اودھمپور۔ڈوڑہ پارلیمانی حلقہ کیلئے مہم تیز

 
ڈوڈہ //اودھمپور۔ ڈوڈہ پارلیمانی نشست کیلئے دوسرے مرحلے کے تحت ہونے والے انتخابات میں اب چند ہی دن باقی رہ گئے ہیں ۔ اس نشست پر 18اپریل کو پولنگ ہوگی جس سے قبل تمام امیدواراور سیاسی جماعتیں سبقت حاصل کرنے کیلئے بھرپور کوشش کررہی ہیں ۔ تاہم نتائج کیارہیںگے یہ 23مئی کو ہی پتہ چلے گا۔ یہ پارلیمانی نشست 17اسمبلی حلقوں کشتواڑ، اندروال، ڈوڈہ، بھدرواہ، رام بن،بانہال، گول ، گلاب گڑھ، ریاسی ، اودھمپور، رام نگر، چنینی، کٹھوعہ ، بنی ، بلاور ، بسوہلی ہیرانگر پر مشتمل ہے اور یہاں ووٹوں کی کل تعداد14لاکھ، 90ہزار244ہے ۔اس لوک سبھا سیٹ پر جہاں بی جے پی کی طرف سے وزیر مملکت ڈاکٹر جتیندر سنگھ امیدوار ہیں وہیں کانگریس نے سابق صدر ریاست ڈاکٹر کرن سنگھ کے فرزند وکرم ادتیہ سنگھ کو میدان میں اتاراہے ۔ ان کے علاوہ ڈوگرہ سوابھی مان سنگٹھن کے چوہدری لعل سنگھ اور پنتھرز پارٹی کے چیئرمین ہرش دیو سنگھ و دیگر بارہ امیدوار بھی الیکشن میں کھڑے ہیں ۔ جوں جوں پولنگ کا دن قریب آرہاہے ، سبھی امیدوار اور سیاسی جماعتیں اپنی مہم میں سرعت لارہی ہیں ۔ جہاں بی جے پی کی طرف سے پارٹی کے امیدوار کے حق میں وزیر اعظم سمیت کئی سینئر لیڈران مہم میں شرکت کررہے ہیں جبکہ پارٹی کے قومی صدر امت شاہ اوروزیر داخلہ راجناتھ سنگھ انتخابی ریلیوں سے خطاب کرچکے ہیں وہیں کانگریس کی طرف سے سینئر لیڈر و سابق وزیر اعلیٰ غلام نبی آزاد اور وکرم ادتیہ سنگھ کے والد ڈاکٹر کرن سنگھ مہم چلارہے ہیں ۔ یہ بات قابل ذکر ہے کہ وزیر اعظم 14اپریل کو کٹھوعہ میں ریلی سے خطاب کرکے ڈاکٹر جتیندر کی دوبارہ جیت کیلئے ووٹ مانگیں گے ۔ اس نشست پر 2014کے انتخابات میں جتیندر سنگھ نے کانگریس کے امیدوار غلام نبی آزاد کو ہرایاتھا۔