سرینگر اور بانڈی پورہ میں سی سی ٹی وی کیمرے نصب کرنیکی ہدایات

اشفاق سعید
 سرینگر//ضلع مجسٹریٹ سرینگر اور بانڈی پورہ نیدونوں اضلاع کے تمام مالیاتی اور کاروباری یونٹ ہولڈروں سے کہا ہے کہ وہ ’اچھے معیار‘کے سی سی ٹی وی کیمروں کا استعمال کریں اور کلوز سرکٹ ٹیلی ویژن سسٹم میں کسی بھی مشکوک نقل و حرکت کا مشاہدہ کرنے کی صورت میں قریبی پولیس تھانہ کو مطلع کریں۔انہوںنے کہاکہ یہ حکم 5 اپریل سے پہلے ہی نافذ ہو چکا ہے اور 60 دنوں کی مدت کیلئے نافذ رہے گا۔ ڈپٹی کمشنر سرینگر اور بانڈی پورہ نے خبردارکیاکہ اس حکم کی کوئی بھی خلاف ورزی ہوئی تو انڈیا پینل کوڈ 1860 کے سیکشن 188 کے تحت قانونی کاروائی کی جائیگی۔ دونوں ڈپٹی کمشنروں نے کہا کہ ملک دشمن اور تخریبی عناصرکے ذریعہ جموں و کشمیر میں معصوم شہریوں کو چن چن کر نشانہ بنانے کے حالیہ بڑھتے ہوئے واقعات سے متعلق مسلسل خطرے کے پیش نظر،جان و مال کی مشینری کی حفاظت کے لیے مناسب ٹیکنالوجی کے استعمال سمیت متعدد اقدامات کی ضرورت ہے۔اْنہوں نے کہا، ’’یہاں بہت سے بینکنگ اور مالیاتی/کاروباری ادارے موجود ہیں، جیسے بینک/اے ٹی ایم، زیورات کی دکانیں، پیٹرول پمپ، شاپنگ مال، ریستوران، ہوٹل، سنیما ہال، شراب اور بیئر کی دکانیں، کھانے پینے کی جگہیں، ریڈی میڈ گارمنٹس کی دکانیں، شو روم، چھوٹے بازار، تعلیمی ادارے، عبادت گاہیں، بس سٹینڈز، ریلوے سٹیشن، ہوائی اڈے، ہسپتال اور دفاتر، جہاں لین دین نقدی میں ہوتا ہے یا ایسی جگہ جہاں پر 50 یا اس سے زیادہ لوگوں کے جمع ہونے کا امکان ہوتا ہے۔ اس طرح کے اداروں کے بیرونی علاقوں کا احاطہ کرنے کے لئے سی سی ٹی وی کیمرے نصب نہیں ہیں‘‘۔ انہوں نے کہا کہ سی سی ٹی وی کی تنصیب سے نہ صرف جرائم پر قابو پانے میں مدد ملے گی بلکہ انسانی جانوں کو لاحق خطرات کو روک کرکاروبار، سیاحت اور معاشرے کی مجموعی ترقی کو فروغ دینے میں بھی مدد ملے گی۔انہوں نے کہا کہ جرائم پیشہ افراد، سماج دشمن اور ملک دشمن عناصر کو جرائم کرنے سے روکنے کے لیے ایسے اداروں کے باہر سی سی ٹی وی کی تنصیب ایک قوت بڑھانے کا کام کرے گی، جس سے ان اداروں میں آنے والے عام لوگوں/صارفین میں مزید اعتماد پیدا ہوگا۔ انہوں نے مزید کہاکہ لہٰذا اب سیکشن144سی آر پی سی  کے تحت حاصل اختیارات کو استعمال میں لاتے ہوئے کاروباری اداروں کے مالکان، مارکیٹوں کی مارکیٹ ایسوسی ایشنز کی طرف سے سختی سے 2ہفتوں کے اندر تعمیل کرنے کی ہدایات دی جاتی ہیں۔ آرڈر میں کہا گیا ہے کہ کیمروں کو اس طرح سے نصب کیا جانا چاہئے کہ یہ دکانوں ،اداروں/مارکیٹ ایسوسی ایشن کے داخلی اور خارجی راستوں اور اسٹیبلشمنٹ/مارکیٹ کے پارکنگ لاٹوں کے داخلی اور خارجی راستوں سمیت40 میٹر کے فاصلے تک کا احاطہ کرے۔ اس بات کو یقینی بنائیں کہ نصب کردہ سی سی ٹی وی سسٹم رات دن کام کرے۔سی سی ٹی وی سسٹم کو کم از کم ریزولوشن 1920 x 1080، کم از کم روشنی0.01 لکس، فوکل کی لمبائی 3.6 ملی میٹر، بلٹ ان آئی آر اور 30 دن کی برقرار رکھنے کی مدت کے ساتھ، پلے بیک کے ساتھ ساتھ ریکارڈنگ ڈاؤن لوڈ کرنے کی خصوصیت کے ساتھ اچھی کوالٹی کا ہونا چاہئے۔آرڈر میں مزیدکہا گیا ہے کہ جب بھی مطالبہ کیا جائے پولیس اور دیگر قانون نافذ کرنے والے اداروں کو سی سی ٹی وی فوٹیج فراہم کریں۔