سونہ مرگ ہیلتھ سنٹر میں طبی سہولیات کا فقدان

کنگن//سونہ مرگ میں قائم پرائمری ہیلتھ سینٹر میں جہاں طبی سہولیات کا فقدان ہے وہیںلاکھوں روپئے مالیت کی مشینری بے کار پڑی ہوئی ہے ۔پی ایچ سی میںچھ برس قبل سرکار نے لاکھوں روپئے مالیت کی مشینری نصب کی لیکن عملہ کی عدم دستیابی کے باعث یہ مشینری بے کار پڑی ہوئی ہے۔ مقامی لوگوں یہ مشینری اب زنگ آلودہ ہوچُکی ہے۔ سونہ مرگ میں ہر روز سینکڑوں کی تعداد میں سیاح سیر و تفریح کیلئے آتے ہیں اور زوجیلا درے اور دیگر مقامات پر آئے روز حادثات کی وجہ سے یہ ہیلتھ سینٹر انتہائی اہمیت کا حامل ہے۔اس سلسلے میں بیوپار منڈل سونہ مرگ کے صدر شبیر احمد لون نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ سونہ مرگ ہسپتال میں لاکھوں روپئے مالیت کی مشینری ہونے کے جاوجود اُس کو چلانے کے لئے عملہ دستیاب نہیں ہے جبکہ زچگی میں مبتلا خواتین کو سرینگر کا رُخ کرنا پڑتا ہے۔اس دوران معلوم ہوا ہے کہ ہسپتال میں گذشتہ تین سال سے میڈیکل اسسٹنٹ کی اسامی بھی خالی پڑی ہے ۔ چیف میڈیکل آفیسر گاندربل ڈاکٹر روشن دین کسانہ نے اعتراف کیا کہ ہسپتال میں طبی عملہ کی کمی ہے ۔انہوں نے یقین دہانی کی کہ خالی پڑی اسامیوں کو جلد پُر کیا جائے گا تاکہ ہسپتال میں آنے والے مریضوں کو مشکلات کا سامنا نہ کرنا پڑے۔