انتخابات 2019:پہلے مرحلہ کی پولنگ آج

 پوری وادی میں فوج، نیم فوجی اہلکار اور پولیس کی بھاری تعداد تعینات

 
سرینگر+جموں//ریاست جموں وکشمیر میں آج عام انتخابات کے پہلے مرحلے کے تحت جموں اور بارہمولہ پارلیمانی حلقوں میں ووٹ ڈالے جائیں گے۔ سات اضلاع پر پھیلے جموں اور تین اضلاع پر پھیلے بارہمولہ پارلیمانی حلقوں میں پولنگ کیلئے سیکورٹی اہلکار اور پولنگ عملہ ، پولنگ مراکز پر پہنچا دیئے گئے۔پولنگ کا عمل آج صبح سات بجے شروع ہوکر شام کے چھ بجے تک جاری رہے گا۔انتخابات کے پہلے مرحلے کے لئے قریب تین ہفتوں سے جاری انتخابی مہم منگل کی شام اختتام پذیر ہوئی تھی۔ بارہمولہ پارلیمانی حلقے میں بی جے پی امیدوار کے لئے کسی بھی قومی سطح کے لیڈر نے مہم نہیں چلائی تاہم پی ڈی پی، کانگریس ، پیپلز کانفرنس اور نیشنل کانفرنس کے لئے مقامی سطح کے لیڈران نے جم کر انتخابی جلسوں سے خطاب کیا۔جبکہ جموںمیں بھاجپا امیدوار کے حق میں وزیر اعظم نریندر مودی، وزیر داخلہ راجناتھ سنگھ، بی جے پی صدر امت شاہ اور دوسرے لیڈران جبکہ کانگریس امیدوار کے حق میں سینئر کانگریس لیڈران غلام نبی آزاد اور سابق صدر ریاست ڈاکٹر کرن سنگھ نے انتخابی جلسوں سے خطاب کیا ۔جنگجوئوں کے کسی بھی منصوبے کو ناکام بنانے کے لئے وادی بھر میں چوکسی بڑھائی گئی ہے۔  پہلے مرحلے کی پولنگ کے لئے پولنگ پارٹیاں چنائو عمل کے تین روز پہلے ہی برف سے ڈھکی گریز اور تلیل وادی کے لئے روانہ کی گئیں۔ پہلے مرحلے میں جموں اور بارہمولہ پارلیمانی حلقوں میں33 لاکھ سے زائد ووٹر33 امید واروں کی قسمت کا فیصلہ کریں گے۔جموں پارلیمانی حلقہ میں24 جبکہ بارہمولہ حلقہ میں9 امیدوار میدان میں ہیں۔بارہمولہ پارلیمانی حلقہ میں9 امیدوار چنائو میدان میں ہیں اُن میں حاجی فاروق احمد میر آئی این سی، محمد مقبول وار بی جے پی، جہانگیر خان جے اینڈ کے این پی پی، عبدالقیوم وانی پی ڈی پی، محمد اکبر لون این سی، راجا اعجاز علی پی سی اور آزاد امیدوار جاوید احمد قریشی، سید نجیب شاہ نقوی اور انجینئر رشید شامل ہیں۔ یہ حلقہ15 اسمبلی حلقوں پر محیط ہے جس میں تین اضلاع کپواڑہ، بارہ مولہ اور بانڈی پورہ شامل ہیں۔اس حلقہ میں 13 لاکھ 17 ہزار 738 ووٹر ہیں۔حلقہ میں انتخابات کے احسن انعقاد کے لئے1749 پولنگ مراکز قائم کئے گئے ہیں۔ گذشتہ پارلیمانی انتخابات میں پی ڈی پی کے مظفر حسین بیگ نے اپنے مد مقابل نیشنل کانفرنس کے شریف الدین شارق کو 29 ہزار 219 ووٹوں کے فرق سے شکست دی تھی۔ضلع مجسٹریٹ بارہمولہ کا کہنا ہے کہ رائے دہندگان کو محفوظ ماحول فراہم کرنے کے لئے ریاستی پولیس کے علاوہ پیرا ملٹری فورسز اور مختلف یونٹوں کے فوجی اہلکاروں کو تعینات کیا جائے گا'۔انہوں نے بتایا کہ جن دور افتادہ علاقوں میں سڑکیں ابھی زیر برف ہی ہیں وہاں الیکشن مواد اور عملے کو ایئر لفٹ کیا گیا ہے۔جموں پارلیمانی حلقہ 20 سے زائد اسمبلی حلقوں پر محیط ہے جس میں جموں، سانبہ، پونچھ اور راجوری کے 20 لاکھ 47 ہزار 299 ووٹر ہیں جن میں 20 لاکھ 5 ہزار 734 جنرل ووٹر، 41 ہزار 565 سروس ووٹر ہیں۔ انتخابات کے احسن انعقاد کے لئے حلقہ میں2740 پولنگ مراکز قائم کئے گئے ہیں۔ جو امید وار میدان میں اُن میں سید عاقب حسین انڈی پینڈنٹ پیلز پارٹی، جگل کشور شرما بی جے پی، بدری ناتھ بی ایس پی، محمد یونس جے کے پیر پنجال عوامی پارٹی، سشیل کمار ہندو استھان نرمان دل، جاوید احمد آل انڈیا فارورڈ بلاک، رمن بھلہ آئی این سی، گرساگر سنگھ نورنگ کانگریس پارٹی، پروفیسر بھیم سنگھ نیشنل پینتھرس پارٹی، لال سنگھ ڈوگرہ سوابھیمان سنگٹھن اور راجیو چونی، سبھاش چندر، شازباد شبنم، پرسین سنگھ ، غلام مصطفی چوہدری، ستیش پونچھی، بہادر، منیش ساہنی ، سکندر احمد نورانی، ترسیم لال کھلر، بلوان سنگھ، سید ذیشان حیدر، انل سنگھ، اجے کمار آزاد امید وار شامل ہیں۔ 2014 کے پارلیمانی انتخابات میں بی جے پی کے جگل کشور نے اپنے مد مقابل آئی این سی کے مدن لال کو ہرایا۔ جگل کشور شرما کو 6 لاکھ 19 ہزار 995 جبکہ مدن لال کو 3 لاکھ 62 ہزار 715 ووٹ ملے تھے۔
 

 لداخ نشست کیلئے نوٹیفکیشن جاری 

جموں// الیکشن کمیشن آف انڈیا نے پارلیمانی حلقہ انتخاب لداخ کے لئے نوٹیفکیشن جاری کیاہے۔ نوٹیفکیشن کے مطابق کاغذات نامزدگی داخل کرنے کی آخری تاریخ18 اپریل جبکہ کاغذات کی جانچ پڑتال30 اپریل کو کی جائے گی۔ کاغذات نامزدگی واپس لینے کی آخری تاریخ22 اپریل بعد دوپہر تین بجے تک مقرر کی گئی ہے۔ نوٹیفکیشن کے مطابق متعلقہ نشست کے لئے پولنگ6 مئی2019 کو عمل میں لائی جائے گی اور ووٹ ڈالنے کے اوقات صُبح7 بجے سے شام6 بجے تک مقرر کئے گئے ہیں۔
 

پولیس پوری طرح تیار: ڈی جی پی

سرینگر//ڈائریکٹر جنرل پولیس دلباغ سنگھ نے بتایا کہ لوک سبھا انتخابات کے پہلے مرحلے سے متعلق تمام تیاریاں مکمل کرلی گئی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ شمالی کشمیر کیساتھ ساتھ جموں میں فورسز اہلکاروں کو پولنگ بوتھوں پر تعینات کردیا گیا ہے اور اُمید ہے کہ آج کا دن پرامن اور خوشگوار ماحول میں گزرے گا اوررائے دہندگان پولنگ مراکز کا رخ کرتے ہوئے اپنی حق رائے دہی کا آزادانہ طور پراستعمال کریں گے۔  دلباغ سنگھ نے کا کہنا تھا کہ پہلے مرحلے کے دوران شمالی کشمیر کے 5 پولیس ڈسٹرکٹ جبکہ جموں کے4پولیس ڈسٹرکٹ میں ووٹ ڈالے جائیں گے جس کے لیے تیاریوں کو حتمی شکل دی گئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ انتخابات کو پرامن طور پر منعقد کرانے کے لیے پولیس اور نیم فورسز اہلکاروں کو قبل از وقت ہی اپنے اپنے مقامات پر منتقل کیا جاچکا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پولنگ مراکز پر فورسز اہلکاروں کی تعیناتی بدھ کی شام تک مکمل کی جائیگی ۔انہوں نے کہا کہ حفاظتی انتظامات کو لیکر ڈسٹرکٹ ایس پیز اور آرمڈ پولیس کمانڈنٹس ایک دوسرے کے ساتھ رابطے میں ہیں اور وہ متعلقہ اضلاع میں تمام حالات پر کڑی نگاہ رکھے ہوئے ہیں۔