راشٹر پتی بھون میں8000مہمانوں کے درمیان صدر دروپدی مرمو نے نئی حکومت کوحلف دلایا | مودی3.0کا آغاز وزارتی کونسل 72وزراء پر مشتمل، نئی ٹیم میں 30کابینہ، 5آزادانہ چارج کیساتھ اور 36وزرائے مملکت شامل

عظمیٰ نیوز سروس

نئی دہلی// نامزد وزیر اعظم نریندر مودی نے اتوار کو راشٹرپتی بھون میں ایک متاثر کن تقریب میں اپنی مسلسل تیسری مدت کے لیے ہندوستان کے وزیر اعظم کے طور پر حلف لیا جس میں ہندوستان کے پڑوس اور بحر ہند کے لیڈران نے شرکت کی۔صدر دروپدی مرمو نے نریندر مودی اور انکے ساتھ وزارتی کونسل میں شامل 72وزراء کو عہدے کا حلف دلایا۔حلف برداری کی تقریب میں نیپال کے وزیر اعظم پشپا کمل دہل ‘پراچندا، سری لنکا کے صدر رانیل وکرما سنگھے، بھوٹان کے وزیر اعظم شیرنگ توبگے، مالدیپ کے صدر محمد موززو، ماریشس کے وزیر اعظم پراوِند جگناوتھ، بنگلہ دیش کی وزیر اعظم شیخ حسینہ اور سیشلز کے نائب صدر احمد عفیف نے شرکت کی۔وزیر اعظم کی کابینہ میں شامل 72 وزیروں نے بھی راشٹر پتی بھون میں صدر جمہوریہ سے عہدے اور رازداری کا حلف لیا۔ وزیر اعظم کی قیادت میں، نئی ٹیم میں 30 دیگر کابینہ وزیر، 5آزادانہ چارج کے ساتھ وزیر مملکت اور 36وزیر مملکت شامل ہیں۔ یہ بھارت کے کونے کونے سے آرہے 24 ریاستوں کے ساتھ ساتھ ریاستوں کے اندر تمام خطوںکے تمام سماجی گروپوں کی نمائندگی کررہے ہیں۔ ان میں 27او بی سی، 10 ایس سی، 5 ایس ٹی، 5 اقلیتیں بشمول ریکارڈ 18 سینئر وزرا جو وزارتوں کی سربراہی کر رہے ہیں، بھی شامل ہیں۔ 11 این ڈی اے کے اتحادی وزرا ء بھی شامل ہیں۔ 3 یا اس سے زیادہ مدت تک خدمات انجام دینے والے 43 وزیر اور 39 اس سے پہلے حکومت میں وزیر رہ چکے ہیں۔6سابق وزرائے اعلیٰ، 39 سابق مرکزی حکومتوں میں خدمات انجام دے چکے ہیں اور 23 ریاستوں میں وزیر کے طور پر کام کر چکے ہیں۔
مودی کون ہیں؟

17 ستمبر 1950 کو گجرات کے ایک چھوٹے سے قصبے میں پیدا ہوئے، ان کے خاندان کا تعلق دیگر پسماندہ طبقے سے تھا جو معاشرے کے پسماندہ طبقات میں سے ہے۔اپنے ابتدائی سالوں میں، انہوں نے راشٹریہ سویم سیوک سنگھ کے ساتھ کام کیا اور بعد میں قومی اور ریاستی سطح پر بھارتیہ جنتا پارٹی تنظیم کے ساتھ کام کرتے ہوئے خود کو سیاست کے لیے وقف کر دیا۔ 2014 سے شروع ہونے والی وزیر اعظم کے طور پر دو میعادوں کے علاوہ، نریندر مودی کو یہ اعزاز بھی حاصل ہے کہ وہ گجرات کے سب سے طویل عرصے تک رہنے والے وزیر اعلی ہیں اور ان کی مدت اکتوبر 2001 سے مئی 2014 تک رہی۔پی ایم مودی کو زمین پر موجود لوگوں کے ساتھ ایک طاقتور ‘ذاتی رابطہ’ رکھنے کے لیے جانا جاتا ہے اور وہ لوگوں تک پہنچنے اور ان کی زندگیوں میں تبدیلی لانے کے لیے ویب کا استعمال کرتے ہوئے ہندوستان کے سب سے زیادہ ٹیکنو سیوی لیڈر کے طور پر بھی جانے جاتے ہیں۔انہوں نے شاعری سمیت کئی کتابیں بھی تصنیف کیں۔ پی ایم مودی نے اپنے دن کی شروعات یوگا سے کی۔پی ایم مودی نے بی جے پی کی قیادت والی این ڈی اے کو لوک سبھا انتخابات میں لگاتار تیسری کامیابی حاصل کی۔بی جے پی نے 2014 اور 2019 کے لوک سبھا انتخابات میں بالترتیب 282 اور 303 سیٹیں جیت کر اپنے بل بوتے پر مکمل اکثریت حاصل کی تھی۔ مودی پارلیمنٹ میں 292 نشستوں کے ساتھ این ڈی اے اتحاد کی قیادت کر رہے ہیں۔انہوں نے جمعہ کو حکومت بنانے کا دعوی کرنے کے بعد راشٹر پتی بھون کے احاطے میں میڈیا کو بتایا”این ڈی اے حکومت 1، 2، اور اب 3 یہ تسلسل ہے۔ ہم ملک کو مزید وژن اور کام کے ساتھ آگے لے جائیں گے۔انہوں نے کہا”10 سال کے اس دور میں، ہندوستان دنیا کے لیے ایک وشوبندھو کے طور پر ابھرا ہے۔ اس کا زیادہ سے زیادہ فائدہ اب شروع ہو رہا ہے۔ اور مجھے یقین ہے کہ اگلے 5 سال عالمی ماحول میں بھی ہندوستان کے لیے بہت مفید ثابت ہونے والے ہیں۔انہوں نے کہا ’’ مجھے 10 سال تک وزیر اعظم کا تجربہ ہے اور میں اس تجربے کو بخوبی استعمال کروں گا‘‘۔

وزراء کے نام

30کابینہ وزراء میںراج ناتھ سنگھ،امیت شاہ،نتن گڈکری،جے پی نڈا،شیوراج سنگھ چوہان،نرملا سیتارمن،ایس جے شنکر،منوہر لال کھتر،ایچ ڈی کمارسوامی،پیوش گوئل،دھرمیندر پردھان،جیتن رام مانجھی،راجیو رنجن سنگھ عرف للن سنگھ،سربانند سونووال،ڈاکٹر وریندر کمار،کنجراپو رام موہن نائیڈو،پرہلاد جوشی،جوال اورم،گری راج سنگھ،اشونی وشنو،جیوترادتیہ سندھیا،بھوپیندر یادو،گجیندر سنگھ شیخاوت،اناپورنا دیوی،کرن رجیجو،ہردیپ سنگھ پوری،منسکھ منڈاویہ،جی کشن ریڈی،چراغ پاسوان،سی آر پاٹل شامل ہیں۔5آزادنہ چارج کیساتھ وزرائے مملکت میںرا ئواندرجیت سنگھ،جتیندر سنگھ،ارجن رام میگھوال،پرتاپرا گنپترا جادھو اورجینت چودھری شامل ہیں۔36وزرائے مملکت میںجتن پرساد،شری پد نائک،پنکج چودھری،کرشن پال گرجر،رام داس اٹھاولے،رام ناتھ ٹھاکر،نتیا نند رائے،انوپریا پٹیل،وی سومنا،ڈاکٹر چندر شیکھر پیمسانی،ایس پی سنگھ بگھیل،شوبھا کرندلاجے،کیرتی وردھن سنگھ،بی ایل ورما،شانتنو ٹھاکر،سریش گوپی،ایل مروگن،اجے ٹمٹا،بندی سنجے کمار،کملیش پاسوان،بھاگیرتھ چودھری،ستیش چندر دوبے،سنجے سیٹھ،رونیت سنگھ بٹو،درگا داس یوکی،رکشا کھڈسے،سکانتا مجومدار،ساوتری ٹھاکر،ٹوکن ساہو،راج بھوشن چودھری،بھوپتیراجو سری نواسا ورما،ہرش ملہوترا،نمبوین جینتی بھائی بمبھنیا،مرلیدھر موہول،جارج کورین اورپابیترا مارگریٹا شامل ہیں۔