سلام فاونڈیشن کا مہو منگت میں تعلیمی بیداری پروگرام

بانہال // تحصیل کھڑی کے دور افتادہ علاقہ مہو منگت میں ایک تعلیمی جانکاری کیمپ کا انعقاد کیا گیا جس کا اہتمام مقامی طور قائم کی گئی رضاکار تنظیم سوو لٹریری ایسوسی ایشن مہو یا  کی جانب سے منعقد کیا گیا تھا ۔اس پروگرام کی صدارت فاونڈیشن کے سر براہ مولانا حافظ و قاری امتیاز احمد بٹ نے کی جبکہ سر پنچ حاجی عبدالحمید شیخ ، حاجی علی محمد شیخ ، سرپنچ گل محمد جان ، حاجی غلام محمد بٹ ، ماسٹر ارشاد علی ارشاد ، سماجی کارکن عبد الرشید بٹ،مولوی غلام محمد ، جمالدین ملا ، محمد ایوب حجام اور عبدالجبار مہمان ذی وقار اور مہمان خصوصی کے طور پر شریک ہوئے ۔مقامی سطح پر وجود میں آئی سلام فاؤنڈیشن کی طرف سے علاقے میں اپنی نوعیت کے اس پہلے پروگرام کا مقصد علاقہ مہو منگت اور کھڑی کو تعلیمی شعبہ میں ترقی کی راہ پر گامزن کرنا ہے اور لوگوں کو تعلیم کے متعلق بیداری فراہم کرنا تھا تاکہ اس دور اور پسماندہ علاقے میں لوگوں کو تعلیم کی اہمیت اور بچوں کو سکول بھیجنے کی طرف راغب کیا جا سکے۔مہو میں منعقد ہوئے اس پروگرام میں مہو منگت ، بجناڑی اور ولو کے معززین اور باشعور لوگوں ، سماجی کارکنوں اور رضاکاروں نے شرکت کی۔ اس موقعہ پر مقررین نے تعلیمی اہمیت ، افادیت اور حصول تعلیم کے طریقوں پر روشنی ڈالی اور علاقے میں دینی اور دنیاوی تعلیم کے پھیلاؤ ، فروغ اور نظام تعلیم کو بہتر بنانے کی اس کوشش میں لوگوں کا تعاون طلب کیا ۔مقررین نے علاقہ مہو منگت اور کھڑی تحصیل کے سرکاری سکولوں میں تباہ حال نظام تعلیم پر اپنی تشویش کا اظہار کیا اور محکمہ تعلیم کو بہتر بنانے کیلئے سرکار اور محکمہ تعلیم کی خاموشی اور بے بسی پر افسوس اور غم وغصے کا اظہار بھی کیا گیا۔ اس موقعہ پر متفقہ طور فیصلہ کیا گیا کہ اس تعلیمی سیشن کے دوران سکولوں میں اساتذہ کی حاضری کو باقاعدہ اور انہیں جوابدہ بنانے کیلئے سلام فاونڈیشن مقامی سطح پر مہم چلائی گی اور اس کیلئے اساتذہ ، والدین اور تعلیم کے زونل اور ضلع افسران میں باہمی تعلق پیدا کرانے کی کوشش کی جائے گی تاکہ بچوں کے مستقبل کو بہتر بنایا جاسکے۔ انہوں نے کہا کہ ضلع رام بن میں تعلیمی اعتبار سے تحصیل کھڑی پسماندہ ہے اور اس تحصیل میں مہو منگت کا علاقہ تعلیمی اعتبار کے لحاظ سے سب سے زیادہ متاثر ہے۔ مہو۔منگت میں اپنی نوعیت کے اس پہلے پروگرام کے انعقاد کا سہرا سلام فاونڈیشن کے بنیادی کارکنوں جن میں فیاض احمد نائیک ، محمد لطیف نائیک کے علاوہ تمام ممبران اور رضاکار نوجوان جن میں عبدا لطیف نائیک ، فیاض احمد بٹ ، محمد اسحق نائیک مولوی فیاض احمد ، شوکت ارشاد ، منظور احمد حجام، مفتی محمد اشرف ، بشارت بشیر ، بلال احمد ملا شامل ہیں، کی کاوشوں کو جاتا ہے جن کے بدولت اس بچھڑے علاقے میں تعلیم کے پھیلاؤ اور بیداری کیلئے شروع کی گئی مہم میں بڑے لوگوں تک بات پہنچائی گئی اور ایک نیا عزم لیکر لوگوں نے اس کار خیر کیلئے کمر بستہ ہونے کا عہد کیا۔ پروگرام کے آخر پر پچھلے امتحانوں میں بہترین کارکردگی کیلئے سکولی بچوں کی حوصلہ افزائی کیلئے انعامات بھی تقسیم کئے گئے۔پروگرام کی نظامت کے فرائض فاونڈیشن کے آرگنائزر محمد یوسف شیخ ے انجام دیئے ۔