مرکز ’ملک سے غداری قانون‘ پر از سر نو غور کیلئے تیار

نئی دہلی //تعزیرات ہند کی دفعہ 124اے کی ویلیڈیٹی (درستگی) پر منگل کے روز ہونے والی سماعت سے پہلے مرکزی حکومت نے سپریم کورٹ میں اپنا جواب داخل کر دیا ہے۔ مرکز نے کہا ہے کہ ’’سیڈیشن لاء  (ملک سے غداری قانون) کا از سر نو جائزہ لیا جا رہا ہے۔ حکومت برطانوی دور کے قوانین کی جکڑن دور کرنے کے لیے پرعزم ہے اور اس کے لیے لگاتار کوششیں ہو رہی ہیں۔ لیکن ملک کی سالمیت کو بنائے رکھنا بھی ضروری ہے۔ سبھی حالات کو دیکھتے ہوئے فیصلہ لیا جائے گا۔ فی الحال سپریم کورٹ ملک سے غداری قانون کی ویلیڈیٹی پر سماعت نہ کرے۔‘‘مرکزی حکومت نے اپنے حلف نامہ میں یہ بھی کہا ہے کہ ملک ’آزادی کا امرت مہوتسو‘ منا رہا ہے۔ حکومت کی اعلیٰ سطح پر خود وزیر اعظم ہر شہری کی آزادی اور حقوق انسانی کی حفاظت کی حمایت کرتے رہے ہیں۔