تحصیلدار اور ایس ڈی ایم دفاتر کامطالبہ

کوٹرنکہ//بدھل کو تحصیل کادرجہ دے کر تحصیلدار کی تعیناتی عمل میں لانے کے مطالبے پر تیسرے روز بھی بدھل یونائٹیڈ فورم کے بینر تلے احتجاجی دھرنا جاری رہا ۔اس موقعہ پر دھرنے میں شامل لوگوںنے حکومت پر کڑی تنقید کرتے ہوئے کہاکہ سرکار نے ایک حکم جاری کرکے 2014 میں بدھل میں تحصیلدار کی تعیناتی عمل میں لائی لیکن نہ جانے بعد میں یہ درجہ کیوں کر واپس لے لیاگیا ۔ انہوںنے کہاکہ بدھل کے ساتھ پچھلے ستر سال سے ناانصافی ہورہی ہے ۔ مظاہرین کاکہناتھاکہ پاکستان کے حق میں نعرے بازی کرنے والوں کو اے ڈی سی پوسٹ مل جاتی ہے لیکن ان کے ساتھ ناانصافی کی جارہی ہے ۔ انہوںنے کہاکہ بدھل میں تحصیلدار کی تعیناتی عمل میں لائی اوراس علاقے کو تحصیل کادرجہ دیاجائے ۔انہوںنے علاقے میں ایس ڈی ایم دفتر کھولنے کا مطالبہ بھی کیا ۔ اس موقعہ پر جوائنٹ ایکشن کمیٹی اور یوتھ بدھل کے ارکان بھی موجو دتھے۔