مزید خبریں

کشمیری پنڈتوں کا کھلے دل سے استقبال

علیحدہ بستیوں کا قیام ناقابل قبول: پی ڈی پی 

سرینگر// پی ڈی پی کے یوتھ لیڈر انجینئر نذیر احمد یتو نے کشمیری پنڈتوں کے لئے علیحدہ کالونیوں کا قیام سے متعلق گورنر کے بیان پر ناقابل قبول قرار دیا ۔ ایک بیان میں انہوں نے کہا کہہ یہ کشمیر کے تمدنی اخلاق کے خلاف ہے۔ اُنہوں نے کہا کہ کشمیری پنڈت وسح المژرب کشمیری سماج کا ناقابل تنیخ حصہ ہیں لہذا انکے لئے علیحدہ کالونیوں اور بستیوں کے قیام سے پنڈتوں اور مسلمانوں کے درمیان خلف پیدا ہوگی۔ انہوں نے کہا ہے کہ کشمیری مسلمان اپنے پنڈت بھایوں کا کھلے دل سے خیر مقدم کرینگے اور انہیں اپنے علاقوں میں اپنے گھروں کے اندر جگہ دینگے لیکن علیحدہ بستیوں کی مخالفت کی جائیگی۔
 
 

انتظامیہ اور عوام میں خلیج بڑھنے لگی

 افسران زیادہ سے زیادہ متحرک رہیں:سجاد لون

سرینگر//پیپلز کانفرنس کے چیر مین سجاد غنی لون نے سوموار کو ضلع کپوارہ میں پارٹی کے عوامی رابطہ پروگرام ’سلام و کلام‘کا با ضابطہ آغاز کیاجس دوران کا فی تعداد میں لوگوں نے اس پروگرام میں شر کت کی ۔انہوں نے ووٹروں کا شکریہ ادا کر تے ہوئے  پارٹی ورکروں اور حمایتیوں کا شکریہ ادا کیا۔نچھامہ ،ستکوجی ،بٹشنگی ،بہنی پورہ ،راجپورہ ،آہگام اور زچلڈارہ میں عوامی میٹنگوں سے خطاب کر تے ہوئے سجاد غنی لون نے کہا کہ افسران کے بنیادی سطح پر زیادہ سے زیا دہ عوامی رابطہ پروگراموں کی ضرورت ہے تاکہ عام لوگوں کے اندر عدم اپنائیت اور غیر اختیاری کی شکایات کو دور کیا جاسکے اور یہ عوامی رابطہ پروگرام حکو مت اور لوگوں کے درمیان ایک پل کا کام کر کے ریاست میں زمینی سطح پر ایک موثر انتظامیہ کی فراہمی میں ایک نمایاں کر دار ادا کر سکے ۔انہوں نے کہا کہ دور دراز علاقوں کے لوگوں کو مختلف اہم معاملات کی نسبت زبر دست مشکلات کا سامنا کر نا پڑ رہا ہے اور ان کی روداد سننے کو وہاں کوئی موجود نہیں اور ریاستی عوام اور گورنر انتظامیہ میں خلیج بڑھتی ہی جارہی ہے ۔لوگ بڑی تعداد میں سر کاری دفاتر میں جاتے ہیں اور اس بات کا مطالبہ کر تے ہیں کہ ان کی روداد سنی جائے ۔اب یہ سرکاری افسران کی ذمہ داری ہے کہ وہ ان لوگوں کی بات سنیں اور ان کے ساتھ تال میل کے ساتھ کا م کر کے انہیں درپیش مسائل کا ازالہ کریں ۔گورنر انتظامیہ کو ان کی تشویشوں سے آگہی حاصل کر کے ان کی شکایات کے ازالے کے لئے کام کر نا چاہئے ۔سجاد غنی لون نے مزید کہا کہ علاقے کی مقامی آبادی کی فلاح و بہبود کیلئے سرکار پر یہ بات لا زم آتی ہے کہ وہ عوامی پروجیکٹوں پر کام کی رفتار میں تیزی لائے اور دور دراز علاقوں میں سڑک رابطوں اور دیگر بنیادی ضروریات مثلاً رسل و رسائل اور پانی کی فراہمی ممکن بنائے۔انہوں نے کہا کہ بنگس روڑ ،ہندوارہ ہسپتال،اور دیگر پروجیکٹوں پر کام کافی سست رفتاری سے چل رہا ہے ۔علاقے میں پینے کے پانی کی زبر دست قلت ہے اور مقامی انتظامیہ لوگوں کو پینے کے پانی کی فراہمی میں ناکام رہی ہے اور سرکار کی ذمہ داری ہے کہ علاقے میں نامکمل ترقیاتی کاموں اور ترقیاتی پروجیکٹوں کی عمل آوری میں تیزی لائے ۔لاپتہ افراد کے ورثاء اور رشتہ داروں کو درپیش مشکلات پر تبصرہ کرتے ہوئے سجاد غنی لون نے کہا کہ لاپتہ افراد کا مسئلہ انتہا ئی سنگین ہے جس میں پولیس نے ایف آئی آر درج کر کے یہ کہاہے کہ یہ لوگ ہتھیاروں کی تربیت کیلئے سر حد کے اس پار چلے گئے ہیں تاہم پولیس کے دعویٰ کی حمایت میں کوئی بھی ثبوت و شواہد نہیں ہیں ۔انہوں نے کہا کہ اس ساری صورتحال کے بیچ ان کے کنبوں کو گوناگوں مشکلات کا سامنا کر نا پڑ رہا ہے اور ستم ظریفی کی بات یہ ہے کہ ان لاپتہ افراد کے لواحقین کو سفری دستاویزات جیسے بنیادی حقوق سے محروم رکھا جا رہا ہے ۔رشتہ داروں کے لاپتہ ہونے سے ہو ئے نقصان کا معاوضہ ادا کئے جانے کے بجائے انہیں نا کر دہ گناہوں کی سزا دی جا رہی ہے ۔
 
 

دوشیزہ فیروزپور نالہ میں غرق

CRPFاہلکاروںنے بچالیا

مشتاق الحسن 

ٹنگمرگ//نالہ فیروزپورہ ٹنگمرگ کے تیز بہائو میں بہنے ولای14 سالہ  دوشیزہ کو سی آر پی ایف کے اہلکاروں نے انتھک کوششوں سے بچا لیا ۔تفصیلات کے مطابق کنزر چھانہ پورہ میں خانہ بدوش 14 سالہ دوشیزہ نگینہ دختر محمد شریف ساکنہ نگروٹہ جموں کپڑے دھو رہی تھیکہ اس دوران  دوشیزہ کا پیر اچانک پھسل گیا اور وہ نالہ میں گر کر بہنے لگی اگرچہ دوشیزہ نے اپنے بچاو کی خاطر شور مچایا تاہم نالے میں پانی کا بہاو زیادہ ہونے  کی وجہ سے کسی کا دھیان اس  طرف نہ گیا ۔ اس دران نالہ فیروزپورہ کے نزدیک ہی سی آر پی ایف E کمپنی سے وابستہ اہلکاروں نے دوشیزہ کو پانی میں بہتا دیکھ کر نالے میں چھلانگ لگائی اور بہت کوششوں کے بعددوشیزہ کو بچا لیا ۔دوشیزہ کو پانی سے بچانے والا اہلکار بھی اپنا توازن برقرار نہ رکھ کر دوشیزہ کے ساتھ بہنے لگا تاہم دیگر اہلکاروں نے دونوں کو پانی سے باہر نکلا ۔ دوشیزہ کو فوری طور سب ڈسڑکٹ اسپتال ٹنگمرگ منتقل کیا گیا جہاں اس کی حالت بہتر بتائی جارہی ہے۔خانہ بدوش کنبے نے سی آر پی ایف کا دوشیزہ کو نالے سے بچانے کے لیے شکریہ ادا کیا ہے
 
 
 

مسئلہ کشمیر کو حل کیا جانا ضروری: انقلابی

سرینگر// قومی محاذِ آزادی کے سینئر رکُن اعظم انقلابی نے  13 جولائی 1931ء؁  کے شہدائے حق و حرّیت کو عقیدت اور احترام کے جذبات کے ساتھ یاد کرتے ہوئے اُولُوالعزم کشمیر ی قوم کے صبر و ثبات اور عزم وارادہ کو سلام پیش کیا ہے۔ اعظم انقلابی نے کہاکہ  کیا بھارت کے حکمران کشمیریوں کو یرغمال بنا کر ہی بھارت کو 5 کھرب ڈالر کی معیشت بنانے کا خواب پورا کر سکتے ہیں؟۔ کیا پنڈت نہرو کے وعد ہ رائے شماری کو پورا کئے بغیر ترکمانستان سے TAPI گیس آپ کے دروازہ تک پہنچ سکتی ہے؟۔ بر صغ￿یر کو تباہی اور بربادی سے بچانے کی واحد صورت یہ ہے کہ جنگ بندی لائن کے آرپار کے کشمیریوں کو انٹراکشمیر ڈائیلاگ کے ذریعے مسئلہ کشمیر کے پرُامن اور باعزت تصفیہ کے لیے نقشۂ راہ تیار کرنے کی اجازت دی جائے۔ ہم پھر اصرار کر رہے ہیں کہ جنگ بندی لائن کے آرپار بھارت اور پاکستان کی فوجوں کا انخلا ہو جائے، دیوار برلن (یعنی LOC)حرفِ غلط کی طرح مٹ جائے تاکہ متحدہ وادی کشمیر کے باسی اپنی پار لیمنٹ میں حق خود ارادیّت کے اصول کے تحت کشمیر کے سیاسی مستقبل کا تعیّن کریں۔ محمد یٰسین ملک، شبیر احمد شاہ، نعیم احمد خان، ڈاکٹر محمد قاسم، مسرت عالم، شاہد الاسلام، ایاز اکبر، غلام احمد گلزار سمیت سبھی سیاسی رہنماؤں کو جیلوں اور تھانوں سے رہا کیا جائے۔انہوں نے کہاکہ سیاست سے وابستہ کچھ لوگ سوچتے ہیں کہ کشمیری محبوس رہنماؤں کی نظر بندی کو طول بخشنے سے ہی انتخابات میں 2% سے زیادہ ووٹ حاصل ہو سکتے ہیں۔ کم ظرفی کی بھی کوئی حد ہوتی ہے۔
 
 
 
 

بڈگام میں قصوروار تاجروں سے 22000روپے کاجرمانہ وصول

بڈگام//ضلع بڈگام میں ناجائز منافع خوری،ذخیرہ اندوزی اورغیر معیار ی اشیائے خوردنی فروخت کرنے  کے مرتکب دکانداروں سے 22ہزار روپے کا جرمانہ وصول کیا گیا۔اے ڈی سی بڈگام نے قصوروارتاجروں اوردکانداروں کے خلاف فوڈ سیفٹی اینڈ سٹنڈارڈ س ایکٹ کے تحت یہ کارروائی عمل میںلائی۔ضلع انتظامیہ بڈگام نے کہا ہے کہ ضلع میں فوڈ سیفٹی اینڈ سٹنڈارڈ س ایکٹ کی خلاف ورزیوں میں ملوث تاجروں کے خلاف مہم جاری رہے گی۔
 
 

رینزوشاہ جموں کشمیربنک کے چیئرمین سے ملاقی

سرینگر// کشمیر سوسائٹی انٹرنیشنل کے چیئرمین خواجہ فاروق رینزو شاہ نے جموں و کشمیر بنک کے چیئرمین راجیش کمار چھبر سے ملاقات کے دوران  جموں وکشمیر بنک سے جڑے متعدد عوامی اور کاروباری و تجارتی برادری کے مسائل کو زیر بحث لایا۔چیئرمین نے رینزو شاہ کو یقین دہانی کرائی کہ ریاست کی مالی و معاشی صورتحال کو ہر حال میں بہتر بنانے کے لئے کوششیں جاری رہیںگی۔انہوں نے کہا ریاست کی تعمیر و اقتصادی ترقی کے لئے کئی اقدامات اٹھائے گئے ہیں اور کئی ابھی زیر غور ہیں۔انہوں نے رینزو شاہ سے کہا کہ آر ٹی آئی کا اطلاق جموں و کشمیر بنک پر مکمل و کلی طور پر ہے اوراسی دائرے کے تحت ہماری سرگرمیاں جاری ہیں۔
 
 
 

اوڑی پورہ گگڑیاں برقی رو سے محروم 

کھمبے 5سال قبل نصب کردیئے گئے،ترسیلی لائنوں اورٹرانسفارمر کا ہنوز انتظار

عشرت حسین بٹ

منڈی//اگرچہ حکومت کی طرف سے سوبھاگیہ اور دیگر سکیموں کے تحت ریاست کے ہر ایک گھر تک بجلی کی سپلائی فراہم کرنے کے دعوے جارہے ہیں تاہم سرحدی علاقے ساوجیاں کا اوڑی پورہ گگڑیاں گائوں اس جدید دور میں بھی برقی رو سے محروم ہے ۔منڈی صدر مقام سے لگ بھگ 20کلو میٹر دور ہندوپاک سرحد کے عین قریب واقع اس گائوں کے 20کنبوں نے آج تک بجلی نہیں دیکھی ۔حالانکہ پانچ سال قبل محکمہ بجلی کی طرف سے علاقے میں کھمبے نصب کئے گئے تھے تاہم آج تک ترسیلی لائنیں بچھانے کا انتظار کیاجارہاہے ۔مقامی لوگوں کے مطابق نہ ہی علاقے میں کوئی ٹرانسفارمر نصب کیاگیاہے اور نہ ہی ترسیلی لائنیں بچھائی گئی ہیں ۔ ان کاکہناہے کہ بجلی نہ ہونے کی وجہ سے انہیں سخت مشکلات کا سامنا ہے اور خاص طور پر طلباء کی تعلیم متاثرہے ۔مقامی لوگوں نے محکمہ بجلی کے خلاف احتجاجی مظاہرہ بھی کیا ۔انہوں نے بتایاکہ کچھ گھروں میں لوگوں نے اپنے طور پر ترسیلی لائنیں درختوں سے باندھ کر بجلی لگائی تھی لیکن یہ سلسلہ بھی پچھلے کچھ برسوں سے منقطع ہے اور انہیں نئے کھمبوں اور ترسیلی لائنوں کے ساتھ بجلی تو ملی نہیں لیکن پہلے سے دستیاب سہولت بھی چھین لی گئی ۔ اس دوران بشیر احمد ولد عبدالحمید نے بتایاکہ کھمبے نصب کرنے کے باوجود کئی برسوں سے ترسیلی لائنیں نہیں بچھائی گئیں اور انہیں بجلی کی اہم سہولت سے محروم رکھاجارہاہے ۔ان کاکہناتھاکہ وہ گھپ اندھیرے میں زندگی بسر کررہے ہیں اور حکام کو ٹس سے مس نہیں ۔ انہوں نے بتایاکہ اس سلسلے میں متعدد مرتبہ متعلقہ حکام سے بات بھی کی گئی لیکن محض یقین دہانیاں دی جارہی ہیں ۔ان کاکہناتھاکہ اگر سات دنوں کے اندر بجلی سپلائی فراہم نہ ہوئی تو وہ منڈی میں احتجاج کریں گے ۔ رابطہ کرنے پر محکمہ بجلی کے ایگزیکٹو انجینئر پونچھ مقبول نائیک نے یقین دلایاکہ جلد ہی علاقے میں بجلی فراہم کی جائے گی ۔انہوں نے بتایاکہ انہیں اس علاقے میں بجلی نہ ہونے کے بارے میں معلوم نہیں تھا البتہ وہ خود علاقے کا دورہ کرکے لوگوں کے اس مسئلے کو حل کریں گے۔
 
 
 
 

چیرمین ڈسٹرکٹ لیگل سروسز اتھارٹی اننت ناگ کا نونہ ون بیس کیمپ کا دورہ

اننت ناگ//پرنسپل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشنز جج اننت ناگ خلیل احمد چودھری نے نونہ ون بیس کیمپ کا دورہ کرکے امرناتھ یاتریوں کو دستیاب سہولیات کا جائزہ لیا ۔اُن کے ہمراہ انچارج یاترا آفیسر اور دیگر ضلع آفیسران بھی تھے۔چیرمین نے یاتریوں کے لئے پینے کے پانی ،طبی سہولیات اور دیگر خدمات کی دستیابی کاجائزہ لیا ۔انہوںنے بیس کیمپ میںقائم مختلف سٹالوں کا بھی معائنہ کیا۔اس دوران انہوںنے یاتریوں کے ساتھ بھی بات چیت کی۔انہوںنے سرکار کی طرف سے یاتریوں کو دستیاب سہولیات پر اطمینان کا اظہار کیا۔
 
 
 

جی پی فنڈ بلوں کی عدم ادائیگی سے اساتذہ کو مشکلات

سرینگر// جموں وکشمیر ٹیچر فورم نے کہا ہے کہ ٹریجریوں میں پڑی جی پی فنڈ بلوں کی ادائیگی میں انتظامیہ مکمل طور پر ناکام ہو چکی ہے جس کے سبب  اساتذہ انتہائی مشکلات کا سامنا کر رہے ہیں۔فورم کا کہنا ہے کہ انتظامیہ ان کے مسائل کو حل کرنے میں مکمل ناکام ہو چکی ہے۔ اُنہوں نے مطالبہ کیا کہ اُن کے ساتھ ملازم دوست پالیسی اپنائی جائے ۔ بتایا جاتا ہے 25مئی 2019سے ٹریجریوں میں یہ بلیں 
دھول چاٹ رہی ہیں جس سے اساتذہ متاثر ہو رہے ہیں۔جموں وکشمیر ٹیچر فورم کے صدر محمد اکبر خان نے حکام سے اپیل کی ہے کہ وہ اساتذہ کو متاثر ہونے سے بچائیں اور  ان کے جی پی فنڈ معاملات کو فوری طور پر حل کیا جائے ۔