بھاجپا کو آزادی اور کانگریس پر بندشیں

جموں //کانگریس کے سینئر لیڈر اور پارٹی کے پارلیمانی حلقہ اودھمپور۔ڈوڈہ سے امیدوار وکرم ادتیہ سنگھ نے کشتواڑ کی ضلع انتظامیہ پر انتخابی مہم میں رخنہ ڈالنے کا الزام عائد کیاہے ۔یہاں جاری بیان کے مطابق وکرم ادتیہ سنگھ نے کہاکہ کشتواڑ انتظامیہ کانگریس اور نیشنل کانفرنس کی طرف سے چلائی جارہی مہم میں رخنہ ڈال رہی ہے اور کارکنان کی نقل و حرکت پر بندشیں عائد کی جارہی ہیں جبکہ اس کے برعکس بی جے پی کارکنان کو پوری پوری مدد فراہم کی جارہی ہے جس سے صاف و شفاف انتخابات پر سوال اٹھتاہے ۔انہوںنے کہاکہ الیکشن کمیشن کی طرف سے ہر ایک سیاسی جماعت کو انتخابی مہم چلانے کا حق دیاجاتاہے لیکن کشتواڑ کی ضلع انتظامیہ اس معاملے میں غیر جانبداری سے کام لے رہی ہے اورزعفرانی پارٹی کے کارکنان کی نقل و حرکت کو آزادی دی گئی ہے جبکہ کانگریس او رنیشنل کانفرنس کے کارکنان کو گھروں سے باہر بھی نہیںنکلنے دیاجارہااور انہیں مہم سے روکاجارہاہے ۔انہوںنے الزام عائد کیاکہ انتظامیہ امن و قانون کے نام پر کانگریس اور نیشنل کانفرنس لیڈران کو کشتواڑ جانے کی اجازت بھی نہیں دے رہی جس وجہ سے وہ مہم نہیں چلاپارہے ہیں ۔کانگریس امیدوار نے ضلع انتظامیہ کشتواڑ سے کہاکہ وہ اس بات کی جوازیت پیش کرے کہ کیوں بی جے پی امیدوار ڈاکٹر جتیندر سنگھ کے کارکنان کو مہم چلانے کیلئے آزادی دی گئی ہے اوردیگر پارٹیوں کے کارکنان کی نقل و حرکت پر بندشیں عائد کی گئی ہیں ۔انہوںنے الیکشن کمیشن سے اپیل کی کہ اس معاملے کا فوری نوٹس لیکر انتظامیہ میں موجود کالی بھیڑوں کے خلاف کارروائی کی جائے جن کی وجہ سے صاف و شفاف انتخابات کو نقصان پہنچ رہاہے ۔انہوںنے سما ج کے تمام حلقوں خصوصاًنوجوانوں، طلباء اور تاجروں سے اپیل کی کہ وہ خطہ چناب کے ساتھ امتیازی سلوک کے خاتمے کیلئے کانگریس پارٹی کو ووٹ دیں ۔ان کاکہناتھاکہ بھاجپانے خطہ چناب کے لوگوں کو سخت مایوس کیاہے اور اس کی طرف سے کئے گئے وعدے پورے نہیں ہوئے ۔ انہوںنے کہاکہ اس کے برعکس وہ امتیاز کے خاتمے اور سبھی کو ساتھ لیکر کام کریں گے ۔