مزید خبرں

 نوشہرہ میں 41ویں روزبھی ہڑتال 

راجوری //ضلع درجہ کی مانگ پر نوشہرہ میں ہڑتال 41ویں روزبھی جاری رہی ۔اگرچہ حکومت نے نوشہرہ  میںاے ڈی سی تعینات کیاہے لیکن اس پرلوگ مطمئن نہیں ہیں۔منگل کے روز نوشہرہ کے لوگوںنے حکومت کے خلاف نعرے بازی کرتے ہوئے نوشہرہ کوعلیحدہ ضلع کی مانگ کی ۔اس دوران  تمام تر تجارتی سرگرمیاں ٹھپ رہیں ۔ اس دوران لوگوں نے کہاکہ حکومت کونوشہرہ کوضلع کادرجہ دیناچاہیئے یا اے ڈی ڈی سی ،اے آرٹی اورپولیس لائن کے قیام کوحالیہ اے ڈی سی اسامی کے ہمراہ منظورکرنی چاہیئے۔مظاہرین کاکہناہے کہ حکومت نے ان سے معاملہ حل کرنے کا وعدہ کیاتھااور اگر یقین دہانی پر عمل نہ ہواتو وہ احتجاج میں مزید شدت لائیںگے ۔منگل کے روزپرامن بندرہا ۔
 
 
 
 
 
 

مسلم اقلیت فرقہ پرستوں کے نشانے پر: پیپلز مومنٹ

حکومت سے شرپسندعناصر پرنکیل کسنے کیلئے اقدامات کامطالبہ

راجوری//جموں کشمیر پیپلز مومنٹ نے کہاہے کہ صوبہ جموں میں فرقہ پرست عناصر ایک منصوبہ بند سازش کے ذریعے مسلم اقلیتوں کو نشانہ بنا رہے ہیں جس کا مقصد انہیں اپنے گھر بار چھوڑنے پر مجبور کرنا ہے ۔یہاں جاری ایک پریس بیان میں کل جماعتی حریت کانفرنس کے سینئر رہنما اور پیپلز مومنٹ کے چیر مین میر شاہد سلیم نے پارٹی کارکنان کے ایک اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ کچھ فرقہ پرست طاقتیں جنہیںکچھ سیاسی شخصیات اور جماعتوں کی حمایت اور سرپرستی حاصل ہے جموں میں بڑے پیمانے پر فرقہ ورانہ کشیدگی پھیلا رہی ہیں جنہیں وقت رہتے روکا نہ گیا تو اس کے نتائج ایک بہت بڑے فساد کی صورت میں رونما ہو سکتے ہیں۔ میر شاہد سلیم نے کہا موجودہ مخلوط سرکار کے معرضِ وجود میں آنے کے بعد سے مسلم اقلیتوں کو طرح طرح سے تختہء مشق بنایا جا رہا ہے ۔کہیں انہیں جنگلاتی اراضی کو خالی کرنے کے نام سے اپنے آشیانوں سے کھدیڑا جا رہا ہے تو کہیںگائے کی توہین  سے متعلق بے بنیادالزامات لگاکرمارا پیٹا جاتا ہے ۔انہوںنے کہا جنوری کے مہینے میں ضلع کھٹوعہ کے ہیرا نگر کے علاقے میںآصفہ کی آبروریزی اور قتل کرنے کے انسانیت سوز واقعے کے پیچھے بھی کچھ اسی طرح کے محرکات کار فرما تھے جس کا اعتراف پولیس کی تحویل میں موجود ملزمان پہلے ہی کر چکے ہیں انہوں نے کہا ریاستی پولیس کے تفتیشی ادارے کرائم برانچ کی جانب سے جموں کشمیر ہائی کورٹ کو پیش رپورٹ میں یہ بات واضح طور سے بتائی گئی ہے کہ معصوم آصفہ کے ریپ اور قتل کا مقصد علاقے میں آباد قبائلی آبادی کے دلوں میں خوف و دہشت کا ماحول پیدا کر کے انہیں وہاں سے بھاگنے پر مجبور کرنا تھا۔جس سے یہ واضح ہو جاتا فرقہ پرست عناصر اپنے ناپاک منصوبوں کی انجام دہی کے لئے کس حد تک جا سکتے ہیں ۔ انہوں نے کہا اس انسانیت سوز واقعے کو بھی ان فرقہ پرستوں نے قوم پرستی کا لبادہ چڑھا لیا ۔جب ہندو ایکتا منچ کے بینر تلے ملزمان کے حق میں بڑی بڑی ریلیاں نکالی گئیں ۔حریت رہنما نے کہا بھارت کی طرح اب جموں کشمیر میں بھی مسلم دشمن قوتیں قوم پرستی کے نام پر جرائم کا ارتکاب کرتی ہیں اور اس پر طرہ یہ کہ سیاست دان اور پولیس انتظامیہ کھلے عام ان مجرموں کی حمایت کرتی ہیں ۔ حریت رہنما نے خبردار کیا کہ اگر ایسے عناصر کی اسی طرح پشت پناہی اور حوصلہ افزائی کی جاتی رہی تو معاشرہ لاقانونیت اور افراتفری کا شکار ہو جائے گا۔
 
 
 

تھنہ منڈی مویشی سمگلنگ کی کوششیں ناکام

طارق شال/ / پولیس نے تھنہ منڈی۔ بفلیاز سڑک پر ناکے لگا کر غیر قانونی طورسمگلنگ کیے جارہے 12مویشی بازیاب کرالئے ہیں۔تفصیلات کے مطابق سب ڈویژنل پولیس آفیسر تھنہ منڈی افتخار احمد چوہدری کی ہدایت پر ایس ایچ او تھنہ منڈی انسپکٹر نذیر احمد ڈار نے مصدقہ اطلاع ملنے پر خضر، پل کے پاس ناکہ لگا یا۔ تلاشی مہم کے دوران ٹا ٹا موبائل زیر نمبری JK11B/8588 سے 09 مویشی برامد ہوئے۔ پولیس نے ڈرائیور محمد امجد ولد حبیب اللہ سکنہ لاح اور، محمد اقبال ولد، علی محمد سکنہ ہسپلوٹ کو حراست میں لیکر ایک مقدمہ زہر نمبری 25/2018زیر دفعات 188 آر پی سی اور، 3PCAct اسی دوران پولیس کی دوسری ٹیم جسکی سربراہی اے ایس آئی محمد الطاف کر رہے تھے نے تھنہ منڈی سے گیارہ کلو میٹر کی دوری پر واقع ڈیرہ گلی کی قریب دوسری ٹا ٹا موبائیل زیر نمبری JK11B/4669 کو اپنی تحویل میں لیا جسکے میں سے 03 مویشی برآمد ہوئے جو راجوری سے بفلیاز کی طرف لیجائے جا رہے تھے۔ اس دوران ڈرائیور موقع سے فرار ہوگیا جبکہ ایک شخص الطاف حسین ولد محمد اقبال سکنہ کھبلان کے طورپر ہوئی ہے پولیس نے دوسرا مقدمہ زیر نمبری 26/2018 زیر دفعات 188 آر پی سی۔ اور 3PCAct درج کیا گیا ہے۔یہ مویشی ڈسٹرکٹ مجسٹریٹ راجوری کی اجازت کے بغیر راجوری سے بفلیاز کی طرف غیر قانونی طور پر سمگل کر رہے تھے۔
 
 
 
 

مینڈھرکے وفدکی ڈی سی وایکسن پی ڈی ڈی سے ملاقات

جا وید اقبال
 
مینڈھر؍؍بالاکوٹ سر حدی علا قہ سے تعلق رکھنے والے ایک وفدنے ضلع تر قیا تی کمشنر پونچھ اور ایکسن محکمہ بجلی سے ملا قات کی۔اس دوران وفدمیں محمد کفیل، پی ڈی پی لیڈر ایڈوکیٹ محمد معروف خان ودیگرافرادشامل تھے ۔اس موقعہ پروفدنے کہابالاکوٹ کے اندر حکومت نے ایک رسیونگ سینٹر دیا ہے  جس کو افسر ان تا ر بندی کے باہر دھر اٹی علا قہ میں بنوا رہے ہیں ۔ ان کا کہنا تھا کہ بالاکوٹ کا زیا دہ تر علا قہ تا ر بندی کے اندر واقع ہے اس لیے رسیو نگ سینٹر تا ر بندی کے اند ر بنا یا جا ئے ،۔ ان کا مز یدکہنا تھا کہ جہا ں پر متعلقہ محکمہ کے افسر ان رسیو نگ سینٹر بنا نے کی تجو یز بنو ا رہے ہیں وہ علاقہ فا ئرنگ کی زد میں ہے اور وہا ں پر رسیو نگ سینٹر کا چلنا نہا ئت ہی مشکل ہے ۔ ان کا کہنا تھا کہ تا ر بندی کے اندر ادھا درجن گاو ں مو جود ہیں ،۔ جن کو کئی قسم کی مشکلا ت کا سامنا کر نا پڑ رہا ہے ۔  انہو ں نے کہا کہ رسیو نگ سینٹر کیلئے فو ری طور پر تا ر بندی کے اندر کوئی جگہ تجو یز کی جائے تا کہ لو گو ں کو بجلی کیلئے کوئی پریشانی نہ ہو ۔ کیو نکہ علا قہ کے اندر بجلی کا نا م و نشان نہیں ہے اور کئی گھنٹو ں تک کٹو تی  ہے ۔ اس موقع پرایڈوکیٹ محمد معروف خان اور بالاکوٹ سے آئے ہوئے وفد کو ضلع تر قیا تی کمشنر پونچھ نے یقین دہا نی کی کہ ایسی کوئی بات نہیں ہے میں اس ضمن میں ہائی کمانڈ سے بات کر و ں گا اور اپ لو گو ں کو پر یشان نہیں ہونے دو ں گا ۔ْ جبکہ متعلقہ محکمہ کے ایکسن نے بھی لو گو ں کی تمام باتیں سنے کے بعد  ان کو یقین دلا یا کہ اب کی جا ئز مطا لبا ت پر غو ر کیا جائیگا۔ وفد میں  محمد مشتا ق خان، محمد خلیل خان، محمد رشید ،رضا احمد، شوکت علی، انور احمد، محمد عز ید کے علا قہ ئی دیگر افراد مو جود تھے۔
 
 

مخالف جماعتیں پی ڈی پی سے حسدکرتی ہیں:پسوال

جا وید اقبال
 
مینڈھر//الحاج ماسٹر محمد دین پسوال پی ڈی پی نائب صدرضلع پونچھ نے کہا کہ پی ڈی پی ریاست جموں و کشمیر کی عوامی مضبوط و مقبول ترین تحریکی تنظیم ہے۔جس نے ریاست میںبڑے بڑے پروجیکٹ،سڑکیں،بجلی پانی و دیگر فلاحی تعمیر و ترقی کے تیز رفتاری سے کام ہو رہے ہیں اور موجودہ سرکار نے اضلاع کے درجہ کو بڑھانے کیلئے کمیشن مقرر کر دیا ہے۔ جن تحصیلوں کے ضلع بننے کے لوازمات پورے ہونگے ان کو فوراً ضلع کا درجہ دیا جائیگا یہ موجودہ سرکار کی ترجیحی پالیسیوں میں شامل ہے۔مخالف پارٹیاں موجودہ سرکار کی کامیاب پالیسیوں کو دیکھ کر جلتی ہیں اور برداشت نہیں کرتی۔اضلاع کی درجہ بندی کو لیکر خطہ پیر پنجال میں ہڑتالوں کے سلسلے جاری ہیں تا کہ بدامنی پیدا ہو اور موجودہ سرکار بدنام ہو۔ انہو ں نے کہا کہ میں ریا ستی وزیر اعلی محبو بہ مفتی سے اپیل کر تا ہو ں کہ مینڈھر کو تر جیحی بنیا دو ں پر ضلع کا درجہ دیا جائے کیو نکہ ہما را حق بنتا ہے ، اور آبا دی کے لحاظ سے سب ڈویژ ن مینڈھر سب سے بڑی ڈویژ ن ہے ۔ اور ضلع  پونچھ کے دوری کے اعتبار سے مینڈھر کو تر جیح دیا جا نا ضر وری ہے۔
 
 

کانگریس لیڈران مینڈھر کاجدوجہدکیلئے 

کمیٹی تشکیل دینے پرزور

جا وید اقبال
 
مینڈھر//گز شتہ روز کا نگر س یو نٹ مینڈھر کی جانب سے ضلع کی مانگ کو لیکر احتجاج میں شامل تمام لو گو ں کا آل انڈیا کا نگر س کمیٹی کی ممبر پر وین سر ور خان،حا جی امتیا ز خان اور راجہ محمد وسیم خان نے ان تما م لو گو ں کا شکر یہ ادا کیا جنہو ں نے مینڈھر کے کو نہ کو نہ سے آکر احتجاج کو کا میاب بنا نے میں اپنا اہم رول ادا کیا ۔ ان کا کہنا تھا کہ ہم ان لو گو ں کا شکر یہ ادا کر تے ہیں جنہو ں نے احتجاج میں حصہ لیکر مین چوک مینڈھر کو ایک گھنٹے تک گا ڑیو ں کی آمد رفت کیلئے بند کر کے احتجاج کیا ۔ انہو ں نے کہا کہ آئندہ احتجاج کیلئے ہم ایک میٹنگ طلب کر کے لا ئحہ عمل بنائیں گے اور ایک کمیٹی بھی تشکیل دی جائے تا کہ ضلع کی مانگ کو لیکر احتجاج جا ری رکھا جائے ۔ ان کا کہنا تھا کہ مینڈھر کے لو گو ں کا حق بنتا ہے کہ ضلع کیلئے اپنی مانگ کو لیکر سرکا ر کے سامنے احتجاج کیا جائے تا کہ سر کار ان علا قو ں کی جانب دھیان دے جن علا قو ں سرکار نے نظر انداز کیا ہوا ہے ۔ انہو ں نے کہا کہ کئی برس قبل مینڈھر کو ضلع کا درجہ ملنا چاہیئے تھا لیکن سرکار نے علا قہ کو نظر انداز کیا ہوا ہے، جس کیلے ہم احتجاج کر نے کا لائحہ عمل بنا رہے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ اگر سرکار نے ایک ہفتہ کے اندر کوئی تجوئز نہیں سوچی تو نئی بنائے گئی کمیٹی جو فیصلہ کر ئے گی اس پر سب کو عمل کر نا ہو گا۔
 
 

بی ایس ایف نے کھلاڑیوں کوبھارت درشن پرروانہ کیا

حسین محتشم 
 
پونچھ // بی ایس ایف پچاس بٹالین کھنیتر کی جانب سے 27کھلاڑیوں، 4کوچوں اور بی ایس ایف کے جوانوں کو سیوک ایکشن پلان کے تحت بھارت درشن پر روانہ کیا گیا۔ اس دوران ڈپٹی کمانڈر پچاس بٹالین بی ایس ایف اجے کمار اوجھا نے ہری جھنڈی دکھانی کرانہیں دہلی اور آگرہ کے دورے پر روانہ کیا. واضح رہے کہ بی  ایس ایف کی جانب سے پونچھ میں فٹ بال ٹورنامنٹ کا اہتمام کیا گیاتھا جس میں فائنل میچ میں پہنچی دونوں ٹیموں کو اس سیر پر روانہ کیا گیاتاکہ یہ نوجوان اپنے ملک کے سب سے خوبصورت مقامات کو دیکھ سکیں۔ اس دوران اوجھا نے کھلاڑیوں کو ہدایت دی کہ وہ سفر کے دوران کھانے پینے کی احتیاط کے ساتھ ساتھ ٹریفک قوانین کی مکمل پابندی کریں اور اگر سفر کے دوران کسی طرح کی پریشانی ہو تو اپنے کوچ کو یا پھر بی ایس ایف اہلکاروں کو بتائیں ۔انہوں نے کہا کہ سفر کے دوران ہو نے والے تجربات انھیں آنے والی زندگی میں کا م آئیں گے۔
 
 

 انصاف مؤمنٹ کا حکومت کے خلاف احتجاج

حسین محتشم 
 
پونچھ//جموں و کشمیر انصاف مؤمنٹ نے پریڈ گراؤند پارک پونچھ میں احتجاجی مظاہرہ کیا گیا جس کی قیادت جاوید اقبال ریشی نے کی ۔مظاہرین میں مؤمنٹ کے نائب صدر عبدالرشیدشاہپوری، خزانچی سہیم جعفر، آرگنائزر سید نثار بخاری، ضلع سیکریٹری اعجاز احمد کٹاریہ، سلیم کھاریش، آزاد چوہان کے علاوہ بھاری تعداد میں لوگوں نے شرکت کی اس موقع پر مظاہرین نے ریاستی حکومت اور محکمہ دیہی ترقیات و پنچائتی راج کے خلاف نعرے بازی کی۔ مؤمنٹ کے صدر جاوید اقبال ریشی نے ذرائع ابلاغ سے بات کرتے ہوئے کہا کہ متعلقہ محکمہ کے سٹوروں میں سامان کی عدم ہے جس پر محکمہ نے لوگوں کو خود سامان خریدنے پر کہا اور اب سال کے آخر میں لوگوں سے جی ایس ٹی کے بل مانگے جا رہے ہیں جو ناممکن ہیں کہ مزدور محکمہ ملازمین کی کمیشن، جی ایس ٹی ادا کرکے خسارے میں جا رہے ہیں، انہوں نے 13-14FC  میں قانون سازیہ کی مداخلت کو سستی سیاست سے تعبیر کرتے ہوئے ریشی نے کہا کہ ایس بی ایم اور ان پنچائت کے فنڈز میں بھی سیاسی مداخلت قابل افسوس ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ 2015 کے آئی اے وائی کے مکانوں کی ایک قسط واگزار ہوئی ہے جبکہ بقیہ پیسے واگزار نہیں ہوئے ہیں جس کی وجہ ادھار اور سود پر لئے گئے پیسے ادا کرنے کیلئے انکو اب زمینیں بیچنی پڑتی ہیں۔ پی ایم اے وائی لسٹوں میں گھوٹالہ بازی جاری ہے جس کو روکا جائے اس موقع پر مظاہرین نے سرکار کو انتباہ دیا کہ اگر عوام مخالف فیصلے واپس نہیں کئے گئے تو احتجاج مزید بڑھایا جائے گا۔ بعد میں مؤمنٹ کی جانب سے ضلع ترقیاتی کمشنر پونچھ کو مانگوں پر مشتمل ایک مسودہ پیش کیا گیا جس پر موصوف نے کاروائی کا یقین دلایا۔
 
 

بلنوئی میں طبی کیمپ کاانعقاد

پونچھ//پیرپنچال یوتھ پارلیمنٹ کی جانب سے تحصیل منڈی کے بلنوئی گائوں میں ایک طبی کیمپ کاانعقاد کیا۔اس دوران بلاک میڈیکل افسرڈاکٹرمشتاق حسین کاتعاون بھی پیرپنچال یوتھ پارلیمنٹ کوحاصل تھا۔اس دوران بھاری تعدادمیں گائوں کے لوگوں نے طبی جانچ کروائی ۔پیرپنچال یوتھ پارلیمنٹ کے ضلع کوآرڈی نیٹر رضاگنائی نے کہاکہ کیمپ کامقصد لوگوں کوصفائی ،احتیاط اور بیماریوں کوپنپنے سے روکنے کیلئے تدابیرکی جانکاری دیناتھا۔اس موقعہ پر جمیل احمد،شمشابیگم ،محمدعالم،بشیراحمداورعبدالحد نے کیمپ کوکامیاب بنانے کیلئے اہم رول اداکیا۔