خستہ حال مکان میں اکیلا رہنے والاکشمیری پنڈت کولگام کی انتظامیہ سامنے آئی،مکمل ذمہ داری اٹھانے کا فیصلہ

عظمیٰ نیوز سروس

سرینگر// کولگام میں ہفتہ کے روز ضلعی انتظامیہ ایک خستہ حال مکان میں اکیلے رہنے والے ایک کشمیری پنڈت کو بچانے کے لیے آئی جب ایک ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہوئی۔کولگام کے آمنو گائوں میں رہنے والے کشمیری پنڈت پیارے لال کی حالت زار پر ایک ویڈیو میں روشنی ڈالی گئی ۔ویڈیو میں دکھایا گیا کہ کشمیری پنڈت ایک خستہ حال مکان میں غیر صحت مند حالت میں رہتا ہے۔ملی ٹینسی شروع ہونے کے بعد اس کی پڑوس میں رہنے والے بیشتر کشمیری پنڈت وادی چھوڑ گئے لیکن پیارے لال نے اپنا گھر نہیں چھوڑا، گائوں نہیں چھوڑا۔اکثریتی مسلم فرقے سے تعلق رکھنے والے اس کے پڑوسی اس کی خوراک اور کچھ دوسری ضروریات پوری کرتے ہیں۔”ا

 

یک بزرگ کشمیری پنڈت پیارے لال، کولگام کے آمنو گائوںمیں سخت حالات زندگی گزار رہے ہیں، ان کی صحت بگڑتی جارہی ہے‘‘، سوشل میڈیا پر ایک پیغام پوسٹ کیا گیا۔ویڈیو پر ردعمل ظاہر کرتے ہوئے، کولگام کے ڈپٹی کمشنر اطہر عامر خان نے کہا کہ ضلع انتظامیہ پیارے لال کے روزمرہ کے معاملات کو دیکھے گی۔ضلع ترقیاتی کمشنر نے ہفتے کے روز کشمیری پنڈت کی رہائش گاہ کا دورہ کیا۔اطہر عامر خان نےX پر کہا”میں آج اس سے ملنے گیا ۔ ہم نے اپنے سینئر سٹیزن ہوم میں اس کے لیے مناسب انتظامات کیے ہیں لیکن وہ ہمارے اصرار کے باوجود باہر نہیں جانا چاہتا تھا، وہ کسی دوسری جگہ شفٹ نہیں ہونا چاہتا ہے، اس لیے ہم ان کے گھر کے انتظامات کر رہے ہیں “۔ڈپٹی کمشنر نے کہا کہ گھر کی مرمت کی ضرورت ہے جس پر کام کیا جائے گا۔انہوںنے کہا”ان کا ہیلتھ چیک اپ بھی کرایا گیا ہے، ڈاکٹر بھی باقاعدگی سے ان کے پاس جائیں گے، صفائی ستھرائی کا انتظام کیا جا رہا ہے، راشن، بستر، کمبل وغیرہ کا انتظام کیا گیا ہے،ہمارے ڈسٹرکٹ سوشل ویلفیئر آفیسر، ان کی روزانہ کی دیکھ بھال کریں گے،” ۔