مزید خبرں

دراس میں آگ لگنے سے ٹرک خاکستر 

کنگن//غلام بنی رینہ//دراس میں اچانک ایک ٹرک میں آگ لگ گئی جس کی وجہ سے گاڑی کو کافی نقصان پہنچا ۔ کرگل ضلع کے لکتھم اور بترا دراس کے مقام پر ہماچل کی ایک ٹرک میں اچانک آگ لگ گئی جس کی وجہ سے گاڑی مکمل طور پر خاکستر ہوگئی ۔ایس ڈی ایم دراس اصغر حسین نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ لکتھم اور بترا کے درمیان ہماچل کی ایک ٹرک زیر نمبر  PB13J-8412  کا ڈرائیور گاڑی میں درجہ حرارت کی کمی کی وجہ سے گاڑی کے انجن کو آگ سے گرم کررہا تھا کہ اس دوران اچانک آگ نے گاڑی کو اپنی لپیٹ میں لے لیا اور گاڑی کو کافی نقصان پہنچا۔ اگرچہ وہاں پر مزید ڈرائیوروں اور لوگوں نے آگ بجھانے کی کوشش کی لیکن آگ اتنی بھیانک تھی کہ وہ اس پر قابو پانے میں ناکام ہوگئے۔ ایس ڈی ایم کے مطابق آگ کی اس واردات میں گاڑی کو کافی نقصان پہنچا۔ پولیس نے کیس درج کرکے تحقیقات شروع کردی ہے۔
 
 

 پلوامہ سڑک حادثے میں شہری ہلاک | کنگن میںنامعلوم لوڈ کیرئیرکی ٹکر سے لڑکازخمی

کنگن//غلام نبی رینہ// ضلع پلوامہ میں جمعرات کی صبح ایک سڑک حادثے میں ایک شخص ہلاک جبکہ تین دیگر زخمی ہوگئے جبکہ کنگن میں نامعلوم لوڈ کیریئر کی ٹکر سے چودہ برس کا نوجوان زخمی ہوا ۔سرکاری ذرائع نے بتایا کہ ضلع پلوامہ کے نکاس علاقے میں جمعرات کی صبح ایک کار حادثے کا شکار ہوئی جس کے نتیجے میں کار میں سوار چار افراد زخمی ہوگئے ۔انہوں نے بتایا کی زخمیوں کو فوری طور ہسپتال منتقل کیا گیا جہاں ان میں سے ایک زخمی کو مردہ قرار دیا گیا۔دریں اثنا پولیس کی پارٹی جائے واردات پر پہنچ گئی ہے ۔ ادھراقبال آباد کنگن میں ایک نامعلوم لوڈ کیرئیر نے 14سالہ لڑکے کو ٹکر مار کر زخمی کردیا اور موقعہ سے فرار ہوگیا ۔پولیس نے فرار لوڈ کیرئیر کی تلاش شروع کردی ہے۔ اقبال آباد کنگن میں ایک نامعلوم لوڈ کیرئیر نے 14برس کے دانش احمد میر ولد فیاض احمد میر ساکن اقبال آباد کنگن کو ٹکر مار کر شدید زخمی کردیا ۔مذکورہ لڑکے کو فوری طور علاج کے لئے ٹراما ہسپتال کنگن پہنچایاگیا جہاں ڈاکٹروں نے اُسے مزید علاج کے لئے  سکمزصورہ ریفر کردیا۔ کنگن پولیس نے اس سلسلے میں کیس درج کرکے حادثے کی جگہ سے فرار ہوئے لوڈ کیرئیر کی تلاش شروع کردی ہے۔(مشمولات یواین آئی)
 
 
 

حکومت کے مفادات کا دفاع |  اعلیٰ سطحی ثالثی سیل تشکیل دیا گیا

جموں// سید امجد شاہ//محکمہ عمومی انتظامیہ نے جموں و کشمیر حکومت کے مفاد کے دفاع میں اقدامات کرتے ہوئے ثالثی کے معاملات کو مرکزی حیثیت سے نمٹنے کے لئے محکمہ قانون ، انصاف اور پارلیمانی امور میں ایک 'ثالثی سیل' تشکیل دیا۔خصوصی سکریٹری ، محکمہ قانون ، انصاف اور پارلیمانی امور کی سربراہی میں ، بطور چیئرمین ، کمیٹی میں سات دیگر ممبران ہوں گے جن میں ایڈیشنل سیکرٹری / ڈپٹی سیکرٹری محکمہ قانون ، انصاف اور پارلیمانی امور ، متعلقہ انتظامی محکمہ کے نمائندے ، چیف انجینئر متعلقہ ، تکنیکی متعلقہ محکمہ کے ذریعہ نامزد کردہ معاہدے پر عمل درآمد میں ملوث افسر ، ایل ڈی ایڈووکیٹ جنرل کے دفتر کے نمائندے ، جموں و کشمیر (اے اے جی / ڈپٹی اے اے جی) جو ثالثی کے معاملات سے نمٹنے میں جانکاری اور تجربہ رکھتے ہیں اور قانون ، انصاف اور پارلیمانی امور کے نمائندے بطور ممبر ہونگے۔حکومت کے مفادات کا دفاع کرنے کے لئے یہ محکمہ جموں و کشمیر حکومت کے ذریعہ عمل درآمد کرنے والے ثالثی ، تمام معاہدوں ،  مفاہمت کی یادداشت (ایم او یوز) کی جانچ اور نگرانی کرے گا۔وہ ہر ثالثی ٹریبونل میں ثالثی کی کارروائیوں کی بھی نگرانی کریں گے ، خاص طور پر حکومت کی درخواستوں کو بروقت دائر کرنے کو یقینی بنائیں گے اور اس کے لئے اور اس کے خلاف دستیاب ایوارڈ اور اس کے علاج کا بھی تجزیہ کریگا۔یہ سیل معیاری فیس ڈھانچے کے ساتھ ثالثین کے پینل کی سفارش کرے گا اور ایل ڈی کے ذریعہ نامزد کردہ وکیلوں کے پینل کے ساتھ قریبی رابطہ قائم رکھے گا۔ یہ سیل حکومت کے مفاد کے دفاع کے لئے اقدامات بھی کرے گا۔
 
 

معذورافراد کے حقوق | ماہرین کی 8رکنی کمیٹی سرنوتشکیل

سرینگر//بلال فرقانی// حکومت نے جموں کشمیر میں معذور افراد کے حقوق سے متعلق ماہرین کی 8رکنی کمیٹی کو سر نو تشکیل دیا،جس کی کمان محکمہ انتظامی عمومی کے انتظامی سیکریٹری کو سونپی گئی۔ انتظامی عمومی محکمہ کے کمشنر سیکریٹری منوج کمار دیویدی کی جانب سے بدھ کو ایک حکم نامہ زیر نمبر1130-JK(GAD)of 2020محررہ17دسمبر 2020کو جاری کیا گیا جس میں معذور افراد کے حقوق قانون مجریہ2016 سے متعلق ماہرین کی کمیٹی کو سر نو تشکیل دیا گیا۔حکم نامہ میں کہا گیا’’سرکاری احکامات نمبر 1078-JK(GAD) of 2020 محررہ27نومبر2020  میں جزوی ترمیم کرکے اس بات کا حکم دیا جاتا ہے کہ معذور افراد کے حقوق کی دفعہ33کے تحت ماہرین کی کمیٹی کو تشکیل دیا گیا‘‘۔مذکورہ کمیٹی کی کمان انتظامی عمومی محکمہ کے انتظامی سیکریٹری کو سپرد کی گئی ہے اور وہ اس کمیٹی کے چیئرمین ہوںگے۔ 8 رکنی کمیٹی میں قبائلی امور محکمہ کے انتظامی سیکریٹری یا نمائند ہ ،جو ایڈیشنل سیکریٹری کے عہدے سے کم نہ ہو، ممبر ہوںگے،جبکہ محکمہ قانون،انصاف و پارلیمانی امور کے انتظامی سیکریٹری، محکمہ سماجی بہبود کے نمائندے جن کا عہدہ ایڈیشنل سیکریٹری سے کم نہ ہو،محکمہ صحت و طبی تعلیم کا نمائندہ،جس کا عہدہ ایڈیشنل سیکریٹری سے کم نہ ہو اورمحکمہ خزانہ کا نمائندہ جس کارتبہ ایڈیشنل سیکریٹری سے کم نہ ہو، ماہرین کی کمیٹی میں ممبر ہوںگے۔ان کے علاوہ غیر سرکاری انجمن،جو معذور افراد کیلئے کام کرتی ہو،اور اس کی نشاندہی محکمہ سماجی بہبود کرے، کے نمائندہ اور محکمہ انتظامی عمومی کی جانب سے نامزد2ملازمین جو معذور ہو ، ماہر ین کی اس کمیٹی کے ممبران ہوںگے۔ حکم نامہ میں کہا گیا ہے کہ اس کمیٹی کے شرائط و ضوابط وہی رہیں گے جو پہلی کمیٹی کیلئے تشکیل دئیے گئے تھے۔
 
 

چھاپڑی فروشوں کی سہولیت | ضلع سطحی کمیٹیوں کا قیام،ضلع کمشنر اںسربراہ نامزد

سرینگر//بلال فرقانی// سرکار نے چھاپڑی فروشوں کی سہولت کیلئے ضلعی سطح کی کمیٹیاں تشکیل دینے کا اعلان کیا،جبکہ ضلع مجسٹریٹوں کو اِن کا چیئرمین نامزد کیا گیا۔ عمومی انتظامی محکمہ کے کمشنر سیکریٹری منوج کمار دیویدی کی جانب سے بدھ کو جاری حکم نامہ زیر نمبر 1127-JK(GAD) of 2020محررہ17دسمبر2020 میںان کمیٹیوں کے قیام کو منظوری دی گئی۔ حکم نامہ میں کہا گیا’’ چھاپڑی فروشوں کو مرکزی زیر انتظام والے علاقے جموں کشمیر میں اپنا کاروبار چلانے کیلئے غیر قانونی طور پر ہراساں کرنے سے دور رکھنے کیلئے اور بہتر ماحول کی فراہمی کو یقینی بنانے کیلئے ضلعی سطح کمیٹیوں کو تشکیل دینے کو منظوری دی‘‘۔ ان کمیٹیوں کی کمان ضلع مجسٹریٹوں کو سونپی گئی ہے جو ان کمیٹیوں کے چیئرمین ہونگے،جبکہ ضلع سپر انٹنڈنٹ آف پولیس، ضلع میں ٹریفک پولیس انچارج، میونسپل کارپوریشن،کونسلوں اور کمیٹیوں کے جوائنٹ کمشنر ، چیف ایگزیکٹو افسراں اور انفورسمنٹ افسراں اس کے ممبران ہوںگے۔ حکم نامہ میں مزید کہا گیا ہے کہ کمیٹیاںاس بات کو یقینی بنائیں گی کہ چھاپڑی فروشوں کو سیول سوسائٹی ، پولیس ، ٹریفک پولیس اور دیگر قانون نافذ کرنے والے اداروں کی جانب سے ہر ضلع میں مختص کئے گئے مقامات یا جن مقامات کی نشاندہی کی گئی ہو، سے بلاجواز ہراساں یا ہٹایا نہ جائے اور اس سلسلے میں ہر ضلع  اس ضمن میں اصلاحی اقدامات کرے گا۔
 
 
 
 
 
 

ہماری جائز مانگوں پر ہمدردانہ غور کیا جائے | نیشنل ہیلتھ مشن ایمپلائز ایسوسی کا مطالبہ

سرینگر //نیشنل ہیلتھ مشن ایمپلائز ایسوسی ایشن نے تنخواہوں میں اضافہ اور این ایچ ایم، آر این ٹی سی پی اور جے کے ایس اے سی ایس کے تحت کام کرنے والے ملازمین کی نوکریوں کا تحفظ فراہم کرنے کی مانگ کی ہے۔ ایسوسی ایشن کے ترجمان عبدالرئوف نے ایک بیان میں کہا ہے کہ نیشنل ہیلتھ مشن، آر این ٹی پی اور ایڈز کنٹرو سوسائٹی میں کام کرنے والے ملازمین نے اپنی جائز مانگوں ، نوکری کی مستقلی، تنخواہوں میں اضافہ اور دیگر مراعات فراہم کرنے کیلئے کئی بار حکمرانوں کے دروازے کھٹکھٹائے اور مجبوری میں سڑکوں پر آکر احتجاج بھی کیا ۔ عبدالروف نے بتایا ’’ احتجاج اور کام چھوڑ ہڑتال کے بعد اگر چہ حکومت نے ایک اعلیٰ سطحی کمیٹی تشکیل دی اور ملازمین کی جائز مانگوں پر ہمدردانہ غور کرنے کی یقین دہانی کرائی تھی لیکن اس کے باوجود اب تک متذکرہ اسکیموں کے تحت کام کرنے والے ملازمین کی جائز مانگوں کو پورا نہیں کیا گیا‘‘۔ انہوں نے کہا کہ پرنسپل سیکریٹری نے این ایچ ایم ملازمین کی مستقلی اور دیگر مانگوں پر ہمدردانہ غور کرانے کی یقین دہانی کرائی لیکن اعلیٰ سطح کمیٹی کی اب تک ایک بھی میٹنگ منعقد نہیں کی گئی۔ ترجمان نے لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا سے اپیل کی کہ این ایچ ایم ، آر این ٹی سی پی اور دیگر ملازمین کے مشکلات کا ازخود جائزہ لیں اور اعلیٰ سطحی کمیٹی کو ملازمین کے مسائل حل کرنے کی اجازت دیں۔این ایچ ایم ایسوسی ایشن کے صدر منیر اندرانی نے کہا کہ ایسوسی ایشن کے 8000ملازمین نے کسی بھی صورتحال میں کبھی کام کرنے سے انکار نہیں کیا ہے ، چاہے وہ سیلاب، نامسائد حالات یا موجودہ عالمی وبا ہو۔انہوں نے لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا سے اپیل کی کہ ملازمین کی مانگوں کو پورا کرنے کیلئے سنجیدہ اقدامات کریں۔
 

بانڈ تھیٹر واتھورہ کے سربراہ کی اہلیہ فوت

سرینگر//وادی کے کئی اداکاروںاور ادبی تنظیموں کے سربراہوں نے نیشنل بانڈ تھیٹر واتھورہ چاڈورہ کے سربراہ غلام محی الدین عاجز کی اہلیہ کے انتقال پر زبردست رنج وغم کا اظہار کیا۔ دریں اثناء یمبر زل یو تھ کلب سرینگر نے اداکارہ شاہ جہاں بھگت کی والدہ کی وفات پر دُکھ کا اظہار کیا۔ کلب کے ایک تعزیتی اجلاس میں کئی اداکاروں نے شرکت کی۔ اس موقع پرغمزدہ خاندان کے ساتھ تعزیت کا اظہار کرتے ہوئے مرحومہ کی مغفرت کیلئے دعا کی گئی ۔
 
 

ڈاکٹر فاروق عبداللہ کا صدرالدین مجاہد کو برسی پر خراج عقیدت

سرینگر// نیشنل کانفرنس کے صدر ڈاکٹر فاروق عبداللہ نے مرحوم شیخ محمد عبداللہ کے دست راست مرحوم صدر الدین مجاہد کو انکی27ویں برسی پر خراج عقیدت ادا کرتے ہوئے انہیںمعروف اہل قلم،نامور سیاسی لیڈر اور حق و صداقت کا علمبردار قرار دیا۔انہوں نے کہا کہ موصوف نے کشمیری عوام کی اجتماعی خواہشات کی تکمیل میں قید و بند کی صعوبتیں خندہ پیشانی سے برداشت کیں۔اس دوران نیشنل کانفرنس کے نائب صدر عمر عبداللہ نے بھی اُن کے جذبہ ایثار اور قربانی کو یاد کرتے ہوئے انہیں خراج عقیدت پیش کیا۔پارٹی کے جنرل سیکریٹری علی محمد ساگر،معاون جنرل سیکریٹری ڈاکٹر مصطفی کمال،صوبائی صدر ناصر اسلم وانی نے بھی مرحوم کو خراج عقیدت ادا کیا۔اس دوران ڈاکٹر فاروق عبداللہ اور عمر عبداللہ نے معروف قانون دان حاجی ایڈوکیٹ میر عبدالغنی ساکن بجبہاڑہ کو بھی انکی برسی پر خراج عقیدت ادا کیا۔
 
 

ناگپورایجنڈا عملدرآمد کیلئے اپنی پارٹی وجودمیں لائی گئی:نیشنل کانفرنس

سرینگر// نیشنل کانفرنس نے اپنی پارٹی سربراہ کے شیرکشمیرپارک میں دیئے گئے بیان کو گمراہ کن اوت صداقت سے بعید قراردیتے ہوئے کہا کہ نیشنل کانفرنس کے بارے میں ایسا بیان دینااس بات کی عکاسی کرتا ہے کہ اس کو مودی سرکار نے درپردہ ناگپور ایجنڈاپورا کرنے کیلئے نامزد کیا ہے۔ایک بیان میں پارٹی ترجمان نے کہا کہ عوام کو معلوم ہے کہ اس جماعت کے سربراہ اور دیگر حواریوں نے 1983 میں کشمیر میں عوامی سرکار گرانے میں 12 ممبران اسمبلی کو فی کس 14 لاکھ روپے ان کا ضمیر خریدنے کے لئے دیئے ۔ ترجمان نے اپنی پارٹی کے سربراہ سے پوچھا کہ وہ تعمیرات عامہ کے وزیر اور شہر خاص کے ممبراسمبلی تھے ، اس نے تعمیر و ترقی کے پروجیکٹوں کو کہاں منتقل کیا تھا اور اس سرینگر شہر میں اگر 10 تعمیری کام کئے وہ ایک کام کا ذکر کرے۔ ترجمان نے الزام لگایاکہ انہوں نے کشمیر کی انفرادیت اور وحدت کو نیلام کرنے میں کوئی کسر باقی نہیں رکھی۔ اس جماعت میں ایسے بھی لیڈر ہیں جو چار جماعتوں سے منسلک رہ کر کشمیر کو ہر وقت نیلام کرنے پر تلے رہے۔ ترجمان نے کہا کہ سیلف رول بنانے اور بی جے پی کو ریاست میں لانے اور اُن کو اقتدار کا حصہ بنانے میں بھی اپنی پارٹی کے سربراہ نے اہم رول ادا کیا اور ناگپور ایجنڈا کے نفوذ میں بھی اپنی پارٹی  کے سربراہ نے اہم رول ادا کیا۔