تولہ مولہ کی خستہ رابطہ سڑکیں حکام کی نظروں سے اوجھل

راجا ارشاد احمد

گاندربل//تولہ مولہ سہ پورہ رابطہ سڑک کھنڈرات میں تبدیل ہونے سے اس پر سفر کرنا وبال جان بنا ہوا ہے۔ پچھلے کئی برس سے تولہ مولہ سہ پورہ رابطہ سڑک پر نہ ہی تارکول بچھایا گیا اور نہ ہی مرمت کرکے اِسے قابل آمدورفت بنایاگیا، جس کی وجہ سے مقامی آبادی کو عبور و مرور میں مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہیں۔گاندربل کے تحصیل تولہ مولہ کی اندرونی رابطہ سڑکیں، ذیلی سڑکیں اور گلی کوچے جن میں تولہ مولہ، سہ پورہ، بن پورہ ، پیر محلہ، کاپرن پورہ، رابطہ سڑکیں شامل ہیں، کئی برسوں سے کھنڈرات میں تبدیل ہوچکی ہیں۔ جگہ جگہ سڑکوں پر بڑے بڑے گڑھے بن گئے ہیں، جو بارشیں ہونے کی صورت میں تالاب کی شکل اختیار کرتی ہیں جبکہ دھوپ ہونے پر دھول مٹی اور گرد و غبار چاروں طرف سے اُڑتا رہتا ہے۔ ان علاقوں کی آبادی نے محکمہ تعمیرات عامہ سے متعدد بار التجا کی تھی کہ ان رابطہ سڑکوں پر میکڈم بچھایا جائے یا ان کی اس قدر مرمت کی جائے تاکہ عبور و مرور میں راحت محسوس ہو،تاہم متعدد بار اعلیٰ حکام سے رجوع کرنے کے باوجود بھی ان کی شکایات کا ازالہ نہیں کیا گیا۔تولہ مولہ کے مقامی سماجی کارکن بلال بٹ نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ میں نے ان رابطہ سڑکوں پر بنے ہوئے گڑھوں کے حوالے سے ضلع انتظامیہ گاندربل اور محکمہ تعمیرات عامہ کے اعلیٰ سے مسئلہ اٹھایا تھا جو خاص طور پر برسات کے موسم میں حادثات کا خطرہ پیدا کرتے ہیں۔یہ بات سمجھ سے بالاتر ہے کہ حکام نے جان بوجھ کر ان رابطہ سڑکوں کو نظرانداز کردیا ہے جس کی وجہ سے مقامی آبادی خاص کر بیماروں کو عبور و مرور میں گوناگوں مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہیں۔ اس بارے میں جب محکمہ تعمیرات عامہ کے اعلیٰ حکام سے بات کی گئی ،تو انہوں نے کہا کہ رواں سال تولہ مولہ رابطہ سڑک سمیت دیگر سڑکوں پر موسم میں بہتری آتے ہی میکڈم بچھانے کا کام شروع کردیا جائے گا۔