محکمہ بجلی کا انوکھا کارنامہ: ٹنگمرگ کے بے گھرشہری کو60ہزار روپے کابجلی بل بھیج دیا

ٹنگمرگ//ٹنگمرگ میں ایک غریب شخص کو محکمہ بجلی نے 60 ہزار سے زیادہ بل روانہ کرکے کپڑے پھاڑنے پر مجبور کردیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق ٹنگمرگ کے اَپر بازار میں اُس وقت میڈیا کے ساتھ ساتھ لوگوں کی بھاری بھیڑ جمع ہوگئی جب حاتم گنائی ولد غلام رسول گنائی ساکنہ درورو ٹنگمرگ  نامی شخص نے محکمہ بجلی کی بل ہاتھ میں لہراتے ہوئے اپنے کپڑے پھاڑنے شروع کیے۔مذکورہ شخص نے اپنی دکھ بری داستان بیان کرتے ہوئے کہا  کہ سال 2001 تک اس کا ایک ہنستا کھیلتا گھر تھا جس میں وہ اپنے تین بچوں اور اہلیہ کے ساتھ خوشی خوشی رہتا تھا لیکن سال 2002 میں اسوقت سائل پر مصیبت کا پہاڑ ٹوٹ پڑا جب سائل کے تین بچے ایک کے بعد ایک سال میں ہی فوت ہوگئے اور ابھی ہم میاں بیوی بچوںکے مرنے کے غم سے ہی نڈھال تھے کہ بچوں کا صدمہ برداشت نہ کرتے ہوئے بیوی بھی اللہ کو پیاری ہوگئی۔ سال 2004 میں نارہ بل ٹنگمرگ روڈ کی کشادگی کی زد میں میرا دو کمروں پر مشتمل مکان بھی آگیا جس سے میں بے گھر ہوگیا اور تب سے لوگوں کے گھروں میں مزدوری کرکے اپنا پیٹ پالتا ہوں۔اسطرح میرا نہ کوئی گھر ہے اور نہ مکمل ٹھکانا ہے۔ دو روز قبل میرے پیروں تلے اسوقت زمین کھسک گئی جب مجھے محکمہ بجلی کے مقامی لاین مین نے 66752 کی بجلی بل تھما دی۔میں گورنر اتظامیہ سے پر زور اپیل کرتا ہوں کہ اس کی تحقیقات کرایں ۔اس سلسلے میں جب اس نامہ نگار نے اسٹنٹ ایگزیکٹو انجینئرمعراج الدین سے فون پر رابط قائم کیا تو انھوںنے کوئی خاطر خواہ جواب دینے کے بجاے یہ کہہ کر بات کر نے سے انکار کیا کہ وہ کسی رشتہ دار کی عیادت کرنے جارہاہے۔