فرقہ ورانہ بھائی چارے کی ایک اور مثال

کولگام//  قاضی گنڈکے وائی کے پورہ میں ہندوراجپوت لڑکی کے آخری رسومات میں مقامی مسلم برادری نے شرکت کرکے کشمیرکے روایتی ہندومسلم بھائی چارے کی ایک اور مثال قائم کی۔سوموار شام کو 32سال کی مینوکماری دختر انگریز سنگھ راجپوت علالت کے بعد انتقال کرگئیں۔جونہی علاقے میں مینو کے فوت ہونے کی خبر پھیل گئی تو وہاں رنج والم کی لہر دوڑ گئی اور لوگ فوراً راجپوت کنبے کے گھر پہنچ گئے اور غمزدہ کنبے کی ڈھارس بندھائی اور لڑکی کے آخری رسومات کی تیاری میں جٹ گئے۔