دلی نے صرف وعدہ خلافیاں کیں

سرینگر// نیشنل کانفرنس صدر ڈاکٹر فاروق عبداللہ نے کہا ہے کہ دلی نے ہمیشہ جموںوکشمیر کیساتھ ناانصافی کی اور اُن تمام وعدوں سے مکر گئی جو  یہاں کے عوام کیساتھ کئے گئے۔ چک دارا ہاورن میں چنائوی مہم کے دوران پارٹی ورکروں سے خطاب کرتے ہوئے ڈاکٹر فاروق نے کہا کہ جموںوکشمیر کے عوام کیساتھ ہوئی وعدہ خلافیاں موجودہ حالات کی بنیادی وجہ ہے اور نئی دلی کو اپنی کشمیر پالیسی پر فوری نظرثانی کرکے یہاں تاناشاہی پر مبنی حکمرانی کو ترک کرنا چاہئے۔ شاہراہ کو ہفتے میں دو دن بند رکھنے کے احکامات کو تاناشاہی سے تعبیر کرتے ہوئے انہوںنے کہا کہ ’’کل آپ یہاں سیاحت بند کرو گے، یاترا بند کرو گے، ایسے فیصلے ہمیں ناقابل قبول ہیں، کشمیری کسی کے غلام نہیں اور نہ مستقبل میں رہیں گے‘‘۔پی ڈی پی کو ہدف تنقید بناتے ہوئے ڈاکٹر فاروق نے کہا کہ محبوبہ مفتی آج ریاست کے تشخص کا دفاع کرنے کی باتیںکررہی ہیںلیکن جب یہاں جی ایس ٹی کا اطلاق کیا تب کسی کی نہیں سُنی اور آر ایس ایس کی ایما پر جموںوکشمیر کی مالی خودمختاری نیلام کردی۔ ڈاکٹر فاروق نے کہا کہ آر ایس ایس اور بھاجپا کے عزائم صحیح نہیں، یہ لوگ جموں وکشمیر کے تشخص کو ختم کرنا چاہتے ہیں اور مسلمانوں کو نقصان پہنچانا چاہتے ہیں۔ اپنے عزائم کو پورا کرنے کیلئے ان لوگوں نے کشمیر میں اپنے آلہ کاروں کو کام پر لگا رکھا ہے اور طاقت و پیسے کے بلبوتے پر اپنے منصوبوں کو عملی جامہ پہنچانے کیلئے کوشاں ہیں۔