شعیب لون کی بنگلہ دیش سے واپسی میں مدد کیلئے بھاجپا کا شکریہ ادا

عظمیٰ یاسمین
 تھنہ منڈی // ڈی ڈی سی ممبر عبدالقیوم میر نے بھارتیہ جنتا پارٹی میں شمولیت کے بعد دیگر پارٹیوں کارکنان کے ساتھ تھنہ منڈی میں ایک پریس کانفرنس کا انعقاد کیا۔ اس دوران انھوں نے ڈاکٹر شعیب لون کو بنگلہ دیش سے ہندوستان لانے میں وزیر اعظم نریندر مودی اور جموں و کشمیر میں بھارتیہ جنتا پارٹی کے صدر رویندر رینہ کی کوششوں کو سراہتے ہوئے ان کا دلی شکریہ ادا کیا۔ میر نے کہا کہ خطہ پیر پنچال کے فرزند ڈاکٹر شعیب لون بنگلہ دیش کی راجدھانی ڈھاکہ کے بارند میڈیکل کالج میں ایم بی بی ایس کے آخری سال کا طالب علم تھے جو گزشتہ 3 جون کو کالج کے دو دیگر ساتھیوں کے ہمراہ ایک حادثے کا شکار ہو گئے جن میں سے ایک کی موت ہو گئی اور شعیب سمیت دو دیگر شدید زخمی ہو گئے تھے۔ انھوں نے بتایا کہ موصوف ڈھاکہ کے بارند میڈیکل کالج میں زیر علاج تھے جنھیں ہندوستان لانے میں بھارتیہ جنتا پارٹی بالخصوص وزیراعظم نریندر مودی اور جموں و کشمیر میں بی جے پی کے صدر رویندر رینہ کا اہم رول رہا۔ انھوں نے مزید کہا کہ بی جے پی حکومت نے ڈاکٹر شعیب لون کو ایئر لفٹ کے ذریعے ہندوستان لا کر ایمس میں بھرتی کیا ہے جہاں ان کا علاج چل رہا ہے۔ ڈی ڈی سی ممبر نے بتایا کہ مرکزی حکومت نے ڈاکٹر شعیب لون کو بہتر علاج فراہم کرنے اور اس کے تمام تر اخراجات برداشت کرنے کا فیصلہ کر کے خطہ پیر پنچال کے عوام کے دل جیت لئے ہیں جس کے لئے وہ ضلع راجوری کے عوام بالخصوص ڈاکٹر شعیب لون کے اہل خانہ کی طرف سے پارٹی کی اعلیٰ کمان کا شکریہ ادا کرتے ہیں جنہوں نے جلد ہی اس مسلے تیز رفتار کارروائی کرکے ڈاکٹر شعیب لون کو ہندوستان منتعقل کیا۔