سرینگر اور کولگام سے 2 ہائبرڈ جنگجو گرفتار: پولیس کا دعویٰ

نیوز ڈیسک
سری نگر// پولیس نے آج سری نگر اور کولگام اضلاع سے دو ہائبرڈ جنگجوؤں کو اسلحہ اور گولہ بارود کے ساتھ گرفتار کرنے کا دعویٰ کیا ہے۔

 

پولیس کے ایک ترجمان نے بتایا کہ ایک مخصوص اطلاع پر سری نگر پولیس اور فوج کی 50-آر آر نے نوگام، سری نگر سے بڈگام کے موچھوا کے ایک ہائبرڈ جنگجو شیخ شاہد گلزار کو گرفتار کیا۔

 

انہوں نے کہا کہ اس کے پاس سے پستول اور زندہ گولہ بارود سمیت مجرمانہ مواد برآمد ہوا ہے۔ اس ضمن میں متعلقہ دفعات کے تحت مقدمہ درج کیا گیا ہے”۔

 

پولیس نے بتایا کہ ایک مخصوص اطلاع پر کولگام پولیس نے فوج کی 34 آر آر کے ساتھ مل کر لشکر طیبہ کے ایک ہائبرڈ جنگجو کو گرفتار کیا جس کی شناخت یامین یوسف بٹ ولد محمد یوسف بھٹ ساکن گڈیہامہ کے طور پر ہوئی ہے۔

 

ابتدائی تحقیقات سے معلوم ہوا کہ گرفتار ہائبرڈ عسکریت پسند پاکستان میں مقیم عسکریت پسندوں کے ساتھ ساتھ تنظیم لشکر طیبہ کے مقامی عسکریت پسندوں سے رابطے میں تھا اور اسے عسکریت پسندی کے واقعے کو انجام دینے کا کام سونپا گیا تھا۔

 

وہ ضلع کولگام میں عسکریت پسندوں کو پناہ گاہ، رسد اور دیگر مدد فراہم کرنے میں بھی شامل تھا جس میں اسلحہ/گولہ بارود اور دھماکا خیز مواد کی نقل و حمل شامل تھی۔

 

ترجمان نے مزید کہا کہ ان کی گرفتاری پولیس کے لیے ایک اہم  کارنامہ ہے، کیونکہ وہ ضلع کی ٹپوگرافی سے بخوبی واقف تھے اور ان کے لیے سافٹ ٹارگٹ کا انتخاب کرنا آسان تھا۔

 

انہوں نے کہا کہ “اس کے قبضے سے ایک پستول، ایک پستول میگزین، 9 ایم ایم کے 51 راؤنڈز اور 2 دستی بم سمیت مجرمانہ مواد، اسلحہ اور گولہ بارود برآمد کیا گیا ہے”۔

 

پولیس اسٹیشن کولگام میں ایک مقدمہ (ایف آئی آر نمبر 57/2022 قانون کی متعلقہ دفعات کے تحت) درج کیا گیا ہے اور تحقیقات کا آغاز کیا گیا ہے