’تنخواہ واگذار کرو ،ورنہ اچھا نہیں ہوگا‘

 
 سرینگر //ایس ایس اے کے تحت کام کر رہے ہیڈٹیچرس نے دھمکی دی ہے کہ اگر اُن کی تنخواہ کو فوری طور واگزار نہ کیا گیا تو اُس کے سنگین نتائج برآمد ہوں گے۔ پریس کالونی میں ہیڈ ٹیچرس نے احتجاج کرتے ہوئے انہوںنے بتایا کہ وہ کئی سال قبل ایس ایس آر بی کے تحت تعینات ہوئے اور اسی بنیاد پر انہیں محکمہ نے ترقی بھی دی لیکن اُس کے باوجود بھی فنڈس کا بہانہ بنا کر ہماری تنخواہ کو وقت پر واگزار نہیں کیا جاتا ہے ۔احتجاج کر رہے اساتذہ کا کہنا تھا کہ پانچ اور چھ ماہ میں صرف ایک ماہ کی تنخواہ ملتی ہے ۔انہوں نے کہا کہ وقت پر تنخواہ نہ ملنے کے سبب وہ بے حد پریشان ہیں کیونکہ اُس سے نہ صرف اُن کے بچوں کی پڑھائی متاثر ہو رہی ہے وہیں انہیں اپنے والدین کیلئے وقت پر دوائی کیلئے بھی پیسے دستیاب نہیں ہوتے ۔احتجاجوں کے مطابق الیکن ڈیوٹی میں بھی اساتذہ ہی پیش پیش ہیں ،ٹرینگ کیلئے بھی اساتذہ کو ہی تعینات کیا جاتا ہے ،بی ایل او سے لیکر چپراسی کا کام بھی وہ کرتے ہیں لیکن انتظامیہ اُن کی جانب دھیان دینے میں مکمل طور پر ناکام ہے۔انہوں نے گورنر انتظامیہ سے اپیل کی ہے کہ وہ اس جانب دھیان دیں تاکہ انہیں مشکلات کا سامنا نہ کرنا پڑے ۔