بھارتی پالیسی کیخلاف اب ہر گز خاموش نہیں رہا جاسکتا:میر واعظ

 سرینگر//حریت (ع) چیئر مین میرواعظ عمرفاروق نے کرفیووقدغن اورچھاپوں وگرفتاریوں کوظالمانہ حرنے قراردیتے ہوئے کہاہے کہ حکومت ہند اب زیادہ دیر تک مسئلہ کشمیر کو ٹال نہیں سکتی۔میرواعظ جنہیں گزشتہ اتوار سے گھر میں نظر بند رکھاگیا ہے،نے کہا  ہے کہ بدترین ظالمانہ کے مسلسل واقعات اورنہتے کشمیریوںکو چن چن کر نشانہ بناکرفوج اور طاقت کے بل پر کشمیریوں کی جائز آواز کو دبانے کی مذموم پالیسی کیخلاف اب ہرگز خاموش نہیں رہا جاسکتا۔انہوں نے کہا کہ بھارت کو اب نوشتہ دیوار پڑھ لینا چاہئے کیونکہ حریت پسند عوام بالخصوص نوجوانوں نے اپنے حق و انصاف پر مبنی جدوجہد کی آبیاری اور اسے پایہ تکمیل تک لیجانے کا تہیہ اور عزم کررکھا ہے ۔انہوں نے کہا کہ حکومت ہند اب زیادہ دیر تک مسئلہ کشمیر کو ٹال نہیں سکتی کیونکہ عالمی برادری مسئلہ کی سنگینی ،اور یہاں جاری ظلم و زیادتی ، مار دھاڑ، ہراسانیوں، گرفتاریوں اور انسانی حقوق کی سنگین پامالیوں کے سبب خطے میں سیاسی غیر یقینیت اور لاحق خطرات سے پوری طرح باخبر ہو چکی ہے اور دیرینہ تنازعہ کو حق خودارادیت کی بنیاد پر کشمیری عوام کی خواہشات کے مطابق حل کرانے کیلئے دبائو میں روز بہ روز اضافہ ہو رہا ہے ۔میرواعظ نے حکومت پاکستان اور پاکستانی عوام کی جانب سے6اپریل کو کشمیری عوام کے ساتھ عملاً اظہار یکجہتی کے دن کے طور پر منانے کا خیر مقدم کیا ہے۔