سیری پورہ ٹھٹھارکہ میں پانی کی شدید قلت | آٹھ سال قبل بنایا گیا ٹیوب ویل نا قابل استعمال، اراضی مالک سے بھی کیاگیا وعدہ جھوٹا نکلا

زاہد بشیر
گول// ضلع رام بن کے سب ڈویژن گول میں محکمہ جل شکتی کی جانب سے بہت ساری ایسی سکیمیں جن پر لاکھوں روپے لگانے کے با وجود ان اسکیموں سے ابھی تک عوام کو کوئی فائدہ نہیں پہنچ رہا ہے ۔یہاں سیری پوری واٹر اسکیم کی بات کریں یا سیری پورہ میں آٹھ سال قبل بنایا گیا ایک ٹیوب ویل کی تمام کے تمام بے سود ثابت ہو رہے ہیں ۔ حسن دین نامی ایک شہری کی زرعی اراضی میں قریباً آٹھ سال قبل محکمہ نے ایک ٹیوب ویل کا تعمیری کام شروع کیا جہاں پر لاکھو ں روپے خرچ کئے گئے لیکن ابھی تک یہ ٹیوب ویل قابل استعما ل نہیں ہو رہا ہے جس وجہ سے جہاں زمیندار کافی پریشان ہے وہیں دوسری جانب عوام بوند بوند کے لئے ترس رہے ہیں اور سرکاری وعدوں پر ہی دن دن نکال رہے ہیں ۔ ذرائع ابلاغ کے ساتھ کرتے ہوئے مقامی زمیندار حسن دین نے کہا کہ گزشتہ آٹھ سال قبل محکمہ نے ہم سے اراضی لی اور یہاں پر ٹیوب ویل کا کام شروع کیا کافی پیسہ خرچ کیا گیا لیکن ابھی تک یہ قابل استعما ل نہیں ہے ۔ انہوں نے کہا کہ اُس وقت ہم سے وعدہ بھی کیا گیا تھا کہ آپ کے گھر سے ایک فرد کو سرکاری نوکری ملے گی لیکن ابھی تک یہ ٹیوب ویل ہی نہیں بنا تو نوکری کب ملے گی ۔ انہوں نے کہا کہ نوکری کا جھانسہ جھوٹا ہے اس لئے ہمیں اس اراضی کا معاوضہ دیا جائے ۔ انہوں نے کہاکہ اس وقت عوام بوند بوند کے لئے ترس رہے ہیں عوام ندی نالوں کا غلیظ پانی استعمال کرنے پر مجبور ہیں لیکن سرکا رکو ٹس سے مس نہیں ہو رہا ہے ۔ انہوں نے گور نر انتظامیہ سے مطالبہ کیا کہ جلد از جلد اس مسئلے پر توجہ دے کر عوام کے ساتھ انصاف کیا جائے ۔