لشکر طیبہ کا اظہار برہمی

سرینگر// لشکر طیبہ چیف محمودشاہ نے دختران ملت کی 7ارکان کو حراست میں لیے جانے کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے اسے انسانی حقوق کے منافی اقدام قراردیاہے ۔ انہوں نے کہاکہ شہداء کے گھروالوں کے ساتھ اظہارہمدردی کرنا کونسا جرم ہے ؟ ۔محمود شاہ نے کہاکہ دراصل بھارت سرکار تحریک آزادی میں خواتین کے کردار سے خوفزدہ ہے ۔انہوں نے کہاکہ ہماری مائیں بہنیں نہتے ہوتے ہوئے بھی مجاہدین کا کرداراداکررہی ہیں ۔مرحوم مصور کے گھر کی طرف جانے والے راستوں کو باڑ لگاکر تعزیت کرنے والوں کو جانے سے روکنا قابل مذمت عمل ہے ۔یہ انسانی حقو ق کی کھلی خلاف ورزی ہے اس طرح کی اوچھی حرکتوں سے ہندوستانی فورسز میں اخلاقیات کے فقدان کا ثبوت ملتا ہے ۔دنیا میں مہذب معاشرے جنگی حالات میں خواتین اور بچوں کا احترام کرتے ہیں ۔محمودشاہ نے محبوبہ مفتی سرکارکو مخاطب کرتے ہوئے کہاکہ وہ فی الفوران کی رہائی کے اقدامات کرکے  کشمیری تہذیب کا ثبوت دیں ۔