اے سی بی کی اہربل میں کارروائی

شوپیان /شاہد ٹاک/ انسداد رشوت ستانی ادارہ نے نائب تحصیلدارٹنگمرگ اہربل کولگام کے دفتر میں کام کررہے ایک کلرک لیاقت رحیم پسوال کو رشوت لیتے ہوئے گرفتار کیا۔مذکورہ ملازم نے شیڈول ٹرائب سرٹیفکیٹ جاری کرنے کے لیے 7,000 روپے کی رشوت طلب کی تھی۔اینٹی کرپشن بیورو کو ایک شکایت موصول ہوئی تھی جس میں الزام لگایا گیا تھا کہ لیاقت رحیم پوسوال ولد عبدالرحیم پوسوال ٹنگمرگ، اہربل، جو درجہ چہارم کا ملازم ہے، اور نائب تحصیلدار، ٹنگمرگ کے دفتر میں کلرک کے طور پر کام کر رہا ہے، شیڈول ٹرائب سرٹیفکیٹ جاری کرنے کے لیے شکایت کنندہ سے7,000  روپے رشوت مانگ رہا ہے۔ شکایت کنندہ پہلے ہی ملزم کو 3500 روپے ادا کر چکا تھا۔ ملزم کلرک اس سے باقی ماندہ 3500 کا مطالبہ کر رہا تھا۔ اس پر شکایت کنندہ نے ضروری قانونی کارروائی کے لیے اے سی بی سے رجوع کیا۔فوری شکایت موصول ہونے پر، بدعنوانی کی روک تھام ایکٹ 1988 کے U/S 7 کے تحت اولین طور پر جرم کا پتہ چلا۔ نتیجتا، مقدمہ ایف آئی آر نمبر 06/2022 پی ایس اے سی بی اننت ناگ میں درج کیا گیا اور تحقیقات شروع کی گئی۔تفتیش کے دوران، ایک ٹریپ ٹیم تشکیل دی گئی۔ ٹیم نے لیاقت رحیم پوسوال کو شکایت کنندہ سے 3,500/- کی رشوت مانگتے اور قبول کرتے ہوئے رنگے ہاتھوں پکڑ لیا۔ اسے اے سی بی کی ٹیم نے موقع پر ہی گرفتار کرلیا۔ آزاد گواہوں کی موجودگی میں اس کے قبضے سے رشوت کی رقم بھی برآمد کر لی گئی۔