عالی کدل اوردرگمولہ میں آتشزدگی وارداتیں

سرینگر+کپوارہ//عالی کدل میں آتشزدگی کی ایک بھیانک واردات کے دوران 5 رہائشی مکان خاکستر ہوئے جبکہ گیس سلنڈر پھٹ جانے سے تین افراد زخمی ہوئے جنہیں علاج ومعالجہ کی خاطر نزدیکی ہسپتال منتقل کیا گیاجہاں خاتون زخموں کی تاب نہ لا کر چل بسی۔محکمہ فائر اینڈ ایمرجنسی کے اعلیٰ افسران نے کشمیر عظمی کو بتایا کہ جمالٹہ نواکدل میں چار بجکر 25 منٹ پر غلام محمد کھوسہ ولد مرحوم عبدل رحمان کے رہائشی مکان میں آگ نمودار ہوئی جو کہ باورچی خانے میں رسوئی گیس خارج ہونے سے دھماکہ ہوا جس سے آگ تیزی سے پورے رہائشی مکان میں پھیل گئی جو تیزی سے دوسرے رہائشی مکانات تک پھیل گئی ۔آگ لگنے سے چار رہائشی مکانات اور ان میں موجود مال اسباب مکمل طور پر خاکستر ہوکر رہ گئے جبکہ اس ہولناک آتشزدگی کی واردات میں اس پاس مزید تین رہائشی مکانات بھی بھی آگئے جن کو جزوی نقصان پہنچا ۔آتشزدگی کی واردات میں 56 سالہ خاتون شکیلہ زوجہ غلام محمد کھوسہ جو بھیانک آگ کی واردات میں باہر نہیں نکل پائی وہ زندہ جل گئی جبکہ تین شہری عبدالعزیز اور اس کی اہلیہ فضی بیگم، محکمہ فائر اینڈ ایمرجنسی سے منسلک اہلکار محمد رفیق کاٹھجو ساکنہ صفاکدل سرینگر بھی  زخمی ہوئے. زخمیوں کو صدر ہسپتال سرینگر منتقل کیا گیا.جمالٹہ نواکدل آتشزدگی کی واردات میں عبدل سلام بٹ ولد عبدل قدو کا تین منزلہ رہائشی مکان، غلام حسن کھوسہ ولد مرحوم عبدالرحمان کا تین منزلہ، غلام محمد پھسو ولد عبدل رحمان کا چار منزلہ مکان کے رہائشی مکانات مکمل طور پر خاکستر ہوگئے. پولیس نے معاملے کی نسبت مقدمہ درج کرکے مزید تحقیقات شروع کردی ہے ۔ادھر شمالی ضلع کپوارہ کے رڈ بک درگمولہ میں آگ کی ایک واردات میں ایک رہائشی مکان تباہ ہوگیا۔ عینی شاہدین کا کہنا ہے کہ بدھ کی شام رڈبگ کپوارہ میں ایک دو منزلہ رہائشی مکان میں اچانک آگ نمودار ہوئی جس نے فوری طور پورے مکان کو اپنی لپیٹ میں لے لیا ۔ آگ اس قدر بھیانک تھی کہ اس کے شعلے دوردورتک دکھائی دے رہے تھے ۔ اس ورات میں نذیر احمد لون کا رہائشی مکان خاکستر ہوا تاہم مقامی فوجی یونٹ 47آرآر نے آگ بجھانے میں فائر اینڈ ایمرجنسی کو بھر پور مدد کیا اور آگ کو مزید پھیلانے سے قابو پالیا۔بتایاجاتاہے کہ آگ شارٹ سرکٹ کی وجہ سے لگی تھی جس کے بعد مکان میں موجود رسوئی گیس سلنڈر پھٹنے سے زودار دھماکہ ہوا۔