اُمید ہے ہلاکتوں کیخلاف احتجاجی استعفیٰ کے بعدشاہ فیصل صحیح سیاسی فیصلہ لیں گے: میر واعظ

سرینگر/حریت کانفرنس (ع) کے چیئر مین میر واعظ عمر فاروق نے بدھ کو آئی اے ایس آفیسر شاہ فیصل کے مستعفی ہونے پر تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ ہلاکتوں کیخلاف اُن کا احتجاجی استعفیٰ خوش آئیند ہے۔ انہوں نے کہا کہ اب اُمید ہے کہ ہلاکتوں کیخلاف شاہ فیصل کا رد عمل اُنہیں بہتر سیاسی فیصلہ لینے میں مدد دے گا اور وہ لوگوں کے حق خود ارادیت کی حمایت کریں گے۔

میر واعظ نے اپنے ایک ٹویٹ میں لکھا''شاہ فیصل کا جذبہ ،کہ کشمیریوں کی زندگیاں اہم ہیں،شاہ کو لوگوں کے جذبات اور حق خود ارادیت کی گہری خواہش  کی نمائندگی کرنے میں مدد دے گا''۔

اس سے قبل 2010میں آئی اے ایس میں پہلی پوزیشن حاصل کرنے والے کشمیری ، شاہ فیصل نے سرکاری نوکری سے استعفیٰ دیدیا۔ اطلاعات کے مطابق شاہ سیاست میں آنا چاہتے ہیں۔

اطلاعات کے مطابق 2010بیچ میں اول پوزیشن حاصل کرنے والے شاہ ،استعفیٰ کے بعد نیشنل کانفرنس میں شامل ہونے والے ہیں۔

ذرائع کے مطابق شاہ نے اپنا استعفیٰ سوموار کو متعلقین کو پیش کیا جس کو ضابطے کے تحت منظور ہونے میں کچھ دن لگتے ہیں۔

ذرائع نے کہا کہ شاہ ابھی حال ہی میں یورپ کی معروف یونیورسٹی، ہارورڈ کنیڈی سکول سے فیلو شپ کرکے لوٹے ہیں۔

شاہ فیصل اب تک کے پہلے کشمیری ہیں جنہوں نے آئی اے ایس امتحان میں پہلی پوزیشن حاصل کی ہے۔

گذشتہ برس شاہ کیخلاف تحقیقات کا حکم دیا گیا تھا جب اُنہوں نے عصمت دری کے بڑھتے واقعات کے بارے میں ایک متنازع ٹویٹ کیا تھا۔