تازہ ترین

امین وصادق ہونے کی جزا

سچائی   اور امانت داری شریعت اسلامیہ کے اہم اور بنیادی ارکان میں سے ہیں۔ تخلیق کائنات کے بعد باری تعالیٰ کی جانب سے جتنے رسل وانبیاء  ؑبھیجے گئے وہ سب صداقت وامانت داری کے اعلیٰ مراتب پر فائز تھے اور داعی حق وصداقت تھے ۔ہر دور ہر زمانہ ہرقوم نے ان کی امانت داری اور صداقت کا کھلے عام اعتراف کیا۔ ـ فرمایا، ترجمہ: اللہ فرمائے گا آج وہ دن ہے جب سچوں کے کام ان کا سچ آئے گا۔ انسانی معاشرہ کا امن سکون تعمیر و ترقی انسانیت کی قدر وقعت اور فلاح وبہبود کی بنیاد صدق پر ہے۔ قرآن وسنت کی تعلیمات میں اس کی فضیلت آخرت میں صادقین کے انعام واعزازات مقام و مرتبہ مخلوق میں محبوبیت ومقبولیت کا راز صداقت میں منحصر ہے۔ فرمان خدا وندی ہے کہ اے ایمان والو! اللہ سے ڈرو اور صادقین کے ساتھ رہو (سورہ التوبہ)صادق وہ ہے جو اللہ او راس کے رسولؐ پر ایمان لائے، دین اسلام پر شکوک وشبہات نہ کرے اپنی ج

اذان :خوش صوتی مفقود خلوص معدوم

سلسلہ : اصلاح و دعوت شمارہ : جون 2017      مولانا رومی کی رباعیوں کے حوالے سے ایک مشہورقصہ بیان کیا جاتا ہے کہ ایک شخص کسی بستی میں روزانہ پابندی کے ساتھ پانچ وقت کی اذان دیتا تھا جس کی آواز اتنی بھدی تھی کہ لوگ بدظن ہونے لگے ۔ مگر بستی کے بااخلاق لوگ ان کے خلوص ، پرہیز گاری اور وقت کی پابندی کی وجہ سے منع نہیں کر پارہے تھے کہ وہ اذان نہ دے۔ ایک دن بستی کے کچھ لوگوں کو معلوم ہوا کہ ان کی بستی سے کوئی قافلہ حج کو روانہ ہونے والا ہے ۔ بستی کے لوگوں نے مشورہ کیا کہ کیوں نہ موذن کے زاد راہ کا انتظام کر کے انہیں حج کیلئے روانہ کردیا جائے ۔ اس طرح موذن صاحب کاایک مقدس فریضہ بھی ادا ہوجائے گا اور ہمیں ان کی آواز سے بھی چھٹکارا مل جائے گا ۔ قدیم زمانے میں چونکہ پیدل سفر کی وجہ سے مسافت طویل اور مشقت سے بھر پور ہوا کرتی تھی اس لئے اکثر لوگ قافلوں میں سفر کیا کرتے تھے او