حج2019:انتظامات مکمل| بھارت سے 2 لاکھ عازمین سفر حج پر جائیں گے

ممبئی//اقلیتی امور کے مرکزی وزیر مختار عباس نقوی نے کہا کہ اس سال ملک کے 21 ہوائی اڈوں سے 500 سے زیادہ پروازوں کے ذریعے ریکارڈ دو لاکھ ہندوستانی عازمین کسی سبسڈی کے بغیر سفر حج پر روانہ ہوں گے ۔ نقوی نے یہاں ممبئی میں حج ہاؤس میں پرائیویٹ ٹور آپریٹروں (پی ٹی او) کے نمائندوں کے ایک اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ان عازمین میں ایک لاکھ 40 ہزار افرادہندوستانی حج کمیٹی اور 60 ہزار پرائیویٹ ٹور آپریٹروں کے ذریعے حج پر جائیں گے ۔ پرائیویٹ ٹور آپریٹروں کو بھی 10 ہزار عازمین حج کو حج کمیٹی کے مقرر کردہ پیکیج پر ہی لے جانا ہوگا۔انہوں نے کہا کہ اس بار شفافیت اور حج مسافروں کی سہولت کے لیے پرائیویٹ ٹور آپریٹروں کا بھی پورٹل حج ڈاٹ این آئی سی ڈاٹ ان/پی ٹی او (پورٹل فار حج گروپ آرگنائزرس))بنایا گیا ہے جس میں تمام مجاز پی ٹی او کے پیکج وغیرہ کی معلومات دی گئی ہیں۔ اس سال تقریباً 725 پرائیویٹ ٹور آپریٹر عازمین حج کوسفر حج پر لے کر جائیں گے ۔ مسٹر نقوی نے کہا کہ حکومت کی ترجیحات میں عازمین حج کی حفاظت اور سہولیات شامل ہے اور اس معاملے میں کسی طرح کی غفلت برداشت نہیں کی جائے گی۔ زیادہ تر پرائیویٹ ٹور آپریٹر اچھا کام کر رہے ہیں۔ لیکن اقلیتی امور کی وزارت کو کچھ پرائیویٹ ٹور آپریٹروں کے خلاف سنگین شکایات موصول ہوئی ہیں جن کی بنیاد پر ان کے خلاف سخت کارروائی کی گئی ہے ۔ اس سال تین پی ٹی او کو سنگین شکایات کے بعد بلیک لسٹ کیا گیا ہے ۔ گزشتہ برس بھی کئی پرائیویٹ ٹور آپریٹروں کے خلاف سخت کارروائیاں کی گئی تھیں۔ مسٹر نقوی نے کہا کہ اس سال بغیر محرم (مرد رشتہ دار) کے حج پر جانے والی خواتین کی تعداد میں بھی اضافہ ہوا ہے ۔ اس سال 2340 خواتین بغیر محرم کے سفر حج پر جا رہی ہیں۔ اس کے علاوہ ہندوستان سے جانے والے 2 لاکھ عازمین حج میں تقریباً 48 فیصد خواتین شامل ہیں۔  حج کے لئے پروازیں 4 جولائی 2019 سے شروع ہو رہی ہیں۔ 4 جولائی کو دہلی، گیا، گوہاٹی اور سری نگر سے فلائٹس روانہ ہونے لگیں گی۔ بنگلور (7 جولائی)، کالیکٹ (7 جولائی)، کوچین (14 جولائی)، گوا (13 جولائی)، منگلور (17 جولائی)، ممبئی (14 جولائی، 21 جولائی)، سری نگر (21 جولائی) سے عازمین حج روانہ ہوں گے ۔ دوسرے مرحلے میں احمد آباد (20 جولائی)، اورنگ آباد (22 جولائی)، بھوپال (21 جولائی)، چنئی (31 جولائی)، حیدرآباد (26 جولائی)، جے پور (20 جولائی)، کولکتہ (25 جولائی)، لکھنؤ (20 جولائی) ، ناگپور (25 جولائی)، رانچی (21 جولائی) اور وارانسی (29 جولائی) کو سفر حج کی پروازیں شروع ہو جائیں گی۔ مسٹر نقوی نے کہا کہ سعودی عرب کی طرف سے ہندوستان کا حج کوٹہ دو لاکھ کئے جانے کا ہی نتیجہ ہے کہ آزادی کے بعد پہلی بار اتر پردیش، مغربی بنگال، آندھرا پردیش اور بہار سمیت ملک کی سبھی بڑی ریاستوں کے سبھی درخواست گزار حج 2019 پر جا رہے ہیں۔ مسٹر نقوی نے کہا کہ مودی حکومت کی جانب سے حج کا پورا عمل سو فیصد آن لائن / ڈیجیٹل کرنے سے جہاں ایک طرف شفافیت یقینی ہوئی ہے وہیں دوسری جانب سفر حج سستا ہوا جس سے ہندوستان سے حج پر جانے والے لوگوں کوسہولت ہوئی ہے ۔ عازمین حج کی طبی سہولت کے لئے مکہ میں 11 اور مدینہ میں 3 ہیلتھ سینٹر کا انتظام کیا گیا ہے ۔ اس کے علاوہ مکہ میں تین اور مدینہ میں ایک اسپتال کا انتظام کیا گیا ہے ۔ اس کے علاوہ 620 حج کوآرڈی نیٹر، اسسٹنٹ حج افسر، حج اسسٹنٹ، ڈاکٹر، پارامیڈک وغیرہ کی تقرری کی گئی ہے جس میں بڑی تعداد میں خواتین شامل ہیں۔ یو این آئی