دریائے پونچھ میں غیر قانونی کان کنی جاری

پونچھ//جے سی بی مالکان اور کولہو کے مالکان کے خلاف انتظامیہ کی کارروائی کے بعد بھی کچھ لوگ دریائے پونچھ میں کان کنی میں سرگرم ہیں ۔اس سلسلہ میں ایڈووکیٹ اجیت ورماچیئرمین نوواپونچھ نے ان لوگوں کی شدید تنقید کی ہے جو دریائے پونچھ سے معدنیات نکال رہے ہیں۔ انہوں نے کشمیر عظمی سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پچھلے کچھ مہینوں میں غیر قانونی کان کنی کی وجہ سے بہت سارے جوانوں کی جانیں گئی ہیں جن کی ذمہ کھدائی کرنے والوں پر عائدہے۔انھوں نے کہا کان کنی کرنے والے اپنے ذاتی مفاد کے لئے دریا میں جے سی بی لگا کر بڑے بڑے گڈھے بنا کر چھوڑ دیتے ہیں جن میں پانی بھر جاتا ہے جن میں ڈوب کر کئی جانیں جا رہیں ہیں۔ انہوں نے ضلع انتظامیہ سے اپیل کی کہ وہ اپنی کاروائیوں میں مزید سختی لا کر دریا کے علاقے میں جے سی بی لگا کر مواد نکالنے والوں کی مشنری ضبط کریں اورمالکان کے خلاف قانون کے مطابق سخت کارروائی کی جائے۔ انہوں نے غیر قانونی کان کنی کو روکنے کے لئے فوری طور پر ہدایات کے لئے ڈی سی پونچھ کی کوششوں کو سراہا لیکن دوسری طرف ماتحت پولیس افسران کو بھی تنقید کا نشانہ بنایا جنہوں نے ڈی سی پونچھ کے حکم پر عمل نہیں کر رہے ہیں۔