عالمی یوم خواتین

آج کے دور میں خواتین اپنے لئے جگہ بنا رہی ہیں:مشیر خان

 ترقی میں حصہ ادا کرنے کیلئے خواتین کی حوصلہ اَفزائی اور موقعہ دینے کی ضرورت 

سری نگر//لیفٹیننٹ گورنر کے مشیر فاروق خان نے کہا ہے کہ موجودہ صدی میں صنفی عدم مساوات کو دُور کرنے کی وجہ سے سب سے بڑی سماجی تبدیلی آئی ہے جس نے ہمارے ملک کی خواتین کو مناسب پہچان دی ہے۔مشیر موصوف نے اِن باتوں کا اِظہار ٹیگور ہال میں عالمی یوم نسواں کے موقعہ پرخواتین کے ایک بڑے اِجتماع سے خطاب کرنے کے دوران کیا۔مشیر فاروق خان نے معاشرے کی ترقی میں خواتین کے کردار پر روشنی ڈالتے ہوئے کہا کہ نہ صرف ایک کنبہ بلکہ پوری دُنیا کی ترقی اور ترقی کا اِنحصار خواتین کی ترقی پر ہے ۔اُنہوں نے مزید کہا کہ اِس بڑے دِن کو سال بھر منایا جانا چاہیے کیوں کہ خواتین سال بھر ہر گھر کی بنیاد بنی رہتی ہے۔اُنہو ںنے اِس برس خواتین کے عالمی دِن کا تھیم ’’ بریکنگ دی بائس ‘‘ کے بارے میں تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ وہ وقت گزر گیا کہ جب خواتین کے ساتھ تعصب کیا جاتا تھا ۔اُنہوں نے مزید کہا کہ خواتین آج کے دور میں اَپنے لئے جگہ بنارہی ہیں۔لیفٹیننٹ گورنر کے مشیر فاروق خان نے مختلف شعبوں میں جموں وکشمیر کے تعاون پر روشنی ڈالتے ہوئے کہا کہ جموںوکشمیر کی خواتین قوم کی تعمیر کی مسلسل اور تعمیر ی کوششوں سے مختلف شعبوں میں نمایاں اثر ڈال رہی ہیں۔اُنہوں نے مزید کہا کہ جموں وکشمیر کی خواتین کو حوصلہ افزائی اور موقعہ دینے کی ضرورت ہے اور وہ اَپنی صلاحیت اور طاقت سے جموںوکشمیر اور پوری قوم کی ترقی میں اَپنا حصہ اَدا سکتی ہیں۔مشیر موصوف نے کہا کہ خواتین تمام شعبوں میں کامیابی حاصل کرنے والی ہیں چاہے وہ کاروبار ہو، کھیل ہو ، تعلیم ہو ، زراعت ہو ، اِنجینئرنگ ہو، اِختراع ہو یا میڈیکل شعبہ ہو۔اُنہوں نے مزیدکہا کہ خواتین نے جموںوکشمیر کے ساتھ ساتھ دُنیا بھر میں ملک کا وقار بلند کیا ہے۔مشیر فاروق خان نے اِس موقعہ پر جموں سے تعلق رکھنے والی رخشندہ مہک کی بھی ستائش کی جس نے پیرس ور سیلیز فرانس میں منعقدہ ورلڈ ڈیف جوڈو چمپئن شپ میں کانسے کا تمغہ جیتا ہے۔اُنہوں نے وہیل چیئر باسکٹ بال کھلاڑی اِنشاء بشیر کی بھی تعریف کی جنہوں نے اَپنے ملک کا سر فخر سے بلند کیا۔اُنہوں نے مختلف شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والی خواتین کو متعلقہ شعبوں میں کامیابیوں پر مبارک باد دیتے ہوئے کہا کہ خواتین ہمارے معاشرے کے لئے روشنی کا مینار ہیں اور اُنہیں ان کے خوابوں کی تعبیر سے کوئی نہیں روک سکتا ۔ اُنہوں نے مزید کہا کہ وہ ’’ نیا جموںوکشمیر اور نیا بھارت ‘‘ کی پہچان ہوں گے۔اِس موقعہ پر صوبائی کمشنر کشمیر پانڈورانگ کے پولے نے کہا کہ یہ دِن ہمیں خواتین کے مسائل پر بات کرنے اور ان کا حل کرنے پر مجبور کرتا ہے ۔اُنہوں نے مزید کہا کہ دُنیا بدل رہی ہے اور خواتین ہر شعبے میں کام کر رہی ہیں اور ہر سطح پر اَپنا کردار اَدا کر رہی ہیں۔صوبائی کمشنر نے کہا کہ حکومت نے خواتین کو بااِختیار بنانے کے لئے متعدد سکیمیں شروع کی ہیں جیسے اجولا گیس یوجنا ، جل جیون مشن وغیرہ اور جس نے ان کی ترقی میں نمایاں مدد کی ہے۔اَپنے خطبہ اِستقبالیہ میں آئی سی پی ایس کے مشن ڈائریکٹر شبنم شاہ کاملی نے کہا کہ اِس ملک میں خواتین کی آزادی کی ایک طویل تاریخ ہے اور ہمارے ملک نے خواتین کو بااِختیار بنایا ہے۔ اُنہوں نے مزید کہا کہ خواتین کی صلاحیتوں اور اِن کی عظیم قیادت کی قابلیت کی ایک بھر پور تاریخ ہے اور اُنہوں نے ہمیشہ ہرشعبے میں نمایاں کردار اَدا کیا ہے۔اِس موقعہ پر فردوس ڈرامیٹک کلب کے فن کاروں نے خواتین کے ساتھ مسائل کو اُجاگر کرنے والے دِن کے موضوع پر ایک خاکہ پیش کیا۔ سونزل آرٹ کلچرل آرگنائزیشن کے فن کاروں نے بھی اَپنی رنگا رنگ پر فارمنس سے حاضرین کومحظوظ کیا۔بعد میں مشیر فاروق خان نے اِس موقعہ پر 10ویں اور 12ویں جماعت کی ہونہار طالبات ، گرل سپورٹس پرسنز ، کاروباری خواتین اور خواتین کی فلاح و بہبود کے دیگر اَفسران کو بھی مبارک باد پیش کی۔