مذہبی جوش وخروش کیساتھ نوراترہ تہوار کاآغاز….وادی چناب کے منادرمیں عقیدت مندوں کابھاری رش

کشتواڑ//ضلع کشتواڑ میں نوراتروں کاتہواردھوم دھام کے ساتھ شروع ہوگیاہے ۔پہلے نوراترے کے موقعہ پر شیواورگوری شنکر مندروں میں عقیدت مندوں کی بھاری بھیڑنے حاضری دی ۔مندروں میں بھاری رش کی وجہ سے لوگوں کوقطاروں میں کھڑے ہوکر انتظارکرناپڑا۔اس مقدس موقعے پرضلع کشتواڑکے مندروں کے باہرخواتین عقیدت مندوں کولال رنگ کے کپڑے پہنے ہوئے تھے اوربتایاجاتاہے کہ خواتین ہرنوراترے کے دن مختلف رنگ کے کپڑے پہنتی ہیں۔ عقیدت مندوں بالخصوص خواتین نے ماں درگاکے دربارپرحاضری دے کراپنے پریواراورریاست کی خوشحالی اورترقی کی دعاکی۔ اس موقعہ پر مندروں کے باہر حلوہ پوری اورمٹھائیاں بھی بانٹیں گئیں اوربھنڈارے کابھی انتظام کیاگیاتھا۔اسی طرح مختلف مقامات پرمذہبی پروگرام مثلاً بھجن اورہونوں کابھی اہتمام کیاگیاتھا۔اس دوران شیومندرفیصل آباد، گوری شنکرمندرسرکوٹ اوردیگرمندروں میں بھی بھاری تعدادمیں عقیدت مندوں نے حاضری دی۔ایک مقامی عقیدت مندمونوورمانے کشمیرعظمیٰ سے بات کرتے ہوئے کہاکہ نوراترالفظ سنسکرت زبان کاہے جس کامعنی نوراتیں ہے۔انہوں نے کہاکہ ان نوراتوں میں درگاماں کی پوجاکی جاتی ہے۔علاوہ ازیں ڈوڈہ ضلع کے مختلف منادرمیں بھی پہلے نوراترہ کے موقعہ پر عقیدت مندوں کی بھاری تعدادنے حاضری دی۔ اس دوران مندروں کے باہرلوگوں کاتانتالگارہا ۔ڈوڈہ میں سب سے بڑی تقریب رادھے شام مندرڈوڈہ میں منعقدہوئی جس میں مندرکے پجاری نے نوراتروں کی اہمیت کے بارے میں تفصیلی خیالا ت کااظہارکیا۔