جموںوکشمیر میں جلد چنائو ہونگے، بھاجپا کامیاب ہوگی: چگ

سرینگر// بھارتیہ جنتا پارٹی کے قومی جنرل سکریٹری اور جموں و کشمیر کے انچارج ترون چْگ نے جمعرات کو کہا کہ اتر پردیش سمیت چار ریاستوں میں بی جے پی کو ملنے والا بھاری مینڈیٹ وزیراعظم نریندر مودی کی عوام دوست پالیسیوں کا نتیجہ ہے۔کشمیر نیوز سروس سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے ترون چگ نے کہا کہ بی جے پی اب مشرق سے مغرب اور شمال سے جنوب تک جیت درج کرنے میں کامیاب ہورہی ہے اور یہ پی ایم مودی کی عوام دوست پالیسیوں کی وجہ سے ہے۔ انہوں نے اتر پردیش سمیت چار ریاستوں میں بی جے پی کو بھاری مینڈیٹ دینے کے لیے عوام کا شکریہ ادا کیا۔انہوں نے کہا کہ پی ایم مودی کی پالیسیوں اور ملک میں کوویڈ 19 کے دوران مودی نے جو کام کیا اس کی وجہ سے بی جے پی کے لئے ان تمام ریاستوں سے جیتنا ممکن ہوا۔ انہوں نے کہا کہ 2014 سے پی ایم مودی نے غریب عوام کے حق میں پالیسیاں شروع کی ہیں جس کی وجہ سے آج بی جے پی کو ایک بہت بڑا مینڈیٹ ملا ہے۔انہوں نے کہا کہ وزیراعظم نے لوگوں کو مفت گیس کنکشن، مفت راشن، SBM کے تحت باتھ روم فراہم کرنے کے علاؤہ ہندوستان کو بین الاقوامی سطح پر آگے بڑھایا جبکہ عوام میں مفت کوویڈ 19 ویکسین بھی فراہم کیں۔ترون چگ نے کہا کہ پی ایم مودی کی قیادت میں بی جے پی "سب کا ساتھ سب کا وکاس" نعرے کے تحت ہر مذہب اور ذات کو ساتھ لے کر ہندوستان کو معاشی طور پر مضبوط بنانے کے لیے پرعزم ہے۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ جموں و کشمیر میں جلد ہی انتخابات ہوں گے اور وہاں بھی بی جے پی کامیاب ہوگی۔ انہوں نے مزید کہا کہ جیسا کہ وزیراعظم مودی نے وعدہ کیا ہے کہ جموں و کشمیر میں الیکشن ہوں گے اور وہاں بھی ہم جیت کر ابھریں گے۔ادھر اُتر پردیش میں ملی تاریخی جیت پر جموں وکشمیر میں بھی بھارتیہ جنتا پارٹی کے کارکنوں نے جشن منایا اور پٹاخے چھوڑے ۔بی جے پی کے جموں وکشمیر یونٹ کے صدر نے اس موقع پر کہاکہ یوٹی میں آنے والے 6 سے 8 ماہ کے اندرا ندر انتخابات ہونگے ۔انہوں نے بتایا کہ اس بار جموں وکشمیر میں بھی بھاجپا سرکار بنانے میں کامیاب ہو جائے گی۔بھارتیہ جنتاپارٹی کے کارکنوں نے اُتر پردیش میں ملی تاریخی جیت پرسری نگر اور جموں میں جشن منایا اور پٹاخے سر کئے ۔بی جے پی کے جموں وکشمیر یونٹ کے صدر رویندر رینہ نے نامہ نگاروں سے بات چیت کے دوران بتایا کہ اُتر پردیش میں ملی جیت کانگریس سمیت سبھی پارٹیوں کے لئے چشم کشاں ہے ۔انہوں نے بتایا کہ یو پی میں پانچ برسوں کے دوران بھاجپا نے جو کام کیا اُس کا ثمرہ یہ نکلا کہ وہاں کے لوگوں نے بھارتیہ جنتاپارٹی کو ایک دفعہ پھراقتدار پر بٹھایا۔جموں وکشمیر میں چنائوکے بارے میں پوچھے گئے سوال کے جواب میں رویندر رینا نے کہاکہ آنے والے 6 سے 8 ماہ کے اندر اندر جموں وکشمیر میں اسمبلی چناو ہونگے ۔انہوں نے کہاکہ مرکزی وزیر داخلہ امیت شاہ نے اس حوالے سے واضح کیا ہے کہ حد بندی عمل مکمل ہونے کے فوری بعد جموں وکشمیر میں چناو کرائے جائیں گے ۔بھاجپا صدر کے مطابق جموں وکشمیر میں آنے والے اسمبلی انتخابات میں بھارتیہ جنتاپارٹی واحد بڑی پارٹی کے طورپر اُبھر کر سامنے آئے گی اور اپنے بل پر حکومت تشکیل دینے میں کامیاب ہو جائے گی۔اُن کا مزید کہنا تھا کہ موجودہ مرکزی حکومت نے جموں وکشمیر کے لوگوں کے لئے بہت کچھ کیا ہے اور ہمیں پورا یقین ہے کہ اس بار کا وزیر اعلیٰ بھاجپا کا ہی ہوگا۔