ترال میں فوج اور جنگجوؤں کے مابین گولیوں کا مختصر تبادلہ

سرینگر //جنوبی ضلع پلوامہ کے ترال علاقے میں دوران شب فوج اور جنگجوؤں کے مابین گولیوں کے تبادلے کے بعد محصور جنگجو فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے ۔ادھر پلوامہ کے ہی کاکاپورہ دیہات میں فوج اور پولیس نے دوران محاصرہ گھر گھر تلاشی کاروائی عمل میں لائی۔ ترال کے مضافات وٹھمولہ دوران شب ساڑھے گیارہ بجے اُس وقت گولیوں کی گن گرج سے لرز اٹھا جب فوج کی ایک گشتی پارٹی کو جنگجوؤں نے نشانہ بناکر ان پر گولیاں چلائیں۔ فوج کی جوابی کاروائی کے ساتھ ہی طرفین کے مابین گولیوں کا شدید تبادلہ شروع ہوا جو قریبا 15 منٹ تک جاری رہا۔ پولیس ذرائع نے بتایا کہ اگرچہ اس مختصر مسلح تصادم کے بعد جنگجو فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے تاہم فوج نے مزید کمک طلب کرکے اس پورے دیہات کو سخت ترین محاصرے میں لیکر تلاشی آپریشن شروع کردیا جو صبح تک جاری رہا۔ سخت ترین گھر گھر تلاشی کے باوجود فوج کو جب حملہ آور جنگجوؤں کا کہیں  سراغ نہیں ملا تو انہوں نے صبح سویرے علاقے کا محاصرہ ختم کرلیا تاہم دوران تلاشی کسی کی گرفتاری عمل میں نہیں لائی گئی۔ادھر فوج اور پولیس نے اتوار صبح کاکاپورہ پلوامہ کے مضافات دوگام نامی دیہات کا جنگجوؤں کی موجودگی کی خبر ملتے ہی محاصرہ کرلیا۔ پولیس ذرائع نے بتایا کہ فورسز کو اس دیہات میں تین جنگجوؤں کے موجود ہونے کی اطلاع ملی تھی۔تاہم چار گھنٹوں تک جاری رہنے والے اس تلاشی آپریشن میں فوج کا کہیں جنگجوؤں کے ساتھ کوئی آمنا سامنا نہیں ہوا تو انہوں نے علاقے کا محاصرہ ختم کرلیا،تاہم یہاں پر بھی کسی کی گرفتاری عمل میں نہیں لائی گئی۔