شعبہ صحت میں انقلابی اقدامات

ضلع اسپتالوں میں عمر رسیدہ افراد کیلئے خصوصی وارڈوں کا افتتاح

 
جموں// لیفٹیننٹ گورنر منوج سنہا نے جمعرات کو تمام اضلاع میں عمر رسیدہ افراد کیلئے قائم کئے گئے 10بستروں پر مشتمل خصوصی وارڈوں اور دیگر سہولیات کا افتتاح کیا ۔ اس موقع پر منوج سنہا نے کہا کہ یہ تاریخی قدم صحت کی دیکھ بھال کے نظام میں کئی دہائیوں پرانے خلاء کو ختم کرے گا ۔ انہوں نے کہا کہ اس سے معمر اور شدید بیمار، عمر رسیدہ مریضوں کو خصوصی سہولیات فراہم کرکے ان کے وقار اور معیار زندگی کو یقینی بنانے میں مدد ملے گی۔گورنر نے کیا کہ پچھلی کئی دہائیوں کے دوران عمر رسیدہ افراد تک رسائی، موثر اور فالج کی دیکھ بھال کی ضرورت میں اضافہ ہوا لیکن جموں و کشمیر میں اس پر توجہ نہیں دی گئی۔انہوں نے کہا کہ عمررسیدہ افراد کیلئے خصوصی طبی سہولیات کی ضرورت سماج کے ایک اور زاویئے کو اجاگر کرتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ جموں و کشمیر کو مضبوط اور خوشحال بنانے کیلئے عمر رسیدہ افراد کو بہتر طبی علاج میسر کرنا ترجیحات میں شامل کرنا ہوگا۔ جموں و کشمیر کے بدلتے ہوئے طبی شعبہ پر بات کرتے ہوئے لیفٹیننٹ گورنر نے کہا کہ سرکار شعبہ صحت میں نئی اصلاحات کو متعارف کرنے جارہی ہے جس سے متوازن طبی نگہداشت میسر ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ نئی اصلاحات کے ذریعے سماجی برابری پیدا ہوگی اور بہتر طبی نگہداشت تک سب کو رسائی حاصل ہوگی۔ایل جی نے مزید کہا کہ شعبہ صحت کو بہتر بنانے کیلئے لئے جانے والے اقدامات کا اندازہ اس بات سے کیا جا سکتا ہے کہ وزیر اعظم نریندرمودی کا خود انحصاری کا خوب دور دراز علاقوں میں بہتری طبی نگہداشت فراہم کرنے اور شہر اور گائوں کی دوری کو ختم کرکے تمام خدمات کو لوگوں کے گھروں تک پہنچانے سے ہی پورا کیا جاسکتا ہے۔ گورنر نے کہا ’’ شعبہ صحت میں اصلاحات کی کوششیں کافی کار آمد ثابت ہورہی ہیں، ہم نے بنیادی ڈھانچے کی کمی کو پورا کرنے کیلئے کئی موثر اقدامات اٹھائے، جو وزیر اعظم کی دور انداشی اور رہنمائی سے ہی ممکن ہوپایا ہے اور اب دور دراز علاقوں میں بھی وافر، سستی  اور قابل بھروسہ طبی سہولیات بہم رکھی گئی ہیں‘‘۔ انہوں نے کہا کہ نیا بنیادی ڈھانچہ 7177کروڑ روپے کی لاگت سے بنایا جارہا ہے اور تمام اضلاع میں صحت کے بنیادی ڈھانچے کو مضبوط کرنے کیلئے 881کروڑ روپے سے 140منصوبوں کو پورا کیا گیا ہے جبکہ اس سال 7873کروڑ روپے مختص رکھے گئے ہیں جس سے جموں و کشمیر میں بے شمارطبی سہولیات فراہم ہونگی۔ڈاکٹروں، نیم طبی عملہ اور دیگر ہیلتھ ورکروں کا شکریہ ادا کرتے ہوئے گورنر نے کہا کہ صحت میں کام کرنے والے لوگوں کی وجہ سے جموں و کشمیر کورونا وائرس کی وباء کو قابو کرنے اور کورونا مخالف ٹیکہ کاری میں ملک بھر میں آگے رکھا ۔ لیفٹیننٹ گورنر نے کہا ’’ضرورت مندوں کی خدمت کرنا ہماری ثقافت ہے، ہمیں خود کو انسانی خدمت کیلئے وقف رکھنا ہو گاور یہ کام ذمہ داری، رحم دلی اور سنجیدگی سے نبھانی چاہئے اور طبی سہولیات تک سب کی رسائی کو یقینی بنانا چاہئے۔ اس موقع پر گورنر نے مختلف محکمہ جات پر زور دیا کہ وہ سماجی بہبود کیلئے بنائی گئی اسکیموں کو لاگو کرنے میں سرعت لائیں تاکہ عمر رسیدہ افراد کے مسائل جلد حل کئے جاسکیں۔ گورنر نے کہا ’’ یہ ہماری ذمہ داری ہے کہ ہم ہر ضلع میں عمر رسیدہ افراد کیلئے یہ سہولیات دستیار رکھیں، ان تاریخی اقدام کو اسوقت کامیاب تصور کیا جائے گا جب کسی کو بھی علاج کیلئے ادھر اُدھر نہ جانا پڑے اور انتظامیہ خود ضرورت مند تک پہنچئے۔