بلا ک بالا کوٹ کی پنچایت ناڑ حکومت کی نظروں سے اوجھل

مینڈھر//بلاک بالا کوٹ کی پنچایت ناڑ میں بنیادی سہولیات نہ ہونے کی وجہ سے مقامی لوگوں کو سخت مشکلات کاسا منا کرنا پڑرہاہے ۔مقامی لوگوں نے ضلع انتظامیہ کے رویہ پر تنقید کر تے ہوئے کہاکہ مذکورہ پنچایت میں سڑک کی نایابی کی وجہ سے ان کو سب ڈویژن ہیڈ کواٹر تک پہنچنے میں کئی گھنٹوں کی مسافت طے کرنا پڑتی ہے جبکہ بنیادی سہولیات کے فقدان کی وجہ سے لوگ پسماندگی کی زندگی بسر کرنے پر مجبور ہو چکے ہیں ۔مقامی لوگوں نے کہاکہ مذکورہ پنچایت میںایک بر س قبل ایک سڑک کی تعمیر شروع  کی گئی تھی تاہم اس سے بھی عوام کو مینڈھر پہنچنے کیلئے چالیس کلو میٹر کی مسافت طے کرنا پڑے گی ۔ایک یوتھ لیڈر احسان اکرم نے بتایا کہ ناڑ پنچائت کے اندر کوئی ہسپتال ہی موجود نہیں ہے جبکہ اس سلسلہ میں کئی سال قبل ایک عمارت کو تعمیر کرنے کا کام شروع ہوا تھا لیکن وہ عمارت اس وقت تک مکمل نہیں ہو پائی ہے جس کی وجہ سے مقامی لوگوں کو اپنا علاج کروانے کیلئے راجوری ،سرنکوٹ یا مینڈھر تک کئی گھنٹوں کا سفر کرنا پڑتاہے۔مقامی لوگوں نے محکمہ بجلی کوتنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ علاقہ کے اندر بجلی کی کٹوتی کا کوئی وقت مقرر نہیں ہے اور متعلقہ ملازمین جب چاہیں بجلی کاٹ دیتے ہیںجبکہ اسی طرح بچوں کی معیاری تعلیم کیلئے سنجیدگی کا مظاہر ہ نہیں کیا جارہا ہے ۔مقامی لوگوں نے ریاستی انتظامیہ سے مانگ کرتے ہوئے کہاکہ علا قہ میں بنیادی سہولیات فراہم کر نے کیساتھ ساتھ ایک راشن سٹور قائم کیا جائے تاکہ لوگوں کو درپیش مشکلات حل ہو سکیں ۔