رکھا جائے بلکہ اس سلسلے میں ایک جامع پروگرام ترتیب دینے کی ضرورت ہے جس سے ان تمام مسائل و مشکلات پر قابو پانا یقینی بن جائے۔ انہوں نے اتحاد ملت پر زور دیتے ہوئے کہا کہ رمضان المبارک کا مبارک مہینہ اتحاد بین المسلمین کیلئے ایک موزون مہینہ ہے اور یہ مبارک ایام معاشرہ سازی کیلئے بہترین موقع ہے۔