’تنخواہ حسب سابق طریقے پر واگزار کی جائے‘

کپوارہ//کپوارہ اور اوڑی میں آنگن واڑی ورکرو ں اور ان کی معاونین نے پیر کو گورنر انتظامیہ کے اس فیصلہ کے خلاف زور دار احتجاجی مظاہرے کئے جس میں آنگن واڑی وکرو ں اور ان کی معاونین کو پنچایتو ں کے ماتحت کر دیا گیا ۔پیر کی صبح کو ضلع بھر سے آئی ہوئے سینکڑوں آنگن واڑی ورکروں اور ان کی معاونین (ہیلپرو)کپوارہ میں جمع ہوئے اور گورنر انتظامیہ کے خلاف زور دار احتجاجی مظاہرے کئے ۔ان کا کہنا تھا کہ حال ہی میں گور نر انتظامیہ نے آنگن واڑی وکروں اور ان کی معاونین کو پنچایتو ں کے ماتحت کرنے کاحکم جاری کیاجس پر نظر ثانی کی ضرورت ہے ۔انہو ں نے کہا کہ ایک تو ان کی تنخواہ محدود ہے اور دوسری طرف آنگن واڑی  سینٹروں کو پنچائتو ں کے حوالہ کئے جانے سے شکوک و شبہات پیدا ہوتے ہیں ۔ان کا یہ بھی کہنا ہے کہ اس طرح کے حکم نامو ں سے ان کی عزت نفس بھی دائو پر لگ سکتی ہے ۔انہو ں نے گور نر انتظامیہ سے اس حکم نامہ کو فوری طور واپس لینے کا مطالبہ کیا بصورت دیگر وہ ایک زور دار احتجاجی مہم چھیڑ دیں گے ۔ادھربونیار اوڑی میں پیر کو آنگن واڑی ورکرس نے سرینگر مظفر آباد سڑک پرگورنر انتظامیہ کے خلاف احتجاج کیا اور قریب ایک گھنٹے سڑک کو گاڑیوں  کی آمد رفت کے لئے بند رکھا۔آنگن واڑی ورکرس کا کہنا تھا کہ حال ہی میں گورنر انتظامیہ نے ایک حکم جاری کیا جس میں بتایا گیا ہے کہ آنگن واڑی ورکرس کی تنخواہ اب پنچائت کے ذریعے وگزار کی جائے گی جو آنگن واڑی ورکرس کو منظور نہیں ہے۔آنگن واڑی ورکرس نے مانگ  کی کہ سرکار اس حکم نامے کو واپس لے کر اْن کی تنخواہ حسب سابق طریقے پر واگزار کی جائے۔