سروجنی نگر جھگی بستی میں انہدامی کارروائی پر سپریم کورٹ کی عبوری روک

یو این آئی
نئی دہلی// سپریم کورٹ نے پیر کو دہلی کے سروجنی نگر علاقے میں تقریباً 200 جھونپڑیوں کوہٹانے کی کارروائی پر “انسانی ہمدردی” کی بنیاد پر عبوری روک لگا دی۔ جسٹس کے . ایم جوزف اور جسٹس ہرشیکیش رائے کی ڈویژن بنچ نے عرضی گزاروں ودیارتھی ویشالی اور دیگر کی التجا پر عبوری حکم منظورکیا۔ سپریم کورٹ نے کچی آبادی کے خلاف کارروائی کے اس معاملے میں مرکزی حکومت کو نوٹس جاری کرتے ہوئے جواب طلب کیا ہے ۔ اگلی سماعت 2 مئی کو ہوگی۔ دہلی ہائی کورٹ کے ذریعہ جھگی جھونپڑی میں توڑ پھوڑ کے حکم پر روک لگانے سے انکارکے بعد ویشالی اوردیگرنے عبوری راحت کی امید میں سپریم کورٹ سے رجوع کیا تھا۔ عرضی گزاروں کی طرف سے سینئر وکیل وکاس سنگھ نے درخواست گزاروں کے بورڈ امتحان کا حوالہ دیتے ہوئے انہدامی کارروائی پر فوری طور پر روک لگانے کی التجا کی۔