تھنہ منڈی میں پینے کے صاف پانی کا بحران

عظمیٰ یاسمین
 تھنہ منڈی// قصبہ تھنہ منڈی کے وارڈ نمبر 7  باترونی محلہ میں سنیچروار کو محکمہ پی ایچ ای کے خلاف خواتین نے سخت احتجاج کیا۔ احتجاجی خواتین کا کہنا تھا کہ انہیں پینے کے پانی کی سخت قلت کا سامنا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ رمضان المبارک کے اس مقدس مہینے میں بھی وہ پینے کے صاف پانی سے محروم ہیں۔ اس دوران احتجاجی مظاہرین نے محکمہ پی ایچ ای کے خلاف شدید نعرے بازی کی۔ احتجاج میں شامل کئی خواتین نے کہا کہ کچھ لوگوں نے جان بوجھ کر ماہ صیام میں بھی انہیں پانی کی سہولت سے محروم رکھا ہے۔ احتجاجی مظاہرین نے پی ایچ ای کے اعلیٰ افسران سے اپیل کی کہ وہ علاقہ کو پینے کا صاف پانی فراہم کرنے میں رول اداکریں۔ انھوں نے مزید کہا کہ جب حکومت کی جانب سے ایسے مواقع پر لوگوں کو پینے کا صاف پانی فراہم کرنے کی تاکید کی جاتی ہے تو پھر ہمیں پانی کیوں نہیں دیا جاتا۔ خواتین نے پی ایچ ای کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کرتے ہوئے کہا کہ کے ان متبرک ایام میں لوگوں کو پینے کے صاف پانی سے محروم رکھنا ان کے ساتھ سراسر ناانصافی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اگر اْن کا مسئلہ فوری طور حل نہیں کیا گیا تو وہ احتجاج میں شدت لانے کیلئے مجبور ہوجائیں گے۔ اس دوران تھنہ منڈی پولیس سٹیشن سے وابستہ عملہ اور تحصیلدار تھنہ منڈی ساحل علی شاہ نے فوری طور پر دھرنے کی جگہ پہنچ کر محکمہ پی ایچ ای کے افسران سے بات کرنے کے بعد لوگوں کو یقین دلایا کہ پینے کے صاف پانی کا مسئلہ فوری طور پر حل کیا جائے گا اور علاقہ کو پینے کے پانی کی سپلائی کو بحال کرنے کیلئے اقدامات اْٹھائے جائیں گے۔ وہیں جب متعلقہ محکمہ کے جونیئر انجینئر سے اس بارے میں بات ہوئی تو ان کا کہنا تھا کہ بجلی کی فراہمی نہ ہونے کی وجہ سے لوگوں کو پانی دستیاب نہیں ہو سکا البتہ اس سلسلے میں فوری طور پر بہتر اقدامات کیے جا رہے ہیں تاکہ لوگوں کی پریشانیوں کا ازالہ کیا جا سکے۔