’امن کانفرنس‘ آر ایس ایس کا درپردہ ایجنڈا: آسیہ

سرینگر//دختران ملت کی سربراہ سیدہ آسیہ اندرابی نے سری سری روی شنکر کو آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے کہا کہ یہ فسطائی ہندو گرو امن کانفرنس کے نام پر کشمیری عوام کا استحصال کر رہا ہے۔انہوںنے کہا کہ یہاں آکر امن کے دروس دینے کے بجائے اس فسطائی روی شنکر کو چاہئے تھا کہ وہ ہندو ستانی فوج کو درس دیتے جنہوں نے یہاں کشت و خون کا بازار گرم کر رکھا ہے۔انہوں نے کہا کہ جموں و کشمیر کارڈیشن کمیٹی اس امن کانفرنس کا انعقاد اپنے مفادات کیلئے کر رہی ہے، اس این جی او میں کام کرنے والے لوگوں کے چہرے کب کے عیاں ہوچکے ہیں لیکن بھارتی سرکار سے مفادات حاصل کرنے کیلئے یہ ڈرامہ بازیاں کی جارہی ہے۔انہوں نے کہا کہ ان این جی اوز کا مقصد یہاں کے شہداء کے خون کی سودا گری کرنا اور یہاں آر ایس ایس کیلئے راستہ صاف کرنا ہے۔انہوں نے کہا کہ اس امن کانفرنس کا درپردہ ایجنڈا آر ایس ایس کو جموں و کشمیر میں تقویت دینا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہندو فسطائیت کے حامی کشمیری مسلمانوں کو امن کے دروس نہیں دے سکتے،ہم کو معلوم ہے کہ یہ سب ڈرامہ بازیاں کس کے اشارے پر کی جارہی ہیں۔انہوں نے لوگوں سے اپیل کی کہ وہ اس ڈرامہ باز گرو کی شعبدہ بازیوں سے خبردار رہیں۔آسیہ اندرابی نے کہا کہ روی شنکر آر ایس ایس کا ایجنڈا عملا رہے ہیں اس لئے وہ ہندتوا کو پر امن مذہب کے طور پیش کرنا چاہتے ہیں۔انہوں نے جے کے سی سی کو متنبہ کیا کہ وہ کشمیری لوگوں کو بیوقوف بنانا بند کریں،ہم کو خوب معلوم ہے کہ اس گروپ میں کون کون ہے اور کیا کیا کر رہے ہیں  اور ان کے کیا مفادات ہیں۔