ریاستی ہائی کورٹ کیلئے نئے 4ججوں کی تقرری

 سرینگر//سپریم کورٹ نے جموں کشمیر ہائی کورٹ کیلئے4نئے ججوں کی سفارش کردی ہے، انکی داخلی سنیارٹی رائج طریقہ کار کے تحت مقرر کی جائے گی۔سپریم کورٹ کے حکم نامہ میں کہا گیا ہے کہ سفارشات پر تبادلہ خیال کرنے کے دوران عدالت عظمیٰ کے چیف جسٹس دیپک مشرا،جسٹس جے چلمیشور اور جسٹس رنجن گگوئے نے وکلاء، وسیم صدیق نرگال،نذیر احمد بیگ،سندھو شرما اور جوڈیشل افسر رشید علی ڈار کو جموں کشمیر ہائی کورٹ کے نئے ججوں کے بطور سفارش پیش کی۔ حکم نامہ میں مزید کہا گیا ہے’’ہم نے باریک بینی سے فائل میں موجود مواد کی جانچ پڑتال کی ہے،جس میں جموں کشمیر کے گورنر اور وزیر اعلیٰ کا نقطہ نظر،سفارشات کے خلاف شکایات اور سراغ رساں ایجنسیوں کی رپورٹ،انکی عمر،آمدنی، فیصلوں کے اعدادو شمار اور محکمہ انصاف کے مشاہدات بھی شامل ہیں۔آرڑر میں مزید لکھا گیا ہے’’جوڈیشل آفیسر رشید علی ڈار سے متعلق ہم نے انکے سروس ریکارڑ،فیصلہ سازی احاطہ کمیٹی،اے سی آر اوز،وہ تاریخ جب اسامی کیلئے58 1/2سال سے کم  عمرتھے،اور وہ اس کیلئے اہل ہوئے‘‘۔سپریم کورٹ کے اس پیینل نے کہا کہ وہ اس بات سے اتفاق رکھتے ہیں کہ وسیم صدیق نرگال،نذیر احمد بیگ،سندھو شرما اور جوڈیشل افسر رشید علی ڈار ،جموں کشمیر ہائی کورٹ میں ججوں کی تقرری کیلئے موزوں ہیں۔