ریاست کی خصوصی شناخت خطرے میں

سرنکوٹ//نیشنل کا نفرنس سنیئر لیڈر و سابقہ وزیر سید مشتاق بخاری نے دفعہ 370اور 35Aکے تعلق سے بھاجپا کے عزائم کو خطر ناک قرار دیتے ہوئے رائے دہندگان پر زور دیا ہے کہ وہ ریاست کی خصوصی شناخت کے تحفظ اور فرقہ پرستی سے نجات کیلئے جموں پونچھ پارلیمانی حلقہ سے کانگریس کے امید وار رمن بھلہ کی حمایت کریں ۔پارٹی کارکنوں کی جانب سے اسمبلی حلقہ سرنکوٹ کے شیندرہ اپر میں منعقدہ ایک اجلاس سے خطاب کر تے ہوئے بخاری نے کہا کہ بی جے پی جیسی فرقہ پر ست جماعت سے چھٹکارہ پانے اوراس جماعت کے جموں وکشمیر سے خاتمے کیلئے یہ انتخابات انتہائی اہم ہیں ۔انہوں نے کہاکہ بھاجپا نے اقتدار میں آنے کے بعد مسلمانوں کیخلاف تشدد کرنے میں کوئی کسر باقی نہیں چھوڑی جبکہ پارٹی قیادت نے سیاسی مفاد کیلئے ملکی عوام کو مذہب ،فرقوں اور خطوں میں تقسیم کرنے کی کوششیں کیں جس کی وجہ سے ملکی سالمیت کو نقصان پہنچنے کا خدشہ پیدا ہو گیا ہے ۔ان کا کہنا تھا کہ بی جے پی نے جو اپنا انتخابی منشور جاری کیاہے اس سے عیاںہوتا ہے کہ وہ دفعہ370 اور 35A کو منسوخ کرنے کا عزم لیکر چل رہے ہیں جو کہ ریاستی عوام کیلئے تشویش ناک بات ہے ۔انہوں نے اسمبلی حلقہ کی عوام سے اپیل کرتے ہوئے کہاکہ وہ ریاستی شناخت کو بچانے او ر تعمیر و ترقی کیلئے جموں پونچھ پارلیمانی نشست سے کانگریس امید وار رمن بھلہ کے حق میں اپنے ووٹ ڈالیں ۔اس اجلاس میں نیشنل کانفرنس کے ضلع سکریٹری حمید رانا اور مقررین میں  سرپنچ وحید حسین شاہ سرپنچ طاہر مرزا اور یوتھ نیشنل کانفرس کے صوبائی نایب صدر شیراز ملک تھے۔ان  کے علاوہ کافی ورکران موجود تھے۔