سرکاری سکولوں میں معیاری تعلیم کی فراہمی

سرینگر// ضلع انتظامیہ نے سرینگر میں 25سرکاری سکولوں کو سمارٹ کلاسوں کیلئے منتخب کیا ہے جس میں عملے کی تربیت کے علاوہ جدید درس و تدریس کے مواد کی فراہمی ہوگی۔اس اقدام کا مقصد سرکاری سکولوں کو ٹیکنالوجی سے آراستہ کرنا اور درس و تدریس کے تجربے کو بہتر بنانا ہے۔ منتخب سکولوں کے اساتذہ نیشنل انسٹی ٹیوٹ آف ایجوکیشنل پلاننگ اینڈ ایڈمنسٹریشن کے تیار کردہ صلاحیت سازی کے ماڈیولز سے گذریں گے۔ ضلع ترقیاتی کمشنر کی سربراہی میں عمل درآمد کمیٹی میںجوائنٹ ڈائریکٹر پلاننگ ، سپرانٹنڈنٹ انجینئر پی ڈبلیو ڈی ، چیف ایجوکیشن آفیسر ، ڈسٹرکٹ ایجوکیشن پلاننگ افسران کے ساتھ ساتھ  ماہرین تعلیم اس کے نمائندے ہوں گے۔یہاں یہ امر قابل ذکر ہے کہ ضلع انتظامیہ نے اس سے قبل سرینگر سمارٹ سٹی لمیٹڈ کے اشتراک سے 25 سمارٹ سکول قائم کئے تھے جن کا افتتاح رواں سال کے شروع میں 3600 سے زیادہ طلباء  کے اندراج کے ساتھ ہوا تھا۔ ضلع انتظامیہ مرحلہ وار بنیاد پر100 سے زائد سکولوں کو اسی طرز پر تیار کرنے کا ارادہ رکھتی ہے۔سمارٹ کلاس رومز کے قیام کے لئے منتخب سکولوں میں سمارٹ بورڈ ، جدید فرنیچر ، water purifie، درس و تدریس کا مواد ، کھیلوں کا سامان ، کتابوں کے ریک ، لائبریری اور دیگر بنیادی ڈھانچہ فراہم کیاجائے گا۔ شہر سرینگر میں جن سکولوں کا انتخاب کیا گیا ہے ان میں بی ایم ایس کرشبل ، پی ایس اولڈ پامپوش کالونی ، پرائمری اسکول شیخ کالونی گذربل ، بائز مڈل اسکول پاندریٹھن ، پرائمری اسکول شیخ محلہ کالونی ، بائز مڈل اسکول باغات 1 شور ، مڈل سکول اتھواجن ، مڈل اسکول عالمگیری بازار ، مڈل اسکول کرسو راجباغ ، پرائمری اسکول کھمنوہ چک، مڈل اسکول زینکوٹ ، مڈل اسکول نوہٹہ ، مڈل اسکول مدین صاحب ، مڈل اسکول جامع مسجد ، مڈل اسکول نند پورہ ، مڈل اسکول بانگی محلہ ، مڈل اسکول گنڈ حسی بھٹ ، مڈل اسکول فردوس آباد فروٹ منڈی ، مڈل اسکول دوجی محلہ ، مڈل اسکول کھمبر ، مڈل اسکول چودھری باغ ، مڈل اسکول شاہ ہمدان محلہ ، پرائمری اسکول میرپورہ ، مڈل اسکول مہجور نگر اور مڈل اسکول دل حسن یارشامل ہیں۔ اس کے علاوہ دیہی علاقوں میں 10 اضافی اسکولوں کا انتخاب کیا جارہا ہے۔ دریں اثنا ، ضلع انتظامیہ نے ان میں سے 14 سکولوں کو تخلیقی دیوار پینٹنگ کے لئے بھی منتخب کیا ہے۔ڈپٹی کمشنر سری نگر ، شاہد اقبال چودھری نے بتایا کہ سرکاری اسکولوں کو اپ گریڈ اور جدید بنانے کے لئے انتظامیہ کی مستقل کوشش ہے کہ اس کا مقصد نتیجہ پر مبنی معیاری تعلیم کی فراہمی اور تعلیمی اداروں کی ملکیت کو فروغ دینا ہے۔ مسابقتی عمل کے ذریعے مزید اسکولوں کو شارٹ لسٹ کیا جارہا ہے۔ 25 سمارٹ کلاس روموں کے پروجیکٹ کیلئے 2 ماہ کی مدت مقرر کی گئی ہے۔
2پیٹرول پمپوں پر جرمانہ عائد
کم ایندھن کی فراہمی کا شاخسانہ